حبیب اللہ کلکانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
فہرست افغانی شاہان
حبیب اللہ کلکانی
Habibullah Kalakani
(فارسی میں: حبیب الله کلکانیخاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
حبیب اللہ کلکانی

فہرست افغانی شاہان
دور حکومت 17 جنوری 1929 – 16 اکتوبر 1929
تاج پوشی 17 جنوری 1929
معلومات شخصیت
اصل نام حبیب اللہ کلکانی
پیدائش 19 جنوری 1891
کلکان، صوبہ کابل
وفات 1 نومبر 1929(1929-11-10) (عمر  38 سال)
کابل، صوبہ کابل
وجۂ وفات سزائے موت بذریعہ گولیوں کی باڑھ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Afghanistan (2002-2004).svg افغانستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
نسل فارسی
مذہب اسلام
دیگر معلومات
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

پشاور کا ایک سقا۔ اصل نام حبیب اللہ کلکانی جبکہ بچہ سقا کے نام سے بھی مشہور ہیں۔کچھ عرصہ افغان فوج میں ملازمت کی۔ بعد ازاں رہ زنی شروع کر دی۔ امان اللہ خان والئی افغانستان کے خلافت بغاوت ہوئی تو بچہ سقا اپنے جھتے کے ہمراہ کابل پہنچا اور حکومت پر قبضہ کرکے حبیب اللہ خان غازی کے نام سے تخت نشین ہوا۔ تقریباً آٹھ ماہ حکومت کی۔ جنوری 1929ء میں حبیب اللہ کلکانی نے کابل پر قبضہ کیا تھا اور حبیب اللہ شاہ غازی کے نام سے حکومت قائم کی تھی مگر اکتوبر 1929ء میں محمد نادر شاہ کی فوج نے کابل کو گھیر لیا جس پر بچہ سقا فرار ہو کر اپنے گاؤں چلا گیا۔ جنرل نادر خان کو انگریزوں کی مکمل حمایت حاصل تھی جنہوں نے اسے ہتھیار اور پیسہ دیا تھا۔ اس کے علاوہ انگریزوں نے محمد نادر شاہ کو ایک ہزار افراد کی فوج بھی تیار کر کے دی تھی جو وزیرستانی قبائلیوں پر مشتمل تھی۔ نادر خان نے قرآن کو ضامن بنا کر اس کو پناہ اور معافی دی مگر جب وہ کابل آیا تو اسے قتل کروا دیا۔