سوڈان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش


جمهورية السودان
جمہوریہ سوڈان
سوڈان کا پرچم سوڈان کا قومی نشان
پرچم قومی نشان
شعار: النصر لنا
(فتح ہماری ہے)
ترانہ: نحن جند ﷲ جند الوطن
سوڈان کا محل وقوع
دارالحکومت خرطوم
عظیم ترین شہر ام درمان
دفتری زبان(یں) عربی
نظامِ حکومت
صدر
جمہوریہ (صدارتی نظام)
عمر حسن احمد البشیر
آزادی
- تاریخِ آزادی
مصر اور برطانیہ سے
یکم جنوری 1956ء
رقبہ
 - کل
 
 - پانی (%)
 
2505813  مربع کلومیٹر (10)
967500 مربع میل
6
آبادی
 - تخمینہ:2007ء
 - 1993 مردم شماری
 - کثافتِ آبادی
 
38,560,000 (32)
24940683
14.5 فی مربع کلومیٹر(205)
38 فی مربع میل
خام ملکی پیداوار
     (م۔ق۔خ۔)

 - مجموعی
 - فی کس
تخمینہ: 2007ء

107.8 ارب بین الاقوامی ڈالر (59 واں)
2500 بین الاقوامی ڈالر (135 واں)
انسانی ترقیاتی اشاریہ
   (تخمینہ: 2007ء)
0.526
(147) – متوسط
سکہ رائج الوقت سوڈانی پونڈ (SDG)
منطقۂ وقت
 - عمومی
۔ موسمِ گرما (د۔ب۔و)
مشرقی افریقی وقت (EAT)
(یو۔ٹی۔سی۔ 2)
غیر مستعمل (یو۔ٹی۔سی۔ 2)
ملکی اسمِ ساحہ
    (انٹرنیٹ)
.lk
رمزِ بعید تکلم
  (کالنگ کوڈ)
+249


سوڈان (عربی: السودان) براعظم افریقہ کا ایک اسلامی ملک ہے۔

تاریخ[ترمیم]

1851ء کے بعد سے یورپی اور عثمانی سوداگروں نے ہاتھی دانت کی تلاش میں بالائی نیل کے دریائی علاقوں میں آ مدورفت شروع کی ان کی بے لگام مداخلت کے، قبائلی معاشرے کی نافرمانی اور غلاموں کی تجارت کی نئے علاقوں تک توسیع کی صورت میں دو منفی نتائج تھے۔ خیدِو اسماعیل (1863-79)حکمران تھا۔ برطانوی گورنر جنرل، جنرل گورڈن 1877ء میں تعینات ہوا۔ 1879ء میں خیدِو اسماعیل کو تخت سے اتار دیا گیا اور جنرل گورڈن نے استعفیٰ دے دیا۔ محمد احمد مہدی نیا حکمران بنا۔ سر ہربرٹ کچنر نے جو کہ اس وقت مصری فوج کا سربراہ تھا سوڈان کو پھر سے فتح کرنے کا منصوبہ بنایا اور اس منصوبے کی قیادت کی اس نے 1898ء میں ڈنگولا صو بہ پر پھر سے قبضہ کرلیا۔


دوبارہ فتح کیے گئے علاقوں کی حیثیت کا تعین ایک کنونشن کے تحت جنوری 1899ء میں کیاگیا جس میں مصر اور برطانیہ شامل تھے۔ اس کا ڈرافٹ ایک برطانوی ایجنٹ لارڈ کرومر نی برطانوی حکومت کی پالیسی کے عین مطابق تیار کیا اور اس کا بنیا دی مقصد سوڈان سے بین الاقوامی ادارے اور مصری حکومت کے اختیارات کا اخراج تھا۔ سوڈان کو باقاعدہ طور پر مصر اور برطانیہ کی مشترکہ حکومت کا ماتحت علاقہ بنا دیا گیا۔ 1910ء میں گورنر جنرل کونسل قائم کی گئی۔ دوسری جنگ عظیم کے دوران نئی سیا سی پیش رفت اور قوم پرست احساسات کے آغاز کا مشاہدہ کیاگیا اسماعیل الازہری سوڈانی سیاست دانوں میں سب سے زیا دہ مقبول اور مضبوط ہوگئے تھے۔ سوڈان حکومت نے اپریل 1952ء میں ایک خود حکومتی آئین کا اعلان کیا جنوری 1954ء میں نئی پارلیمنٹ کا اجلاس ہوا جس میں نیشنل پارٹی کے لیڈر اسماعیل الازہری کو وزیر اعظم منتخب کرلیاگیا۔ فوج، پولیس اور سول سروس سے برطانویوں کی واپسی اور سوڈانی لوگوں کی بھرتی کا عمل تیزی سے شروع ہوا۔ پارلیمنٹ نے مزید اقدامات کرکے الازہری کو اس قابل کردیا کہ انہوں نے یکم جنوری 1956ء کو سوڈان کو ایک آزا د جمہوریہ بنانے کا اعلان کردیا۔








بیرونی روابط[ترمیم]

متناسقات: 15°N 32°E / 15°N 032°E / 15; 032