فروہ بن عمرو بن ودقہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فروہ بن عمرو بن ودقہ
معلومات شخصیت

فروہ بن عمرو بن ودقہ غزوہ بدر میں شریک قبیلہ خزرج کے انصار صحابی ہیں۔
فروہ بن عمرو بن ودقہ بن عبید بن عامر بن بیاضہ۔انصاری بیاضی۔بیعت عقبہ اور غزوۂ بدرمیں اور ان کے بعد کے تمام مشاہد میں رسول خداصلی اللہ علیہ وسلم کے ہمراہ شریک تھے۔حضرت نے ان کے اورعبد اللہ بن مخرمہ عامری کے درمیان میں مواخات کرادی تھی۔ان کی حدیث نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ ہے کہ تم میں سے کوئی قرآن پڑھنے میں ایک دوسرے پرآوازبلند نہ کرے۔اس حدیث کو امام مالک نے موطامیں یحییٰ بن سعید سے انھوں نے محمد بن ابراہیم تمیمی سے انھوں نے ابوحازم تمارسے انھوں نے بیاضی سے روایت کیاہے امام مالک نے موطامیں ان کا نام نہیں لکھاابن وضاح اورابن مزین کہتےتھے کہ امام مالک نے ان کا نام اس سبب سے نہیں لکھاکہ یہ ان لوگوں میں تھےجنھوں نے حضرت عثمان کے قتل میں اعانت کی تھی مگرابوعمرنے کہاہے کہ یہ بات کچھ صحیح نہیں معلوم ہوتی اوریہ کوئی وجہ بھی ذکرنہ کرنے کی نہیں ہوسکتی۔نبی صلی اللہ علیہ وسلم ان کواہل مدینہ کے باغوں میں میوہ جات کاتخمینہ کرنے کے لیے بھیجاکرتے تھےچنانچہ جب یہ باغ میں جات تھے توخوشوں کاشمارکرلیتےتھےپھران میں باہم کچھ ضرب وغیرہ کےقواعد جاری کرکے جوحساب بتلاتے تھے اس میں غلطی نہ ہوتی تھی۔ان کا تذکرہ تینوں (ابن مندہ ابو نعیم ابن عبد البر) نےلکھاہے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. اسد الغابہ جلد7صفحہ 794 مؤلف: ابو الحسن عز الدين ابن الاثير ،ناشر: المیزان ناشران و تاجران کتب لاہور