ولیم ای مورنر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ولیم ای مورنر
(انگریزی میں: William E. Moerner ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
WE Moerner.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 24 جون 1953 (66 سال)[1][2]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش American
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا[3][4][5]  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن قومی اکادمی برائے سائنس، امریکی اکادمی برائے سائنس و فنون  ویکی ڈیٹا پر رکن (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مقام_تدریس جامعہ سٹنفورڈ
مادر علمی کورنیل یونیورسٹی (–1978)
کورنیل یونیورسٹی (–1982)  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد ماسٹر آف سائنس،ڈاکٹریٹ  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈاکٹری مشیر Albert J. Sievers
پیشہ کیمیادان، طبیعیات دان  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل کیمیاء, applied physics, حیاتی طبیعیات
ملازمت جامعہ سٹنفورڈ، جامعہ کیلیفورنیا، سان ڈیاگو  ویکی ڈیٹا پر نوکری (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
نوبل انعام برائے کیمیا  (2014)[6][7]
فیلو آف امریکن اکیڈمی آف آرٹ اینڈ سائنسز  ویکی ڈیٹا پر وصول کردہ اعزازات (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ولیم ای مورنر(پیدائش: 1953)امریکا کے ایک کیمیادان ہیں انکی خدمات کے اعتراف طور پر2014میں انھیں کیمیاکا نوبل انعام ملا۔ اسٹیفن ہیل، ایرک بیٹزگ اور ولیم موئرنرنے مائیکرو اسکوپ کے ذریعے اشیاء کو دیکھنے کے مروجہ طریقے کو اس حد تک بہتر بنایا ہے کہ اب اس کے ذریعے خَلیات کی اندرونی ساخت کو کہیں بڑے سائز میں اور کہیں زیادہ صاف اور واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔

اس سے قبل کہا جاتا تھا کہ مائیکرو اسکوپ کی دنیا میں مزید جدت کی گنجائش نہیں ہے اور آپٹیکل مائیکرو اسکوپی ایک خاص سطح سے آگے نہیں جا سکتی ہے۔ ’’اس مرتبہ کے نوبل انعام کا تعلق اُس جدت سے ہے، جس کی وجہ سے عام مائیکرو اسکوپ ایک نینو اسکوپ میں تبدیل ہو گئی ہے

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]