مائیکروسافٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مائیکروسافٹ
Public
تجارت بطور نیزڈیکMSFT
Dow Jones Industrial Average Component
NASDAQ-100 Component
S&P 500 Component
صنعت Computer software
قیام Albuquerque, نیو میکسیکو, United States (4 اپریل 1975 (1975-04-04))
بانی بل گیٹس, Paul Allen
صدر مقام Microsoft Redmond Campus, Redmond, Washington، U.S.
علاقہ خدمت
Worldwide
کلیدی لوگ
مصنوعات
خدمات Online services
آمدنی Increase2.svg US$ 73.72 billion (2012)[1]
کم US$ 21.76 billion (2012)[1]
کم US$ 16.97 billion (2012)[1]
کل اثاثے Increase2.svg US$ 121.2 billion (2012)[1]
کل ایکوئٹی Increase2.svg US$ 66.36 billion (2012)[1]
ملازمین کی تعداد
97,000 (2013) [2]
ذیلی ادارے List of Microsoft subsidiaries
ویب سائٹ Microsoft.com
Footnotes / references
[3]

مائیکروسافٹ کارپوریشن امریکی سوفٹویئر کمپنی جو ونڈوز عملیاتی نظام (Windows Operating System) بنانے کی وجہ سے مشہور ہے۔ اس کمپنی کے پاس دنیا میں زیادہ تر ذاتی کمپیوٹر پر استعمال ہونے والے عملیاتی نظام (Operating System) پر اجارہ داری ہے۔ اس کے ملازمین کی تعداد76,000 سے زیادہ ہے جو 102مختلف ممالک میں کام کرتے ہیں (ان ملازمین کی کثیر تعداد امریکی ریاست واشنگٹن کے شہر ریڈمنڈ میں مقیم ہے)۔ کمپنی کی سالانہ فروخت 44.28 ارب امریکی ڈالر سے زیادہ ہے۔ اس کے عملیاتی نظاموں میں ونڈوز کا عملیاتی نظام شامل ہے جس کا نیا نسخہ (version) بنام ونڈوز سیون کا حال ہی میں اجرا کیا گیا ہے۔ اور اب ونڈوز 8 بھی لانچ ہونے والی ہے۔

ذیلی سافٹ وئیرز[ترمیم]

مائیکرو سافٹ کے مقبول ترین سافٹ وئیرزسوفٹویئر جو مائیکرو سافٹ کی مقبولیت کا سبب بنے;

  • سسٹم سافٹ وئیرز
  • ایپلیکیشن سافٹ وئیرزApplication

سسٹم سافٹ وئیرز[ترمیم]

ایپلیکیشن سافٹ وئیرز[ترمیم]

توسیع[ترمیم]

حال ہی میں مائیکرو سافٹ نے نوکیا کمپنی کو خرید لیا ہے۔
اب نوکیا موبائل کمپنی مائیکرو سافٹ کمپنی کی ملکیت ہے۔ دوسرے الفاظ میں مائیکرو سافٹ نے اپنی کمپنی کی توسیع کرلی ہے۔
مائیکرو سافٹ نوکیا ونڈو فون کی بجائے اینڈروئیڈ موبائل فون مارکیٹ میں متعارف کروانے کا ارداه رکھتی ہے

متنازع[ترمیم]

2013ء میں بلومبرگ نے انکشاف کیا کہ مائیکروسافٹ امریکی حکومت سے جاسوسی کے میدان میں بھرپور تعاون کرتا ہے۔[4]

مزید[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ "Microsoft Corporation Financial Statements"۔ Google۔ February 28, 2011۔ اخذ کردہ بتاریخ April 4, 2011۔ 
  2. "Timeline Photos"۔ Facebook۔ اخذ کردہ بتاریخ 2013-04-08۔ 
  3. "2011 Form 10-K, Microsoft Corporation"۔ United States Securities and Exchange Commission۔ July 28, 2011۔ اخذ کردہ بتاریخ August 23, 2011۔ 
  4. "Not just telcos, THOUSANDS of companies share data with US spies"۔ دی رجسٹر۔ 14 جون 2013ء۔