مزدلفہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مزدلفہ
مُزْدَلِفَة
سعودی عرب کے شہر
Mosque and pebble-collection zone at Muzdalifah
Mosque and pebble-collection zone at Muzdalifah
مزدلفہ is located in سعودی عرب
مزدلفہ
مزدلفہ
Location of Mudalifah
متناسقات: متناسقات: لوا خطا package.lua میں 80 سطر پر: module 'Module:ISO 3166/data/SA' not found۔ 21°23′33″N 39°56′16″E / 21.39250°N 39.93778°E / 21.39250; 39.93778
ملک Flag of Saudi Arabia.svg سعودی عرب
سعودی عرب کے علاقہ جات المکہ علاقہ
حکومت
 • Regional Governor Khalid bin Faisal Al Saud
منطقۂ وقت Arabia Standard Time (UTC+3)
مزدلفہ
Al-Mash'ar Al-Haram
The Sacred Grove
ٱلْمَشْعَر الْحَرَام
Masy'aril Haram Mosque in Muzdalifah, January 2015.jpg
مزدلفہ is located in سعودی عرب
مزدلفہ
Location in present-day Saudi Arabia
بنیادی معلومات
مقام Muzdalifah, المکہ علاقہ، حجاز، Saudi Arabia
متناسقات 21°23′10″N 39°54′44″E / 21.38611°N 39.91222°E / 21.38611; 39.91222
مذہبی انتساب اسلام
ملک سعودی عرب
انتظامیہ Saudi Arabian government
نوعیتِ تعمیر Mosque

مزدلفہ (عربی: مزدلفة) حج سے متعلقہ ایک کھلی جگہ ہے۔ یہ منی کے جنوب مشرق میں منی اور عرفات کے درمیان میں واقع ہے۔ ہر سال مسلمان حج کے موقع پر 9 ذوالحجہ کو مغرب کے بعد عرفات سے یہاں آتے ہیں اور رات کھلے آسمان کے نیچے بسر کرتے ہیں۔ یہاں سے ہی شیطانوں یا جمرات کو مارنے کے لیے کنکریاں بھی چنی جاتی ہیں۔ اگلے دن فجر کے بعد حجاج منی کے لیے روانہ ہو جاتے ہیں۔

وجہ تسمیہ[ترمیم]

مزدلفہ کی وجہ تسمیہ یہ ہے کہ یہاں حضرت آدم و حوا علیہما السلام اکٹھے ہوئے اور ایک دوسرے کے قریب ہو گئے یا یہ کہ یہاں جمع بین الصلواتین ہوتی ہے یا یہ کہ لوگ یہاں قیام کرکے قرب الہی حاصل کرتے ہیں اللہ نے ہمیں عرفات سے واپس آنے کے بعد مشعر حرام کے پاس ذکر کرنے کا حکم دیا ہے۔[1]

جائے وقوع[ترمیم]

مزدلفہ منی اور عرفات کے درمیان میں واقع ہے۔ اس کا کل رقبہ 9,63 مربع کلو میٹر ہے۔

زیارت[ترمیم]

مزدلفہ کا قیام یوم عرفہ ایک دن پہلے ہوتا ہے۔ یہاں اللہ کی بڑائی بیان کی جاتی ہے اور ہمیشہ دعا کی جاتی ہے۔ عرفات میں ظہر اور عصر ایک ساتھ پڑھی جاتی ہے۔ اسے جمع بین الصلوتین کہتے ہیں۔ یہ نمازیں ظہر کے وقت ادا کی جاتی ہیں۔ اسلامی تقویم کے ماہ ذوالحجہ کے نویں تاریخ کے غروب آفتاب کے بعد مسلمان مزدلفہ کی طرف رخ کرتے ہیں۔ بعض دفعہ زیادہ بھیڑ کی وجہ سے یہ سفر رات میں ختم ہوتا ہے۔ مزدلفہ پہونچے نے بعد ایک بار پھر جمع بین الصلوتین کی جاتی ہے اوت مغرب و عشا ایک ساتھ ادا کی جاتی ہے۔ یہاں عشا کی نماز محض دو رکعت ادا کی جاتی ہے۔ مزدلفہ میں ہی رمی جمار کے کنکر جمع کیے جاتے ہیں۔[2][3][4]

مقدس مقام[ترمیم]

مزدلفہ میں ایک مسجد بھی ہے جس کے اوپر کوئی چھت نہیں ہے۔[5][6][7][8] اسے مقدس موام (عربی زبان:ٱلْمَشْعَر الْحَرَام‎) کہا جاتا ہے۔[9]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تفسیرات احمدیہ، ملااحمد جیون
  2. Richard Francis Burton۔ Personal Narrative of a Pilgrimage to El Medinah and Meccah۔ صفحہ 226۔ The word jamrah is applied to the place of stoning, as well as to the stones.
  3. ابو داؤد۔ Sunan Abu Dawud: Chapters 519-1337۔ Sh. M. Ashraf۔ 1204. Jamrah originally means a pebble. It is applied to the heap of stones or a pillar.
  4. Thomas Patrick Hughes (1995) [1885]۔ Dictionary of Islam۔ صفحہ 225۔ آئی ایس بی این 978-81-206-0672-2۔ Literally "gravel, or small pebbles." The three pillars […] placed against a rough wall of stones […]
  5. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ Long1979 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  6. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ Danarto1989 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  7. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ Jones2005 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  8. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ BadawiSardar1978 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  9. قرآن 2:129 (ترجمہ از یوسف علی)