حمزہ بن عبدالمطلب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

3ھ /624ء

حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے چچا اور رضاعی بھائی ہیں انہوں نے انہوں نے ثویبہ جو ابو لہب کی لونڈی تھی کا دودھ پیا تھا[1]۔ بعثت کے دو برس بعد جب ابوجہل حضور کی مخالفت میں حد سے تجاوز کر گیا تو حضور کی حمایت کے جوش میں اسلام قبول کر لیا۔ بے حد جری اور دلیر تھے۔ دوسرے مسلمانوں کے ساتھ مدینہ کو ہجرت کی۔ جنگ بدر میں حصہ لیا اور خوب داد شجاعت دی۔

شہادت[ترمیم]

جنگ احد میں وحشی نامی غلام ۔ غزوہ احد میں ابوسفیان کی بیوی ہندہ نے اپنے ایک غلام وحشی کو ان کے قتل پر مامور کیا جس نے آپ پر چھپ کر نیزہ پھینکا ۔ جب وہ شہید ہو گئے تو اس نے ان کا کلیجہ نکال کر کچا چبایا اور ان کی لاش کا مثلہ کیا۔ اس کا حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کو بے حد رنج تھا۔

سید الشہداء[ترمیم]

  1. ^ مواہب اللدنیہ ،امام قسطلانی،جلد اول مقصدثانی صفحہ 589 فرید بکسٹال لاہور