ابو سفیان بن حارث

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابو سفیان بن حارث
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش سنہ 565  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات سنہ 652 (86–87 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن جنت البقیع  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد حارث بن عبدالمطلب  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
عملی زندگی
پیشہ شاعر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
لڑائیاں اور جنگیں فتح مکہ،  غزوہ حنین،  غزوہ طائف  ویکی ڈیٹا پر (P607) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

اصل نام: مغیرہ کنیت: ابوسفیان

ابو سفیان رسول خدا صلی اللہ علیہ وسلم کے حقیقی چچا حارث بن عبدالمطلب کے بیٹے اور حضور کے ہم عمر اور رضاعی بھائی تھے جنہیں حلیمہ سعدیہ نے دودھ پلایا تھا۔[1]رسول اللہ نے نبوت کا اعلان فرمایا تو حضور کے مخالف ہو گئے۔ بڑے اچھے شاعر تھے اور رسول اللہ اور دوسرے مسلمانوں کی ہجو کیا کرتے تھے۔ رسول اللہ فتح مکہ کے ارادے سے مدینے سے روانہ ہوکر مقام ابوا پر پہنچے تو ابوسفیان اپنے بیٹے جعفر کو لے کر آپ کی خدمت میں حاضر ہوئے اور اسلام قبول کیا۔ بعد ازاں فتح مکہ، یوم حنین اور طائف میں آپ کے ہم رکاب رہے۔ غزوہ حنین میں مسلمانوں کے پاؤں اکھڑ گئے تھے تو دونوں باپ بیٹے رسول اللہ کے ساتھ رہے۔ ابوسفیان نے آپ کے خچر کی باگ پکڑ رکھی تھی۔ 20ھ میں وفات پائی اور جنت البقیع میں دفن ہوئے۔ رسول اللہ کے وصال کے بعد انہوں نے ایک درد ناک مرثیہ لکھا جو ابن عبد اللہ کی مشہور تصنیف (عقد الفرید) میں شامل ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. مواہب اللدنیہ ،امام قسطلانی،جلد اول مقصدثانی صفحہ 589 فرید بکسٹال لاہور