سنان بن ابوسنان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

سنان بن ابی سنانغزوہ بدر میں شریک صحابی تھے۔

نام ونسب[ترمیم]

سنان نام سلسلہ نسب یہ ہے، سنان بن ابی سنان بن محصن بن حرثان بن قیس بن لبد بن غنم بن دودان بن اسد بن خزیمہ۔

اسلام وہجرت[ترمیم]

زمانہ اسلام وہجرت متعین نہیں،غالباً اپنے والد ابو سنان کے ساتھ اسلام لائے ہوں گے اوران ہی کے ساتھ ہجرت کی ہوگی۔

غزوات[ترمیم]

غزوہ بدر،غزوہ احد وغزوہ خندق وغیرہ تمام لڑائیوں میں آنحضرتﷺ کے ہمرکاب رہے،[1] پھر 6ھ میں غزوۂ تبوک میں شریک ہوئے اوربیعت رضوان میں جب آنحضرتﷺ نے موت کی بیعت لینی شروع کی تو سنانؓ نے بھی ہاتھ بڑھایا، آنحضرتﷺ نے پوچھا کس چیز پر بیعت کرتے ہو، عرض کیا کہ جو آپ کے دل میں ہے۔ [2]،ابن عبدالبر نے یہ واقعہ ابو سنان کی طرف منسوب کیا ہے،جو صحیح نہیں ہے،کیوں کہ ابی سنان بیعت رضوان کے قبل بنو قریظہ میں وفات پاچکے تھے)

وفات[ترمیم]

32ھ میں وفات پائی۔[3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ابن سعد،جلد3،ق1:66
  2. استیعاب:2/707
  3. اسد الغابہ جلد1 صفحہ 986حصہ ہشتم مؤلف: ابو الحسن عز الدين ابن الاثير ،ناشر: المیزان ناشران و تاجران کتب لاہور