ولیم ٹی جی مورٹن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ولیم ٹی جی مورٹن
(انگریزی میں: Morton William Thomas Green خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
WilliamMorton.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 9 اگست 1819[1][2][3][4][5][6]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ووسٹر کاؤنٹی، میساچوسٹس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 15 جولا‎ئی 1868 (49 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
نیویارک شہر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات سکتہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ طبیب،  دندان ساز،  جراح  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
مادری زبان انگریزی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مادری زبان (P103) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[7]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر

ولیم تھامسن گرین مورٹن ایک امریکی دندان ساز تھا جو 9 اگست 1819ء کو ماسوچیوسٹ کے علاقے چارلٹن میں پیدا ہوا۔ نوجوانی میں وہ "بالٹی مور کالج آف ڈینٹل سرجری" میں داخل ہوا۔

دندان سازی سے وابستگی[ترمیم]

1842ء میں دندان سازی کو بطور پیشہ اپنایا۔ تقریباً ایک سال تک وہ ماہر دندان ساز "ہو راس ویلز" کی شراکت داری میں کام کرتا رہا جو خود عمل تخدیر (Anesthesia) میں شوق رکھتا تھا۔

نائٹرس ایسڈ سے دوری[ترمیم]

اپنی دندان سازی کی ریاضت میں مورٹن نے لوگوں کو مصنوعی دانت لگانے میں مہارت حاصل کی۔ اس عمل میں ضروری تھا کہ پہلے پرانے دانت کی جڑوں کو کھود نکالا جائے۔ اس عمل کی تکلیف کو کم کرنے کے لیے اس دور میں نائٹرس ایسڈ کو استعمال کیا جاتا۔ مگر مورٹن اس کو مناسب نہیں سمجھتا تھا۔ سو اس نے ایک زیادہ طاقتور چیز کی تلاش شروع کر دی۔

ایتھر (Ether) کا استعمال[ترمیم]

مورٹن کے جاننے والے ایک قابل ڈاکٹر اور سائنس دان چارلس ٹی جیکسن نے اسے مشورہ دیا کہ وہ ایتھر (Ether) کا استعمال کرے۔ ایتھر میں عمل تخدیر کی خوبیوں کو قریب تین سو برس بیشتر سویڈن کے ایک معروف معالج اور کیمیاء دان پیرا سیلس نے دریافت کیا تھا۔ ایسے ہی چند تحقیقی مقالے انیسوی صدی کے ادائل میں شائع ہوئے۔ لیکن نہ ہی جیکسن اور نہ ہی ایتھر پر لکھنے والے احباب نے ہی اس کیمیائی عنصر کو سرجری میں کبھی استعمال کیا۔

مورٹن اور ایتھر کا استعمال[ترمیم]

مورٹن کو ایتھر سے بہت توقعات وابستہ تھیں۔اس نے اس پر تجربات کیے۔ پہلے پہل اس نے اسے(اپنے پالتو کتے سمیت )مختلف جانوروں پر استعمال کیا۔ اور پھر بعد میں خود اپنے آپ پر بھی۔آخر 30 ستمبر 1846ء کو ایک مریض پر ایتھر استعمال کرنے کا شاندار موقع پیدا ہوا۔ ایبن فراسٹ نامی ایک شخص شدید دانت درد کے ساتھ مورٹن کی علاج گاہ پر پہنچا۔ اس نے مسوڑوں کی چیڑ پھار کے ذریعے اس درد سے چھٹکارا پانے کے لیے کسی بھی دوا کے اطلاق پر رضامندی ظاہر کی۔مورٹن نے اس پر ایتھر کا اطلاق کیا اور دانت باہر کھینچ نکالا۔ جب فراسٹ ہوش میں آیا تو اس نے بتایا کہ اسے چنداں درد محسوس نہیں ہو رہا۔اس سے بہتر نتیجہ کی مورٹن توقع نہیں کر سکتا تھا۔ اسے کامیابی, شہرت اور خوشی کے در اپنے لیے وا ہوتے دیکھائی دیے۔

ایتھر کا عوامی مظاہرہ[ترمیم]

مورٹن نے بوسٹن میں "ماسو چیوسٹ جنرل ہاسپٹل" کے ایک مایہ ناز ڈاکٹر جان سی وارن سے ایتھر کے عمل تخدیر میں استعمال کا ذکر کیا اور ایک عوامی مظاہرے کی اجازت طلب کی۔ ڈاکٹر جان راضی ہو گئے اور مظاہرے کے لیے ایک دن طے کیا گیا۔ 16 اکتوبر 1846ء کو مورٹن نے کئی ڈاکٹروں اور علم طب کے طالب علموں کی بڑی تعداد کے سامنے ایک مریض گلبرٹ ایبٹ کو ایتھر کا ٹیکہ لگایا اور ڈاکٹر وارن نے اس کی گردن سے گلٹی نکالی۔ یہ عوامی مظاہرہ کافی کامیاب رہا۔ متعدد اخبارات نے اس مظاہرے کی خبر چھاپی جبکہ کچھ عرصے بعد عمل جراحی میں ایتھر کا باقاعدہ استعمال شروع ہو گیا۔

وفات[ترمیم]

مورٹن کا انتقال 15 جولائی 1868ء میں 48 سال کی عمر میں نیو یارک میں ہوا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. اجازت نامہ: CC0
  2. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb10653565x — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  3. دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/William-Thomas-Green-Morton — بنام: William Thomas Green Morton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  4. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: http://snaccooperative.org/ark:/99166/w6794b16 — بنام: William T. G. Morton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/cgi-bin/fg.cgi?page=gr&GRid=1759 — بنام: William Thomas Green Morton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  6. امریکن نیشنل بائیوگرافی آئی ڈی: https://doi.org/10.1093/anb/9780198606697.article.1200646 — بنام: William Thomas Green Morton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  7. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb10653565x — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ