زبیر محمود حیات

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
زبیر محمود حیات
General Zubair.jpg 

چیئرمین مشترکہ رؤسائے عملہ کمیٹی
آغاز منصب
28 نومبر 2017ء
Fleche-defaut-droite-gris-32.png جنرل راشد محمود office1 =Chief of General Staff
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
مدت منصب
9 April 2015 – 28 November 2016
Fleche-defaut-droite-gris-32.png Lt Gen Ishfaq Nadeem Ahmad
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش دہائی 1960  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی پاکستان ملٹری اکیڈمی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ اکیڈمک  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
عسکری خدمات
وفاداری Flag of Pakistan.svg پاکستان
شاخ  پاکستان فوج
یونٹ 1st SP Regiment Artillery
عہدہ جرنیل  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں عسکری رتبہ (P410) ویکی ڈیٹا پر

جنرل زبیر محمود حیات بطور چیئرمین مشترکہ رؤسائے عملہ کمیٹی مسلح افواج کے 17 ویں سربراہ ہیں، انہوں نے 24 اکتوبر 1980ء میں پاک فوج میں کمیشن حاصل کیا۔ اُن کا تعلق آرٹلری رجمنٹ سے ہے۔ جنرل زبیر حیات فورڈسل اوکلاہاما امریکا کے فارغ التحصیل ہیں، انہوں نے کمانڈ اینڈ اسٹاف کالج کیمبرلے برطانیہ سے ڈگری حاصل کی۔ اس کے علاوہ جنرل زبیرحیات نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد کے بھی گریجویٹ ہیں۔

جنرل زبیر حیات کو کمانڈ اسٹاف اور انسٹرکشنل عہدوں پر کام کا وسیع تجربہ ہے، وہ بطور بریگیڈیئر انفینٹری ڈویژن کی قیادت بھی کر چکے ہیں۔ جنرل زبیر حیات کور ون کے چیف آف اسٹاف بھی رہے جب کہ ڈی جی اسٹریٹجک پلان ڈویژن کے فرائض بھی انجام دے چکے ہیں۔

جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کے عہدے پر تقرری سے پہلے وہ جی ایچ کیو میں چیف آف جنرل اسٹاف کے عہدے پر فائزتھے۔ ملٹری آپریشنز ڈائریکٹوریٹ اور ملٹری انٹیلی جنس ڈائریکٹوریٹ کی براہ راست سربراہی چیف آف جنرل اسٹاف ہی کرتے ہیں۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]