مشرقی افریقہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
مشرقی افریقہ (مختلف تعریفوں کے مطابق)

براعظم افریقہ کا سب سے مشرقی خطہ جس کی جغرافیائی و سیاسی پیرائے میں مختلف تعریفیں کی جاتی ہیں۔ اقوام متحدہ کے "منصوبہ برائے جغرافیائی علاقے" کے مطابق مشرقی افریقہ (east africa) یا (eastern africa) میں 19 ممالک و علاقے شامل ہیں:

جغرافیائی طور پر مصر اور سوڈان بھی کبھی کبھار اس خطے میں شامل سمجھے جاتے ہیں۔

عام طور پر مشرقی افریقہ اس خطے کو کہا جاتا ہے جو کینیا، تنزانیہ اور یوگینڈا [1] اور روانڈا، برونڈی اور صومالیہ [2] پر مشتمل ہے۔

مشرقی افریقہ کے چند علاقے اپنے جنگلی جانوروں کے باعث دنیا بھر میں مشہور ہیں جن میں ہاتھی، جنگلی بھینسے، شیر، تیندوے اور گینڈے قابل ذکر ہیں۔ غیر قانونی اور بے دریغ شکار کے باعث ان جانوروں کی آبادی میں تیزی سے کمی ہو رہی ہے خصوصاً گینڈے اور ہاتھی تیزی سے کم ہو رہے ہیں۔

مشرقی افریقہ قدرتی حسن سے مالا مال ہے جن میں عظیم وادی شق کے باعث تشکیل پانے والی وادیاں، افریقہ کے دو بلند ترین پہاڑ کلیمنجارو اور ماؤنٹ کینیا، دنیا کی میٹھے پانی کی دوسری سب سے بڑی جھیل جھیل وکٹوریہ اور دنیا کی دوسری سب سے گہری جھیل ٹانگانیکا قابل ذکر ہیں۔

بے مثال جغرافیے اور کھیتی باڑی کے لیے انتہائی موزوں ہونے کے باعث ہی یہ علاقہ 19 ویں صدی میں یورپی قابض اقوام کی جارحیت کا نشانہ بنا اور غلامی میں چلا گیا۔ آج کل کینیا، تنزانیہ اور یوگینڈا میں سیاحت اہم ترین صنعت ہے۔

علاقے کے کئی ممالک سیاسی عدم استحکام، بدعنوانی، بدامنی اور خانہ جنگی کا شکار رہے ہیں تاہم کینیا اور تنزانیہ مستحکم حکومت اور معیشت کے حامل ہیں تاہم سیاسی اتار چڑھاؤ سے یہ ممالک بھی محفوظ نہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ نئی آکسفرڈ انگریزی لغت، جوڈی پیرسل، آکسفرڈ، برطانیہ: آکسفرڈ یونیورسٹی پریس صفحہ 582
  2. ^ میریم ویبسٹر جغرافیائی لغت تیسرا ایڈیشن۔ 2001۔ اسپرنگ فیلڈ، میریم-ویبسٹر انکارپوریٹڈ صفحہ 339