کرکٹ عالمی کپ 2015 گروپ بی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

کرکٹ عالمی کپ 2015 گروپ بی کے مقابلے 15 فروری سے 15 مارچ 2015 تک جاری رئیں گے۔ گروپ بی میں پاکستان اور بھارت، متحدہ عرب امارات، زمبابوے، آئر لینڈ، جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز شامل ہیں۔ اس مرحلے میں 7 کی 7 ٹیمیں ایک دوسرے سے ایک ایک مقابلہ کریں گی۔ جس سے 4 بہترین کارکردگی کی حامل ٹیمیں ناک آؤٹ یعنی کوائٹر فائنل میں شریک ہوں گی۔

تفصیل[ترمیم]

ٹیم کھیلے جیتے ہارے برابر بلا نتیجہ رن ریٹ پوائنٹ
 بھارت 6 6 0 0 0 +1.827 12
 جنوبی افریقا 6 4 2 0 0 +1.707 8
 پاکستان 6 4 2 0 0 −0.085 8
 ویسٹ انڈیز 6 3 3 0 0 −0.053 6
 آئرلینڈ 6 3 3 0 0 −0.933 6
 زمبابوے 6 1 5 0 0 −0.527 2
 متحدہ عرب امارات 6 0 6 0 0 −2.032 0

جنوبی افریقہ بمقابلہ زمبابوے[ترمیم]

15 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
جنوبی افریقا 
339/4 (50 overs)
بمقابلہ
 زمبابوے
277 (48.2 اوور)
ڈیوڈ ملر 138* (92)
ایلٹن چیگیمرا 1/30 (4 اوور)
ہیملٹن مساکاڈزا 80 (74)
عمران طاہر 3/36 (10 اوور)
میچ 3 ساؤتھ افریقہ 62 رنز سے جیتا
سیڈون پارک، ہیملٹن
امپائر: Ranmore Martinesz (سری لنکا) اور روڈ ٹکر (آسٹریلیا)
مرد میدان: ڈیوڈ ملر
  • زمبابوے نے ٹاس جیت کن پہلے فیلڈنگ کا انتخاب کیا
  • David Miller اور JP Duminy پانچویں ووکٹ پر (256*) رنز کی شراکت داری کا عالمی ریکارڈ بنایا ہے۔

بھارت بمقابلہ پاکستان[ترمیم]

15 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
بھارت 
300/7 (50 اوور)
بمقابلہ
 پاکستان
224 (47 اوور)
ویرات کوہلی 107 (126)
سہیل خان 5/55 (10 اوور)
مصباح الحق 76 (84)
محمد شامی 4/35 (9 اوور)
میچ 4 انڈیا 76 رنز سے جیتا۔
ایڈیلیڈ اوول، ایڈیلیڈ
امپائر: Ian Gould (انگلینڈ) اورRichard Kettleborough (انگلینڈ)
مرد میدان: ویرات کوہلی
  • بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کی

جمہوریہ آئرلینڈ بمقابلہ ویسٹ انڈیز[ترمیم]

16 فروری
سکور کارڈ
آئرلینڈ 
307/6 (45.5اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
304/7 (50 اوور)
پال اسٹرلنگ 92 (84)
جیروم ٹیلر 3/71 (8.5 اوور )
لینڈل سمنز 102 (84)
جارج ڈوکریل 3/50 (10 رنز)
میچ 5 جمہوریہ آئرلینڈ 4 وکٹوں سے جیتا
سکسٹن اوول، نیلسن
امپائر: Richard Illingworth (انگلینڈ) اور Bruce Oxenford (آسٹریلیا)
مرد میدان: پال اسٹرلنگ
  • جمہوریہ آئرلینڈ نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ منتخب کی

زمبابوے بمقابلہ متحدہ عرب امارات[ترمیم]

19 فروری
سکور کارڈ
زمبابوے 
286/6(48اوور)
بمقابلہ
شامین انور 67 (59)
ٹینڈائی چٹارا 3/42 (10اوور)
سین ولیمز 76 (110)
محمد توقیر 2/51 (9اوور)
میچ 8 زمبابوے 4 وکٹوں سے فاتح ٹھہرا
سکسٹن اوول، نیلسن
امپائر: جونیس ڈینل کلوٹی(جنوبی افریقہ) اور کریسٹوفر بلایر جافینی
مرد میدان: سین ولیمز
  • زمبابوے نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا انتخاب کیا

پاکستان بمقابلہ ویسٹ انڈیز[ترمیم]

21 فروری
سکور کارڈ
پاکستان 
160/10 (39اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
310/6 (50اوور)
عمر اکمل 59 (81)
جیروم ٹیلر 3/15 (7اوور)
دنیش رامدن 51 (65)
حارث سہیل 2/62 (9اوور)
میچ 10 ویسٹ انڈیز 150 رنز سے فاتح ٹھہرا
ہاگلے اوول، کرائسٹ چرچ
امپائر: ماریس ارسموس (جنوبی افریقہ) اور نگل لونگ (انگلینڈ)
مرد میدان: آندرے رسل (ویسٹ انڈیز(
  • ٹاس پاکستان نے جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا

بھارت بمقابلہ جنوبی افریقہ[ترمیم]

22 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
بھارت 
307/7 (50اوور)
بمقابلہ
 جنوبی افریقا
177/10 (40۔2اوور)
شیکھر دھون 137 (146)
رویچندر اشون 3/41 (10)
ففڈُپلس 55 (71)
مورنے مورکل 2/59 (10)
میچ 13 بھارت 130رنز سے فاتح ٹھہرا
میلبورن کرکٹ گراؤنڈ، میلبورن
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور ریچرڈ کٹلی (انگلینڈ)
مرد میدان: شیکھر دھون (بھارت)
  • ٹاس بھارت نے جیتا اور بیٹنگ کا فیصلہ کیا

ویسٹ انڈیز بمقابلہ زمبابوے[ترمیم]

24 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
ویسٹ انڈیز 
372/2 (50اوور)
بمقابلہ
 زمبابوے
289/10 (43۔2اوور)
کرس گیل 215 (147)
جیروم ٹیلر 3/38 (10)
سین ولیمز 76 (61)
ہمیلٹن ماساکڈزا 1/39 (6۔2)
میچ 15 ویسٹ انڈیز 73 رنز سے فاتح ٹھہرا (D/L method)
مانوکا اوول، کینبرا
امپائر: سٹیو ڈیوس اور آین گولڈ (انگلینڈ)
مرد میدان: کرس گیل (ویسٹ انڈیز)
  • ٹاس ویسٹ انڈیز نے جیتا اور بیٹنگ کا انتخاب کیا

جمہوریہ آئرلینڈ بمقابلہ متحدہ عرب امارات[ترمیم]

25 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
آئرلینڈ 
279/8 (49۔2اوور)
بمقابلہ
 متحدہ عرب امارات
278/9 (50اوور)
گرے ولسن 80 (69)
پال سٹرنگ 2/27 (10)
شامین انور 106 (83)
امجد جاوید 3/60 (10)
میچ 16 جمہوریہ آئرلینڈ نے 2 وکٹوں سے فتح سمیٹی
برسبین کرکٹ گراؤنڈ، برسبین
امپائر: مائیکل گوفھ اور نائجل لانگ (انگلینڈ)
مرد میدان: گرے ولسن (جمہوریہ آئر لینڈ)
  • ٹاس جمہوریہ آئر لینڈ نے جیتا اور فیلڈنگ کا انتخاب کیا

جنوبی افریقہ بمقابلہ ویسٹ انڈیز[ترمیم]

27 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
جنوبی افریقا 
408/5 (50 اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
151/10 (33۔1 اوور)
اے بی ڈدلیرز 162 (66)
عمران طاہر 5/45 (10)
جیسن ہولڈر 56 (48)
کرس گیل 2/21 (4)
میچ 19جنوبی افریقہ نے 257 رنز سے فتح پائی
سڈنی کرکٹ گراؤنڈ، سڈنی
امپائر: سٹیوو ڈیوس اور این گولڈ (انگلینڈ)
مرد میدان: اے بی ڈولیرز (جنوبی افریقہ)
  • ٹاس جنوبی افریقہ نے جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا

بھارت بمقابلہ متحدہ عرب امارات[ترمیم]

28 فروری (د/ر)
سکور کارڈ
بھارت 
104/1 (18۔5 اوور)
بمقابلہ
 متحدہ عرب امارات
102/10 (31۔3 اوور)
روہت شرما 57 (55)
رویچندرن اشون 4/25 (10)
شامین انور 35 (49)
محمد نوید 1/35 (5)
میچ 21 بھارت نے 9 وکٹوں سے میچ جیتا
مغربی آسٹریلیا کرکٹ ایسوسی ایشن گراؤنڈ، پرتھ
امپائر: بلی بوڈن (نیوزی لینڈ) اور مائیکل گوفھ (انگلینڈ)
مرد میدان: رویچندرن اشون (بھارت)
  • ٹاس متحدہ عرب امارات نے جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا

پاکستان بمقابلہ زمبابوے[ترمیم]

1 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

جمہوریہ آئرلینڈ بمقابلہ جنوبی افریقہ[ترمیم]

3 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

پاکستان بمقابلہ متحدہ عرب امارات[ترمیم]

4 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

بھارت بمقابلہ ویسٹ انڈیز[ترمیم]

6 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

پاکستان بمقابلہ جنوبی افریقہ[ترمیم]

7 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

جمہوریہ آئرلینڈ بمقابلہ زمبابوے[ترمیم]

7 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

بھارت بمقابلہ جمہوریہ آئرلینڈ[ترمیم]

10 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

جنوبی افریقہ بمقابلہ متحدہ عرب امارات[ترمیم]

12 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

بھارت بمقابلہ زمبابوے[ترمیم]

14 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

ویسٹ انڈیز بمقابلہ متحدہ عرب امارات[ترمیم]

15 مارچ
سکور کارڈ
بمقابلہ

جمہوریہ آئرلینڈ بمقابلہ پاکستان[ترمیم]

15 مارچ (د/ر)
سکور کارڈ
بمقابلہ

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]