سریہ سعد بن ابی وقاص

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

-

سریہ سعد بن ابی وقاص
سلسلہ سرایا نبوی
تاریخ ذوالقعدہ 1 ہجری
بعض کے نزدیک 2 ہجری
مقام خرار
محل وقوع
نتیجہ *قافلہ پہلے ہی گزر گیا تھا۔
خطۂ اراضی سعودی عرب
متحارب
مسلمان قریش مکہ
قائدین
سعد بن ابی وقاص نامعلوم
قوت
20 پوا قافلہ
نقصانات
لڑائی کی نوبت نا آئی

سریہ سعد بن ابی وقاص یا سریہ خرار تیسرا سریہ ہے جسے حضورﷺ نے ہجرت کے 9 مہینہ بعد ذی قعدہ بمطابق 623ء میں خرار کے جانب ایک قافلے کا پتہ چلانے کیلئے روانہ کیا۔ حضورﷺ نے سفید پرچم عطا کیا جسے مقداد بن عمرونے تھام لیا۔ اس سریہ میں کل 80 مہاجر صحابہ شریک تھے۔ مقصد یہ تھا کہ قریش کے قافلہ کو مقام خرار (جو جحفہ اور مکہ کے درمیان واقع ہے) سے آگے نہ بڑھنے دیں۔ اس سریہ کا علم سفید اور علمبردار مقداد ن عمرو تھے۔

واقعات[ترمیم]

سعد بن ابی وقاص کے الفاظ میں:

ہم پیدل ہی روانہ ہوگئے۔ رات میں چلتے اور دن میں چھپ جاتے۔ پانچویں دن صبح ہمیں پتہ چلا کہ قافلہ گزر چکا ہے۔ چنانچہ ہم مدینہ واپس لوٹ آئے۔

قافلہ ایک دن پہلے گزر چکا تھا [1]

ماقبل:
سریہ عبیدہ ابن حارث
سرایا نبوی
سریہ سعد بن ابی وقاص
مابعد:
سریہ عبد اللہ بن جحش
  1. الرحیق المختوم، صفحہ 271