جزائر فارو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جزائرفارو
Føroyar (فروئز زبان میں)
Færøerne (ڈنمارکی زبان میں)
Flag of جزائرفارو
Coat of arms of جزائرفارو
پرچم Coat of arms
ترانہ: Tú alfagra land mítt
Thou, my most beauteous land
جزائرفارو کی جگہ شمالی یورپ میں
جزائرفارو کی جگہ شمالی یورپ میں
دار الحکومت
اور سب سے بڑا شہر
تورشھاون
دفتری زبانیں فروئز زبان, ڈینش زبان[1]
نسلی گروہ 91% فروئز
5.8% ڈینش
0.7% برطانوی
0.4% آئس لینڈی
0.2% نارویجن
0.2% پولش
نام آبادی Faroese
حکومت ئینی بادشاہت کے اندر پارلیمانی جمہوریت
Margrethe II
Dan M. Knudsen
Aksel V. Johannesen
خود مختاری ڈنمارک کے اندر
• ناروے کے ساتھ متحد
1035
14 جنوری 1814
• ہوم رول
1 اپریل 1948
رقبہ
• کل
1,399 کلومیٹر2 (540 مربع میل) (180)
• آبی (%)
0.5
آبادی
• جولائی 2011 تخمینہ
49,267[2] (206)
• 2007 مردم شماری
48,760
• کثافت
35/کلو میٹر2 (90.6/مربع میل)
خام ملکی پیداوار (مساوی قوت خرید) 2008 تخمینہ
• کل
$1.642 بلین
• فی کس
$33,700
خام ملکی پیداوار (برائے نام) 2008 تخمینہ
• کل
$2.45 بلین
• فی کس
$50,300
انسانی ترقیاتی اشاریہ (2006) 0.943
انتہائی اعلی
کرنسی Faroese króna (DKK)
منطقۂ وقت WET (متناسق عالمی وقت+0)
WEST (متناسق عالمی وقت+1)
کالنگ کوڈ 298
انٹرنیٹ ڈومین .fo

جزائرفارو (Faroe Islands) ڈنمارک کے تحت ایک خود مختار مجمع الجزائر ہیں۔ یہ برطانیہ کے شمال میں بحر منجمد شمالی میں ہیں۔

ناروے اور آئس لینڈ کے وسط میں بحیرہ ناروے اور شمالی بحر اوقیانوس کے سنگم پر واقع ڈنمارک کی بادشاہت کے زیر اثر ایک خود مختار مجموعہ جزائر۔ کل رقبہ تقریبا ۵۴۰ مربع میل۔۲۰۱۰ کی مردم شماری کے مطابق آبادی ۵۰۰۰۰ نفوس پر مشتمل ہے۔۱۹۴۸ میں جزائر فارو کو جزوی خود مختاری دی گئی۔وقت کے ساتھ ساتھ اس خود مختاری میں اضافہ ہوا اور ڈنمارک کے پاس دفاع،خارجہ،پولیس،عدلیہ اور خزانہ کے معاملات رہ گئے۔مذہب عیسائیت ہے۔فرینگاسیگا کے مطابق سگمندربرسٹسن نے ۹۹۹ء میں یہاں عیسائیت متعارف کرائی۔ایک اور روایت کے مطابق اس سے نصف صدی قبل یہاں عیسائیت کے پیروکار موجود تھے۔جزائرفارو کا پہلا کلیسا یکم جنوری ۱۵۴۰ کو مکمل ہوا۔یہاں کی ثقافت نارڈک ممالک سی ہے اور یہاں کی زبان فیروئیز ہے جوتین زبانوں کا امتزاج ہے قدیم سکنڈینیوین،برفستانی اور فیروئیز۔چٹانی علاقوں اور کم رقبے کی وجہ سے یہاں کا نظام مواصلات دنیا کے دیگر ملکوں جیسا نہیں تھا لیکن اب یہ صورت حال نہیں اور بڑے پیمانے پر اقدامات کیے گئے ہیں تقریبا ۸۰ فیصد آبادی کو سرنگوں، پلوں اور برساتی راہوں کے ذریعے ملا دیا گیا ہے اور تقریبا تمام جزائر اب منسلک ہیں۔

فہرست متعلقہ مضامین جزائرفارو[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Statistical Facts about the Faroe Islands, http://www.tinganes.fo/Default.aspx?ID=219, The Prime Minister's Office, accessed 13 July 2011
  2. https://www.cia.gov/library/publications/the-world-factbook/geos/fo.html CIA - The World Factbook, accessed 13 July 2011