غزوہ ذات الرقاع

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
غزوہ ذات الرقاع
حصہ غزوات نبوی
غزوہ ذات الرقاع.JPG
نقشہ مقام غزوہ ذات الرقاع
تاریخ محرم 5 ہجری
625ء یا 627ء
مقام ذات الرقاع
نتیجہ
  • دشمن بھاگ گيا (بعض ذرائع دعوی کرتے ہیں کہ ایک معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے)[1][2][3]
سالار ورہنما
محمد نامعلوم
طاقت
400 [3][4] اتحادی فوج بنو محارب, بنو ثعلبہ اور بنو غطفان کی

وجہ تسمیہ[ترمیم]

رقاع کپڑے کے چیتھڑے کو کہتے ہیں اور ابو موسی اشعری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ اس غزوہ میں چلتے چلتے ہمارے پاوں پھٹ گئے اور ہم نے ان پر کپڑوں کے چیتھڑے لپیٹ لیے اسی لیے اس غزوے کا نام ذات الرقاع پڑ گیا-[5]

وجوہات[ترمیم]

واقعات[ترمیم]

نتائج[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ Rahman al-Mubarakpuri, Saifur (2005), The Sealed Nectar, Darussalam Publications, p. 192, http://books.google.co.uk/books?id=-ppPqzawIrIC&pg=PA192
  2. ^ “ The Expedition called Dhat-ur-Riqa”, Witness Pioneer.com (online version of The Sealed Nectar)
  3. ^ 3.0 3.1 Muir, William (1861), The life of Mahomet, Smith, Elder & Co, p. 223, http://books.google.co.uk/books?id=YDwBAAAAQAAJ&pg=PA223
  4. ^ Watt, W. Montgomery (1956). Muhammad at Medina. Oxford University Press. p. 30. ISBN 978-0-19-577307-1. (free online)
  5. ^ صحیح بخاری، کتاب مغازی، باب غزوہ ذات الرقاع، حدیث 4128


(مراجع)