ابو قیس بن حارث

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابو قیس بن حارث
معلومات شخصیت
کنیت ابو قیس
عسکری خدمات
لڑائیاں اور جنگیں احد اورخندق

نام ونسب[ترمیم]

نام اورکنیت دونوں ابوقیس ہے،والد کا نام حارث تھا، نسب نامہ یہ ہے ابو قیس بن حارث بن قیس بن عدی بن سعد بن سہم قرشی السہمی، ان کے دادا قیس بن عدی سردار ان ِقریش میں سے تھے اورباپ حارث اس کینہ پرورگروہ میں تھا،جو قرآن کا مضحکہ اڑایا کرتا تھا اور جس کے متعلق یہ آیت نازل ہوئی تھی: [1] الَّذِينَ جَعَلُوا الْقُرْآنَ عِضِينَ ،فَوَرَبِّكَ لَنَسْأَلَنَّهُمْ أَجْمَعِينَ،عَمَّا كَانُوا يَعْمَلُونَ ،فَاصْدَعْ بِمَا تُؤْمَرُ وَأَعْرِضْ عَنِ الْمُشْرِكِينَ ،إِنَّا كَفَيْنَاكَ الْمُسْتَهْزِئِينَ [2] جن لوگوں نے قرآن کے ٹکڑے ٹکڑے کرڈالے،تمہارے رب کی قسم ہم ان کے اعمال کی ضرور باز پرس کریں گے پس تم کو جو حکم دیا گیا ہے اس کو کھول کر سنادو اورمشرکین کی پروا نہ کرو،جو لوگ تم پر ہنستے ہیں ہم ان کے لیے کافی ہیں۔

اسلام وہجرت[ترمیم]

لیکن اسی آذر کے گھر میں ابو قیس جیسا بت شکن پیدا ہوا ،جس نے دعوتِ حق کی آواز سنتے ہی لبیک کہا اورسبقت فی الاسلام کا شرف حاصل کیا،اسلام کے بعد پھر ہجرت حبشہ کا شرف حاصل کیا۔ [3]

غزوات[ترمیم]

احد اورخندق وغیرہ سب میں شریک ہوئے۔ [4]

شہادت[ترمیم]

حضرت ابوبکرؓ صدیق کے عہدِ خلافت میں ارتداد کے سلسلہ کی مشہور جنگ یمامہ میں شہادت پائی۔ [5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. (استیعاب:2/704)
  2. (الحجر:91،95)
  3. (اصابہ:7/158)
  4. (اسد الغابہ:5/279)
  5. (اصابہ:7/158)