عثمان بن مظعون

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عثمان بن مظعون
معلومات شخصیت
مقام پیدائش مکہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات سنہ 624  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
مدینہ منورہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
مدفن جنت البقیع  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام دفن (P119) ویکی ڈیٹا پر
زوجہ خولہ بنت حکیم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شریک حیات (P26) ویکی ڈیٹا پر
اولاد سائب بن عثمان بن مظعون  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اولاد (P40) ویکی ڈیٹا پر

عثمان بن مظعون محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے رضاعی بھائی ہیں جلیل القدر صحابی، عبادت گزاراہلِ بدر میں سے ہیں
جب سیدنا عثمان بن مظعون کا انتقال ہوا تو رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ان کے گال کا بوسہ لیااور رونے لگے یہاں تک کہ آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے مبارک آنسو سیدنا عثمان کے گال پر بہنے لگے اور صحابہ کرام بھی رو دئيے، پھر آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ارشاد فرمایا:

اے ابو سائب! تم اس دنیا سے اس طرح چلے گئے کہ تم نے اس کی کسی چیز سے تعلق نہ رکھا۔

آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے انہیں اَلسَّلَفُ الصَّالِح کے نام سے پکارا، نیز یہ وہ پہلے صحابی تھے جنہیں جنت البقیع میں دفن کیا گیا۔[1]
حضوراکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے عثمان بن مظعون کی قبرپرپتھرنصب فرمایا تاکہ اس پتھر کے سبب قبر کی پہچان رہے اورحضورعلیہ الصلٰوۃ والسلام کے خاندان مبارک سے وصال فرمانے والے افراد کو اس قبرکے قریب دفن کیاجائے، [2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. کنزالعمال، کتاب الفضائل، الحدیث:33604،ج11،ص337
  2. سنن ابی داؤد،کتاب الجنائز ،باب فی جمع الموتی فی قبروالقبریعلم