عبد الرحمن بن جبر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عبد الرحمن بن جبر
معلومات شخصیت

عبد الرحمن بن جبیر غزوہ بدر میں شامل صحابی ان کی کنیت ابو عبس ہے۔

حلیہ[ترمیم]

ان کی آنکھوں کی بینائی دور نبوت ہی میں چلی گئی تھی۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ایک عصا دیا تھا کہ اس کو لے کر چلنے سے روشنی معلوم ہوتی تھی۔ بڑھاپے میں جب بال سفید ہو گئے تھے تو بالوں میں مہندی کا خضاب لگاتے تھے۔[1]

نام ونسب[ترمیم]

عبد الرحمن نام، ابو عبس کنیت، قبیلہ اوس کے خاندانِ حارثہ سے ہیں، سلسلۂ نسب یہ ہے، عبد الرحمن بن جبیر بن عمرو بن زید بن جشم بن مجدعہ بن حارثہ بن حارث بن خزرج بن عمرو بن مالک بن اوس، جاہلیت میں عبد العزی نام تھا، حضرت محمدﷺ نے بدل کر عبد الرحمن رکھا۔

اسلام[ترمیم]

ہجرت سے قبل مسلمان ہوئے اور ابو بردہ کو ہمراہ لے کر بنو حارثہ کے بت توڑے، [2] خنیس بن حذافہ سے اخوت قائم ہوئی۔ آنحضرتﷺ کی زندگی ہی میں آنکھ جاتی رہی تھی، آپ نے ان کو ایک عصا دیا تھا کہ اس کو لے کر چلنے میں روشنی معلوم ہوگی۔

غزوات[ترمیم]

تمام غزوات میں شریک ہوئے، غزوہ بدر میں 48 سال کی عمر تھی۔ بنو نضیر میں کعب بن اشرف ایک یہودی تھا، رسول اللہ ﷺ اور مسلمان سب اس سے پریشان تھے،اس لیے انصار کی ایک جماعت اس کے قتل کے لیے آمادہ ہوئی ابو عبس بھی ان میں شامل تھے۔

وفات[ترمیم]

34ھ میں انتقال کیا، بیماری میں حضرت عثمان عیادت کو تشریف لائے، [3] لیکن مرض اور پیری نے جانبر نہ ہونے دیا، حضرت عثمان نے نماز جنازہ پڑھائی اور جنت البقیع میں لے جا کر دفن کیا، ابو بردہ بن زار، محمد بن مسلمہ، قتادہ بن نعمان ،سلمہ بن سلامہ بن وقش جیسے اکابر قبر میں اترے، وفات کے وقت عام روایت کے مطابق 70 سال کے تھے، لیکن یہ صحیح نہیں ،اوپر گزر چکا ہے کہ بدر میں 48 برس کا سن تھا، اس لئے ان کی عمر 80 سال قرار پائی ہے، استیعاب کے ایک نسخہ میں 70 کے بجائے 90 سال مذکور ہے۔

اولاد[ترمیم]

اولاد میں محمد اور زید دو لڑکے چھوڑے۔

فضل وکمال[ترمیم]

ایام جاہلیت ہی میں علم کا شوق تھا، صاحب اسد الغابہ کہتے ہیں: کان یکتب بالعربی قبل الاسلام اسلام سے قبل وہ عربی لکھ لیتے تھے مسلمان ہوکر قرآن و حدیث سیکھی 50 حدیثیں ان کے سلسلہ سے ہم تک پہنچی ہیں جن کے روایت کرنے والے رافع بنؓ خدیج کے پوتے عبایہ ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. صفہ اور اصحاب صفہ از مولانا مفتی مبشر ص 101
  2. استیعاب:2/690
  3. (اسد الغابہ:۳/)