القابض

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

القابض اللہ تعالیٰ کے صفاتی ناموں میں سے ایک نام ہے۔

  • القابض کے معنی ہیں تنگدستی دینے والا۔وہ ذات جو موت کے وقت جسموں سے روحوں کو قبض کرے۔
  • رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:اسے احمد نے روایت کیا اور یہ صحیح حدیث ہے۔
  • بے شک اللہ تعالیٰ خالق بھی ہیں القابض بھی ہیں اور الباسط بھی ہیں۔
  • اللہ تعالیٰ مخلوق کی موت کے وقت ان کی ارواح قبض کر لیتا ہے۔ اور مخلوق میں سے جس کا رزق تنگ کرنا چاہے تنگ کر دیتا ہے اور مشرکین و کفار کے دلوں کو بند کر دیتا ہے۔ اور قیامت کے دن زمین و آسمانوں کو لپیٹ دے گا۔ اللہ تعالیٰ اپنی رحمت سے جس بندے کا رزق چاہے کشادہ کر دے۔ اور جس بندے کے دل پر چاہے اپنی رحمت کو وسیع کر دے۔ اور جس بندے کو چاہے وسعت علَمی دے دے۔[1]

امیروں سے صدقات کے ذریعے وصول کرنے والا،اور غریبوں پر رزق تنگ کرنے والا اور دلوں سے اپنی نظر کرم ہٹا کر سکیڑ دینے والا۔[2]

حوالہ[ترمیم]

اسماء الحسنیٰ
اللہالرحمٰنالرحیمالملکالقدوسالسلامالمؤمنالمہیمنالعزیزالجبارالمتکبرالخالقالباریالمصورالغفارالقہارالوہابالرزاقالفتاحالعلیمالقابضالباسطالخافضالرافعالمعزالمذلالسمیعالبصیرالحکمالعدلاللطیفالخبیرالحلیمالعظیمالغفورالشکورالعلیالکبیرالحفیظالمقیتالحسیبالجلیلالکریمالرقیبالمجیبالواسعالحکیمالودودالمجیدالباعثالشہیدالحقالوکیلالقویالمتیناولیالحمیدالمحصیالمبدیالمعیدالمحییالممیتالحیالقیومالواجدالماجدالواحدالصمدالقادرالمقتدرالمقدمالمؤخرالاولالآخرالظاہرالباطنالوالیالمتعالالبرالتوابالمنتقمالعفوالرؤفالمقسطالجامعالغنیالمغنیالمانعالضارالنافعالنورالہادیالبدیعالباقیالوارثالرشیدالصبورمالک الملکذو الجلال و الاکرام
یہ اللہ تعالیٰ کے ننانوے ناموں کی فہرست ہے
  1. الوجیز فی شرح اسماء اللہ الحسنیٰ ۔محمد الکوسی الکویتی
  2. سعادۃ الدارین ،جلد 2صفحہ704،یوسف بن اسماعیل نبہانی،مکتبہ حامدیہ لاہور