اولمپک مقاطعے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

اولمپک مقاطعے (انگریزی: Olympic Boycotts) اس وقت رونما ہوتے ہیں جب اولمپک کھیلوں میں شرکت کی اہلیت رکھنے والا کوئی ملک کسی بھی سیاسی وجہ کی بنیاد پر، مثلاً میزبان ملک کی سیاسی حکمت عملی کے خلاف، احتجاجاً شرکت سے انکار کر دے۔ کئی اولمپک کھیلوں میں متعدد ایسے ممالک نے شرکت سے انکار کیا ہے۔ چند صورتوں میں یہ مقاطعہ بہت بڑے پیمانے پر کیا گیا جن میں سرد جنگ دور کے دو اولمپک کھیل 1980ء اور 1984ء مشہور ہیں جن میں متعدد ممالک نے شرکت سے انکار کر دیا تھا۔

مشہور مقاطعے[ترمیم]

1976ء، 1980ء اور 1984ء کے اولمپک کھیلوں کے مشہور مقاطعے

مقاطعے کی دھمکیاں[ترمیم]

  • 1936ء میں کئی معروف سیاست دانوں اور انجمنوں نے گرمائی اولمپک کھیلوں کے مقاطعے کا مطالبہ کیا تھا، جن کی میزبانی، نازی حکومت کے قیام سے قبل، جرمنی کو دی گئی تھی۔ البتہ کسی ملک نے ان کھیلوں کا مقاطعہ نہیں کیا۔ ان اولمپک کھیلوں میں افریقی النسل امریکی کھلاڑی جیسی اوونز کی شاندار کارکردگی نے ایڈولف ہٹلر کی آریائی نسل کی برتری کے دعووں کو ملیامیٹ کر دیا اور ان کی کارکردگی نے 1936ء کے اولمپک کھیلوں کو امر کر دیا۔
  • کئی ممالک کے انسانی حقوق کے کارکنان نے بیجنگ، چین میں منعقدہ 2008ء کے گرمائی اولمپک کھیلوں کا مقاطعہ کرنے کا مطالبہ کیا، جس کا مقصد چینی حکومت کی جانب سے انسانی حقوق کی مبینہ خلاف ورزیوں کے خلاف احتجاج تھا۔ البتہ کسی نے ان کھیلوں کا مقاطعہ نہیں کیا۔
  • اگست 2008ء میں حکومت گرجستان نے 2008ء جنوبی اوسیشیا جنگ میں روس کی شرکت کے خلاف سوچی، روس میں طے شدہ 2014ء کے سرمائی اولمپک کھیلوں کے مقاطعے کا مطالبہ کیا۔ سوچی متنازع علاقے ابخازیا، جس پر گرجستان کا دعویٰ ہے، سے محض 20 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔