ضلع گھوٹکی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ضلع
Ghotki District
پاکستان کے نقشے میں لال رنگ سے گھوٽکی ضلع
پاکستان کے نقشے میں لال رنگ سے گھوٽکی ضلع
گھوٹکی ضلع is located in سندھ
گھوٹکی ضلع
گھوٹکی ضلع
گھوٹکی ضلع is located in پاکستان
گھوٹکی ضلع
گھوٹکی ضلع
پاکستان کے نقشے میں لال رنگ سے گھوٽکی ضلع
متناسقات: District 28°06′N 69°11′E / 28.10°N 69.19°E / 28.10; 69.19متناسقات: District 28°06′N 69°11′E / 28.10°N 69.19°E / 28.10; 69.19
ضلعضلع گھوٹکی
ضلع کا قيام1983
رقبہ
 • کل6,726 کلومیٹر2 (2,597 میل مربع)
آبادی (2017)[1]
 • کل1,646,318
 • کثافت240/کلومیٹر2 (630/میل مربع)
منطقۂ وقتپاکستان کے معياری وقت (UTC+5)

ضلع گھوٹکی پاکستان کے صوبہ سندھ کا ایک ضلع ہے۔ 1998ء کی قومی مردم شماری کے مطابق ضلع کی کل آبادی 970،549 ہے۔ ضلعی صدر مقام میرپور ماتھیلو ہے۔

ضلع گھوٹکی کی سرحدیں مشرق میں بھارت، جنوب اور جنوب مغرب میں ضلع سکھر، مشرق میں ضلع کندھکوٹ اور شمال میں پنجاب کے ضلع رحیم یار خان کی تحصیل صادق آباد سے ملتی ہیں۔ سندھ کو پنجاب اور سرحد سے منسلک کرنے والی مرکزی ریلوے لائن اسی ضلع سے ہو کر گزرتی ہے اور یہاں کا ریتی ریلوے اسٹیشن پنجاب سے قبل سندھ میں ریل گاڑی کا آخری پڑاؤ ہے۔

گھوٹکی ٹال پلازہ

اکنامکس صنعت[ترمیم]

ضلع گھوٹکی، صوبہ سندھ کا صنعتی علاقہ ہے۔ گھوٹکی ضلع میں 47 صنعتی اداری ہیں۔ سندھ کو 70 فیصد گیس دیتا ہے جس میں گھوٹکی میں 2050 تیل کے کنویں ہیں اور گھوٹکی ضلع کا جی ڈی پی 200 بلین کے کریب ہے۔ گھوٹکی میں مقیم مقامی کمپنیوں میں۔OGDCL اینگرو کارپریشن، (FFC) فوجی فرٹیلازر کمپنی، (سابق پاک سعودی کھاد) ٹی ان بی لبٹری پاور پلانٹ، اینگرو پاورپروجن پلانٹ اور ڈوسن پاور پلانٹ شامل ہیں۔ ضلع گھوٹکی کے تین گیس فیلڈر بھی ہیں۔ ماڑی گیس فیلڈر، قادرپور گیس فیلڈر اور رحمت گیس فیلڈر شامل ہیں۔ گھوٹکی ضلع چالیس سوتی، جیننگ فیکٹروں میں سے ایک کاٹن ضلع کی بڑی فصلوں میں سے ایک ہے۔ایک اور فصل٫ چینی کی ہے۔ چار شوگر مل گھوٹکی میں واقع ہیں۔ جی ٹی ڈبلیو شوگر ملز_3، ایس جی ایم شوگر ملز، ڈاہرکی شوگر ملز اور رتی شوگر ملز شامل ہیں

گھوٹکی علاقہ اپنے آم، سبزی اور کھجور اور پیڑے کی کثرت سے بھی مشہور ہے۔ گھوٹکی ضلع کے اہم مصنوعات میں کپاس، گندم، چینی، چاول، دودھ وغیر شامل ہے۔ معیشت میں ماہی گیری اور سیاحت میں بھی اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

گھوٹکی کے پیڑے[ترمیم]

گھوٹکی کے پیڑے

گھوٹکی کی مشہور سوغات گھوٹکی کے پیڑے یہ اس لئے مشہور ہیں کیوں کہ خالص دودھ سے بنائے جاتے ہیں۔ اور ان میں بادام، اخروٹ، ناریل وغیرہ بھی شامل کئے جاتے ہیں۔

ضلع گوٹکی میں مل کمپناں[ترمیم]

گھوٹکی ضلع میں 47صنعتی ادارے کام کررے ہیں ان میں سے کچھ نیچے زیل میں دیئے گئے ہیں


مردم شماری[ترمیم]

مارچ 1998ء میں آدمشماری مطابق اس ضلع میں آبادی 970550 فیصد تھی جس میں 158500 فیصد لوگ شہر میں رہتے ہیں۔ جن کی کل آباديءَ کا 16.33 فیصد ہیں۔ آبادی کا 812050 فیصد حصہ گائوں میں رہتا ہے۔ جس میں کل آبادی کا 83.67 فیصد حصہ بنتے ہیں۔[2] 1998 کی مردم شماری مطابق اس ضلعے کی آبادي کا 93.06 فیصد آبادی مسلمان ہیں، 6.68 فیصد آبادی ہندو، 0.14 فیصد عيسائی اور 0.04 فیصد دوسرے مذہب سے تعلق رکھتے ہیں۔

گھوٹکی ضلع کی آدمشماری، 2017[3]
گھوٽڪي جي ٻھراڙي گھوٽڪي جي شھري آبادي گھوٽڪي ضلعي جي ڪل آبادي
آبادی 1242780 403538 1646318
مرد 640467 208759 849226
عورتون 602300 194751 797051
ٹين جنس 13 28 41
خاندان 223706 72964 296670

انتظامی تقسیم[ترمیم]

ضلع مندرجہ ذیل تحصیلوں (تعلقوں) میں تقسیم ہے:

آبادیاتی خصوصیات[ترمیم]

ضلع کی بیشتر آبادی مذہب اسلام کی پیرو ہے۔ 93.06 فیصد لوگ مسلمان ہیں جبکہ ہندو سب سے بڑی اقلیت ہیں جو کل آبادی کا 6.68 فیصد ہیں۔ ان کے علاوہ مسیحی، احمدی اور دیگر اقلیتیں بھی یہاں رہتی ہیں۔

اہم زبانوں میں سندھی سب سے بڑی زبان ہے جو 92.29 فیصد لوگ بولتے ہیں۔ اس کے بعد سرائیکی 3.08 فیصد کے ساتھ دوسری سب سے زیادہ بولی جانے والی زبان ہے۔ بلوچی 2.92 فیصد، ، پنجابی 0.53 فیصد پشتو 0.28 فیصد آبادی اور اردو 0.20 فیصد کی زبان ہے۔

گھوٹکی ضلع میں سفاری پارک[ترمیم]

ضلع گھوٹکی کچھ خاص سفاری پارک صوفی انور شاہ سفاری پارک اور سردار گڑھ سفاری پارک شامل ہیں جس میں علاقائی اور غیر علاقائی جانور اور پرندے پائے جاتے ہیں




مشہور شخصیات[ترمیم]

ضلع گھوٹکی سے چند ہی شخصیات سیاست کے قومی منظر نامے پر جلوہ افروز ہوئیں، جن میں سے اہم درج ذیل ہیں:

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "DISTRICT WISE CENSUS RESULTS CENSUS 2017" (PDF). www.pbscensus.gov.pk. 25 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 28 ستمبر 2020. 
  2. "Archived copy". 29 نومبر 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 23 نومبر 2014. 
  3. {http://www.pakinformation.com/population/ghotki.html}[مردہ ربط]