تسمیہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

تسمیہ کا لغوی معنی ہے نام لینا اور شریعت کی اصطلاح میں اللہ کا نام لینا اس کے مختلف الفاظ احادیث میں وارد ہوئے ہیں سب سے مشہور الفاظ بسم اللہ الرحمن الرحیم ہیں قرآن پاک کی آیت ہے مگر سورہ فاتحہ یا اور کسی سورۃ کا جزو نہیں اسی لیے نماز میں جہر کے ساتھ نہ پڑھی جائے۔ بخاری و مسلم میں مروی ہے کہ حضور اقدس (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) اورصدیق اکبر و فاروق اعظم (رض) نماز الْحَمدُ للّٰہِ رَبِّ الْعَالَمِیْنَ سے شروع فرماتے تھے۔