پال ایل موڈرچ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پال ایل موڈرچ
(انگریزی میں: Paul Lawrence Modrich ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Paul L. Modrich 0116.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (انگریزی میں: Paul Lawrence Modrich ویکی ڈیٹا پر پیدائشی نام (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 13 جون 1946 (73 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ریٹون، نیو میکسیکو  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن قومی اکادمی برائے سائنس، امریکی اکادمی برائے سائنس و فنون  ویکی ڈیٹا پر رکن (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مقام_تدریس
مادر علمی جامعہ سٹنفورڈ (–1973)  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد پی ایچ ڈی  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ حیاتی کیمیا دان، استاد جامعہ، کیمیادان  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل ڈی این اے غیر موزوں مرمت
ملازمت ڈیوک یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر نوکری (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
نوبل انعام برائے کیمیا  (2015)[2][3]
فیلو آف امریکن اکیڈمی آف آرٹ اینڈ سائنسز  ویکی ڈیٹا پر وصول کردہ اعزازات (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر باضابطہ ویب سائٹ (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

پال لارنس موڈرچ (تاریخ پیدائش 13 جون 1964ء) ڈیوک یونیورسٹی کے شعبہ  جیمز بی ڈیوک  کے حیاتیاتی کیمیا کے  پروفیسر  اور ہوورڈ ہو میڈیکل انسٹی ٹیوٹ کے تفتیش کار ہیں۔ انہوں نے اپنی پی۔ایچ۔ ڈی کی سند اسٹانفورڈ  یونیورسٹی سے 1973ء میں حاصل کی جب کہ 1968ء میں ایم۔ آئی۔ ٹی سے ایس بی کی سند حاصل کی۔ وہ ڈی این اے  کی  مرمت  پر کی جانے والی تحقیق سے جانے جاتے ہیں۔[4]

تحقیق [ترمیم]

موڈرچ 1994ء سے ڈیوک یونیورسٹی کے شعبے  ہوورڈ ہو میڈیکل انسٹی ٹیوٹ کے تفتیش کار ہیں اور ہدایتی لڑی کی  غیر موزوں مرمت پر کام کر رہے ہیں۔ ان کی تجربہ گاہ نے دکھایا کہ کس طرح سے ڈی این اے غیر موزوں مرمت بطور نقل مدون کام کرتی ہے تاکہ  کثیر ترکیبی ڈی این اے کو غلطیوں سے پاک کیا جائے۔ میتھیو مسیلسن نے ان سے پیش تر غیر موزونیت کی پیش گوئی کردی تھی۔ موڈرچ نے ای کولی پرحیاتیاتی کیمیائی تجربات کرکے غیر موزونیت کا مطالعہ  کیا۔[5] بعد میں انہوں نے ان پروٹینز کی تلاش کی جو انسانوں میں اس غیر موزوں مرمت سے تعلق رکھتے ہیں۔   

اعزازات [ترمیم]

ان کو 2015ء کا کیمیا کا نوبل انعام عزیز سنچر  اور ٹامس لینڈل  کے ساتھ اشتراک میں دیا گیا۔[6][7]

ڈاکٹر موڈرچ امریکن اکیڈمی آف آرٹس اینڈ سائنسز  اور انسٹی ٹیوٹ آف میڈیسن اور نیشنل اکیڈمی آف سائنسز  کے بھی رکن ہیں۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Munzinger person ID: https://www.munzinger.de/search/go/document.jsp?id=00000030513 — بنام: Paul Modrich — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. http://www.nobelprize.org/nobel_prizes/chemistry/laureates/2015/
  3. https://www.nobelprize.org/nobel_prizes/about/amounts/
  4. "Paul Modrich Awarded 2015 Nobel Prize in Chemistry". HHMI. HHMI. October 7, 2015. Retrieved October 7, 2015.
  5. Su, SS; Modrich, P (July 1986). "Escherichia coli mutS-encoded protein binds to mismatched DNA base pairs.". Proceedings of the National Academy of Sciences of the United States of America 83 (14): 5057–61. PMID 3014530
  6. Broad, William J. (October 7, 2015). "Nobel Prize in Chemistry Awarded to Tomas Lindahl, Paul Modrich and Aziz Sancar for DNA Studies". نیو یارک ٹائمز۔ ISSN 0362-4331. Retrieved October 7, 2015.
  7. Staff (7 October 2015). "THE NOBEL PRIZE IN CHEMISTRY 2015 - DNA repair – providing chemical stability for life" (PDF). Nobel Prize. Retrieved 7 October 2015.