کوسٹاریکا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں


República de Costa Rica
جمہوریہ کوسٹا ریکا
کوسٹا ریکا کا پرچم کوسٹا ریکا کا قومی نشان
پرچم قومی نشان
شعار: Vivan siempre el trabajo y la paz
(محنت و امن جیتے رہیں)
ترانہ: Noble patria, tu hermosa bandera
کوسٹا ریکا کا محل وقوع
دارالحکومت سان ہوزے
عظیم ترین شہر سان ہوزے
دفتری زبان(یں) ہسپانوی
نظامِ حکومت
صدر
جمہوریہ (صدارتی نظام)
اوسکار آرئیاس
آزادی
- ہسپانیہ سے
UPCA سے
ہسپانیہ سے
15 ستمبر 1821ء
1838ء
رقبہ
 - کل
 
 - پانی (%)
 
51100  مربع کلومیٹر (128)
19730 مربع میل
0.7
آبادی
 - تخمینہ:2007ء
 - کثافتِ آبادی
 
4,468,000 (117)
85 فی مربع کلومیٹر(113)
220 فی مربع میل
خام ملکی پیداوار
     (م۔ق۔خ۔)

 - مجموعی
 - فی کس
تخمینہ: 2007ء

55.95 ارب بین الاقوامی ڈالر (81 واں)
13500 بین الاقوامی ڈالر (59 واں)
انسانی ترقیاتی اشاریہ
   (تخمینہ: 2007ء)
0.846
(48) – بلند
سکہ رائج الوقت کولون (CRC)
منطقۂ وقت
 - عمومی
۔ موسمِ گرما (د۔ب۔و)

(یو۔ٹی۔سی۔ -6)
غیر مستعمل (یو۔ٹی۔سی۔ -6)
انٹرنیٹ ڈومین .cr
کالنگ کوڈ +506
Map of Costa Rica.svg

کوسٹاریکا وسط امریکی ملک ہے جو بحر الکاہل کے کنارے واقع ہے۔ اس نام کا لغوی معنی دولتمند کنارا ہے اور سرکاری نام جمہوریہ کوسٹا ریکا ہے۔ اس کے شمال میں نکاراگوا جنوب مشرق میں پناما، مغرب میں بحرلکالہل، مشرق میں بحیرہ کیریبین اور جنوب میں ایکواڈور ہے۔ کوسٹاریکا کی آبادی پینتالیس لاکھ کے لگ بھگ ہے جس کا ایک چوتھائی اس کے سب سے بڑے شہر سین جوز میں رہتا پے۔

سلطنت ہسپانیہ کی سولہویں صدی میں آمد سے قبل کوسٹاریکا کی مقامی آبادی بہت کم تھی۔ سلطنت ہسپانیہ کے بعد قلیل مدتی میکسیکی سلطنت اول کا حصہ بنا اور اس کے بعد جمہوریہ وسطی امریکا کا ممبر بنا اور پھر 1847 میں آزادی حاصل کی۔ آزادی کے بعد کوسٹاریکا لاطینی امریکا کی سب سے مستحکم اور ترقی پسند ریاست کا درجہ رکھتی ہے۔ 1949 کی خانہ جنگی کے بعد کوسٹاریکا نے اپنی فوج تحلیل کر دی۔ کوسٹاریکا فرانسیسی بین الاقوامی تنظیم کا مبصر ممبر ہے۔

2015 میں انسانی ترقیاتی اشاریہ کی فہرست میں کوسٹاریکا کا نمبر 69 تھا جو لاطینی امریکا کی ریاستوں می سب سے بہتر ہے۔ اقوامی متحدہ کے ترقیاتی پروگرام کے مطابق اس آمدنی والے ممالک میں کوسٹاریکا انسانی ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل میں قدرے بہتر ہے۔ ایک دور میں زراعت پر مبنی یہ ریاست آج فنانس، دواسازی اور سیر و تفریح کی طرف چل پڑی ہے۔

تاریخ[ترمیم]

قبل از کولمبین دور[ترمیم]

کوسٹاریکا کے قومی عجاعب گھر میں موجود گول پتھر جو ملک کی شناختی علامت ہے.

تاریخ دانوں نے کوسٹاریکا کے مقامی باشندوں کو درمیانی امریکی (میزوامریکا) اور انڈیز کا درمیانی علاقہ قرار دیا ہے جہاں ان دونوں مقامی ثقافتوں میں ہم آہنگی ملتی ہے۔

کوسٹاریکا میں انسانی آمد کے اثرات 7000 سے 10000 قبل مسیح میں بنے پتھر کے اوزاروں سے تریالبا کی وادی میں ملتے ہیں جب شکار اور اکٹھا کرنے والوں نے یہاں بسیرا کرنا شروع کیا۔ اس کے علاوہ نیزوں اور تیروں کی دریافت سے کلووس تہذیب کا اس خطہ میں برابری سے موجود ہونے کا پتا چلتا ہے۔

زراعت 5000 سال قبل شروع ہوئی اور پیداوار میں ذیادہ شمار زمینی جڑوں کا تھا جیسے گاجر اور دیگر سبزیاں۔

اس علاقہ میں 2000 اور 3000 قبل مسیح میں مٹی کے برتنوں کے استعمال شروع ہونے کی نشانیاں ملی ہیں اور مختلف قسم کے برتن جس میں مٹکے، صراحی، پلیٹیں ملی ہیں جن پر رنگ و روغن سے جانوروں کی تصویریں بنائی گئی ہیں۔

کوسٹاریکا میں مقامی باشندوں کی ثقافت کا یہاں کی موجودہ آبادی پر بہت کم اثرات ہیں، اس کے مقابلہ میں دیگر امریکی ریاستوں میں یہ اثرات قدرے ذیادہ ہیں۔ اس کی ایک وجہ مقامی آبادیوں کا ہسپانویوں میں شادیاں کر کے زم ہوجانا بنی۔ صرف کورڈیلیریا ڈی تالامانکا کی پہاڑیوں میں کچھ ہی قبیلے جیسے بری بری اور بوروکا ہیں جنہوں نے اپنی ثقافت بچا کر رکھی ہے۔

سلطنت ہسپانیہ[ترمیم]

ہسپانوی زبان میں لاکوسٹاریکا کے لغوی معنی دولتمند کنارے کے ہیں، اس بات پر اتفاق نہیں کے آیا یہ نام کرسٹوفر کولمبس نے 1502 میں کوسٹاریکا کے مشرقی کناروں پہ اپنے آخری سفر پر دیا جب اسے مقامی آبادی کے پاس بیش قیمت سونے کے زیورات دیکھے، یہ کونسکوئسٹڈور گل گونزالز ڈاویلا نے دیا جو 1522 میں مغربی کنارے پر پہنچا اور مقامیوں سے سونا حاصل کیا۔

اروسی، صوبہ کارٹاگومیں 1686 سے 1693 کے درمیان تعمیر شدہ تاریخی چرچ .

نوآبادیاتی نظام کے دوران کوسٹاریکا کیپٹینسی جنرل گواتیمالا کا بالائی صوبہ تھا جو بیشتر دورانیہ نئے ہسپانوی وائسرائی نظام کا حصہ ہونے کے باوجود ہسپانوی سلطنت کا خودمختار علاقہ رہا۔ کوسٹاریکا کا گواتیمالا کے دالرلخلافہ سے فاصلہ، پناما سے تجارت پر پابندی اور سونے اور چاندی کی کمی کیوجہ سے کوسٹاریکا کو ہسپانوی سلطنت کے دورانیہ میں ایک غربت ذدہ، الگ تھلگ اور کم آبادئ والا علاقہ تصور کیا جاتا تھا۔

کوسٹاریکا کی اس دورمیں غربت کی ایک اور وجہ جبری مشقت کرانے کیلئے مقامی آبادی کی کمی بنی، اور بیشتر مقامی لوگ اپنے ہی کھیتوں پر کام کرتے تھے جس کے برعکس دیگر آبادیوں کے جہاں بڑے باغات پر جبری مشقت کرائی جاتی تھی۔

آزادی[ترمیم]

اقتصادی ترقی[ترمیم]

بیسویں صدی[ترمیم]

جغرافیہ[ترمیم]

موسم[ترمیم]

آب ہوا معلومات برائے کوسٹاریکا
مہینا جنوری فروری مارچ اپریل مئی جون جولائی اگست ستمبر اکتوبر نومبر دسمبر سال
اوسط بلند °س (°ف) 27
(81)
27
(81)
28
(82)
28
(82)
27
(81)
27
(81)
27
(81)
27
(81)
26
(79)
26
(79)
26
(79)
26
(79)
26.8
(80.5)
اوسط کم °س (°ف) 17
(63)
18
(64)
18
(64)
18
(64)
18
(64)
18
(64)
18
(64)
18
(64)
17
(63)
18
(64)
18
(64)
18
(64)
17.8
(63.8)
اوسط عمل ترسیب مم (انچ) 6.3
(0.248)
10.2
(0.402)
13.8
(0.543)
79.9
(3.146)
267.6
(10.535)
280.1
(11.028)
181.5
(7.146)
276.9
(10.902)
355.1
(13.98)
330.6
(13.016)
135.5
(5.335)
33.5
(1.319)
1,971
(77.6)
موجودہ ممکنہ دھوپ 40 37 39 33 25 20 21 22 20 22 25 34 28.2
ماخذ: [1]

چرند پرند[ترمیم]

دریا[ترمیم]

فہرست متعلقہ مضامین کوسٹاریکا[ترمیم]

Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Costa Rica Weather". کوسٹاریکا کا موسم