امام شافعی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
Islamic scholar
ابو عبداللہ محمد بن ادریس الشافعی
ابو عبداللہ محمد بن ادریس شافعی، اسلامی خطاطی
معروفیت Shaykh al-Islām
پیدائش 767 CE/150 AH
غزہ، فلسطین
وفات 20 جنوری، 820 عیسوی/30 رجب، 204 ہجری (عمر 52-53)
al-Fustat، مصر
قومیت عرب لوگ
فقہی مذہب اجتہاد
شعبۂ عمل فقہ
افکار و نظریات Shafi'i madhhab
کارہائے نمایاں رسالہ: اصول الفقہ، کتاب امم الرسالہ
مؤثر شخصیات
متاثر شخصیات
حصہ سلسلہ مقالا بہ

فقہ

آئمہ فقہ

امام ابو حنیفہ · امام مالک
امام شافعی · امام احمد بن حنبل
امام جعفر صادق

فقہ خمسہ

فقہ حنفی · فقہ شافعی
فقہ مالکی · فقہ حنبلی
فقہ جعفری

تقسیم بلحاظ تقلید

احناف · شوافع
مالکی · حنابلہ
مجتہدین · غیر مقلد

اقسام جائز و ناجائز

فرض <=> حرام
واجب <=> مکروہ تحریمی
سنت مؤکدہ <=> اساءت
سنت غیرمؤکدہ <=> مکروہ تنزیہی
مستحب <=> خلافِ اولی
مباح


نقشہ: اہلسنت والجماعت کی فقہ اور حدیث کے ائمہ کے مقامات پیدائش

محمد بن ادریس بن العباس بن عثمان بن شافع بن السائب بن عبید بن عبد زید ابن ھاشم بن المطلب بن عبد مناف القرشی۔ یہ سید المرسلین سیدنا محمد ابن عبداللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ " عبد مناف " کے ذریعے ملتے ہیں. شافعی قریشی ہیں اور والدہ کی طرف سے (مشہور قول کی بنا پر کہ) آپ کی والدہ ایک شریف قبیلہ الأزد سے تھیں جن کا نام السيدة فاطمہ ( أم حبيبہ ) الأزديہ تھا، یہ قبیلہ یمن کہ السعید سے تعلق رکھتا تھا.

حالات زندگی[ترمیم]

آپ ماہ رجب سال 150ھ بمطابق 768ء میں شہر غزہ ، فلسطین میں پیدا ہوئے۔ آپکے والد مکہ مکرمہ سے مسلمین کے ساتھ ہجرت کر کے فلسطین آگئے تھے ، اسکے بعد غزہ و عسقلان میں بھی رہے۔ امام شافعی کی ولادت کے بعد کچھ دنوں ہی میں انکے والد کا انتقال ہوگیا۔ انکی والدہ انکو واپس مکہ لے آئیں اور وہیں انکی علمی تربیت ہوئی۔ آپ امام مالک کے شاگرد بھی رہے ، اور آپ کی عمر کا بیشتر حصہ مکہ ، مدینہ ، بغداد اور مصر میں گزرا اور آخرکار مصر ہی میں وفات پائی۔ آپ اپنے زمانہ کے بہت بڑے عالم اور فقیہ تھے۔ عربی زبان پر بڑی قدرت حاصل تھی۔ اور اعلٰی درجہ کے انشاپرداز تھے۔ آپ کی دو کتب (کتاب الام) اور (الرسالہ) کو شہرت دوام حاصل ہوئی۔ صدیوں تک مصر عرب ، شام ، عراق ، اور ایران میں آپ کی قابلیت کا چرچہ رہا۔

مسلم فقہی آئمہ کرام بلحاظ ترتیب زمانی ولادت
ترتیب نام امام مکتبہ فکر سال و جائے پیدائش سال و جائے وفات تبصرہ
1 ابو حنیفہ اہل سنت 80ھ ( 699ء ) کوفہ 150ھ ( 767ء ) بغداد فقہ حنفی
2 جعفر صادق اہل تشیع 83ھ ( 702ء ) مدینہ 148ھ ( 765ء ) مدینہ فقہ جعفریہ، کتب اربعہ
3 مالک اہل سنت 93ھ ( 712ء ) مدینہ 179ھ ( 795ء ) مدینہ فقہ مالکی، موطا امام مالک
4 شافعی اہل سنت 150ھ ( 767ء ) غزہ 204ھ ( 819ء ) فسطاط فقہ شافعی
5 احمد بن حنبل اہل سنت 164ھ ( 781ء ) مرو 241ھ ( 855ء ) بغداد فقہ حنبلی ،مسند احمد بن حنبل

تصانیف[ترمیم]

  1. الرسالہ القدیمہ
  2. الرسالہ الجدیدۃ
  3. اختلاف الحدیث
  4. جماع العلم
  5. ابطال الاستحسان
  6. احکام القرآن
  7. بیاض الغرض
  8. صفہ الامر والنھی
  9. اختلاف العراقیین
  10. فضائل قریش
  11. کتاب: الام
  12. کتاب: السُـنَن
  13. کتاب: المبسوط
  14. المسند الشافعی

حوالہ جات[ترمیم]

كتاب: الأئمہ الأربعہ نوشتہ: دكتور مصطفی الشكعہ کتاب الرسالہ کا اردو ترجمہ: محمد مبشر نذیر

[www.mubashirnazir.org/ER/L0017-00-Risala.htm]

  1. ^ http://historyofislam.com/contents/the-classical-period/imam-ja%E2%80%99afar-as-sadiq/
  2. ^ The Origins of Islamic Law: The Qurʼan, the Muwaṭṭaʼ اور Madinan ʻAmal, by Yasin Dutton, pg. 16