المسالک و الممالک (ابن خردادبہ)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
المسالک و الممالک (ابن خردادبہ)
(عربی میں: كِتَاب الْمَسَالِك وَالْمَمَالِك ویکی ڈیٹا پر عنوان (P1476) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مصنف ابن خردادبہ  ویکی ڈیٹا پر مصنف (P50) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اصل زبان عربی  ویکی ڈیٹا پر کام یا نام کی زبان (P407) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
موضوع جغرافیہ  ویکی ڈیٹا پر مرکزی موضوع (P921) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ اشاعت 870  ویکی ڈیٹا پر تاریخ اجرا (P577) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

المسالک الممالک یہ فن جغرافیہ پر عربی زبان میں تحریر ایک کتاب ہے جس کے مصنف نویں صدی عیسویں کے معروف جغرافیہ دان ابو القاسم عبید اللہ بن عبد اللہ ابن خردادبہ (پیدائش: 211ھ بمطابق 826ء - وفات:300ھ بمطابق 912ء) ہیں۔ ابن خردادبہ مجوسی تھے اور برامکہ کے ہاتھ پر اسلام لائے۔ ان کا اصل وطن خراسان تھا مگر انہوں نے بغداد میں مستقل سکونت اختیار کر لی تھی۔ پیشے کے اعتبار سے ابن خردادبہ ڈاک اور خفیہ اطلاعات کے محکمہ کا افسر تھا اور عباسی خلیفہ المعتمد علی اللہ کا مصاحبِ خاص اور ندیم تھا۔ انہوں نے متعدد کتابیں تحریر کیں جن میں المسالک الممالک بہت مشہو ہوئی اور عربی زبان میں فنِ جغرافیہ پر پہلی باقاعدہ کتاب ہے۔ اس کتاب میں بغداد سے مختلف ملکوں کی آمد و رفت کے راستوں اور مسافتوں کا ذکر ہے۔ اس کے علاوہ بہت سے ممالک اور اقوام کی عادات و مالوفات نیز مختلف تاریخی معلومات بھی اس کتاب میں درج ہیں۔ ابن خردادبہ کی جغرافیائی معلومات کی بنیاد بطلیموس کا جغرافیہ ہےلیکن معلومات کا ذریعہ اس کے محکمہ کی سرکاری اطلاعات، تاجروں اور سیاحوں سے اس کی ملاقات کا نتیجہ ہے۔ اس کتاب میں ہندوستان کے بری و بحری راستوں اور یہاں کی قوموں اور مختلف ذاتوں کے بارے میں بھی معلومات درج ہیں۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. جامع اردو انسائیکلوپیڈیا (جلد-3 سماجی علوم)، قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان، نئی دہلی، 2003ء، ص 71