مزراحی یہودی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مزراحی یہود
کل آبادی
3.5 ملین
گنجان آبادی والے علاقے
قرون وسطی 
 اسرائیل3,200,000
 ایران8,756 (2012)
 مصر200 (2008)
 یمن50 (2016)
 عراق8 در بغداد (2008)
400–730 خاندان در عراقی کردستان (2015)
 سوریہ>20 (2015)
 لبنان<100 (2012)
 بحرین37 (2010)
وسطی اور شمالی ایشیا 
 قازقستان15,000
 ازبکستان12,000
 کرغیزستان1,000
 تاجکستان100
یورپ اور یوریشیا 
 روس30,000 سے اوپر
 آذربائیجان11,000
 جارجیا8,000
 مملکت متحدہ*7,000
 بلجئیم*800
 ہسپانیہ*701
 آرمینیا100
 ترکی100
مشرقی اور شمال مشرقی ایشیا 
 ہانگ کانگ420
 فلپائن150
 جاپان109
 چین90
براعظم امریکا 
 ریاستہائے متحدہ250,000
 برازیل7,000
زبانیں
مذہب
یہودیت
متعلقہ نسلی گروہ
اشکنازی یہود، مغربی یہود، عرب قوم، آشوری قوم، سفاردی یہودی، دیگر یہودی نسلی تقسیمیں۔

* یورپی یونین کے رکن کے طور پر ملک کو ظاہر کرتا ہے

مزراحی یہودی، مزراحیم کو (عبرانی: מזרחים‎ یا (عربی: الم‍شرقيون یا עֲדוֹת-הַמִּזְרָח؛ مشرق کی  برادریاں ، ایدوت ھا مزراخ یا عبرانی: 'مشرق کے بیٹے' ایدو(ھ) ھا(م)مزراخ، بن ھا-مزر] یا مشرقی یہودی) ، بھی کہا جاتا ہے[1]ایسے  یہودی ہیں جو مشرق وسطی کی یہودی برادری کی نسل سے ہیں   مزراحی اصطلاح زیادہ تر اسرائیل میں ان یہودیوں کے لیے  استعمال کیا جاتا ہے جو اپنا آبائی تعلق موجودہ مسلم اکثریت والے ممالک سے جوڑتے ہیں۔ ان میں بابل کے علاقوں کے  یہودی اور عراق، شام، بحرین، کویت، داغستان، آذربائیجان، ایران، لبنان، ازبکستان، قفقاز، کردستان، یمن، ترکی، افغانستان، بھارت اور پاکستان کے  پہاڑی علاقوں  کے یہودی شامل ہیں۔ مزراحیم کی اصطلاح  اکثر مغربی یہودیوں اور شمالی افریقا (مصر، لیبیا، تیونس، الجزائر اور مراکش) کے رہنے والے سفاردی یہودیوں کے لیے بھی استعمال ہوتا ہے ۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "مزراحی یہودی". دائرۃ المعارف بریطانیکا. اخذ شدہ بتاریخ 8 مارچ 2015.