"ریاست بھوپال" کے نسخوں کے درمیان فرق

Jump to navigation Jump to search
حجم میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ،  1 سال پہلے
1 مآخذ کو بحال کرکے 0 پر مردہ ربط کا ٹیگ لگایا گیا) #IABot (v2.0.7
(2 مآخذ کو بحال کرکے 0 پر مردہ ربط کا ٹیگ لگایا گیا) #IABot (v2.0.7)
(1 مآخذ کو بحال کرکے 0 پر مردہ ربط کا ٹیگ لگایا گیا) #IABot (v2.0.7)
نواب حمید اللہ خان کی سب سے بڑی بیٹی اور ممکنہ وارث [[پرنسز عابدہ سلطان|عابدہ سلطان]] نے تخت پر ان کا حق چھوڑ دیا اور [[1950ء]] میں [[پاکستان]] ہجرت کر گئیں۔ انہوں نے [[پاکستان]] کے محکمہ خارجہ میں بھی خدمات انجام دیں۔
 
لہذا، [[بھارت]] کی حکومت نے انہیں جانشینی سے خارج کر دیا گیا اور اس کی چھوٹی بہن بیگم ساجدہ سلطان کو خطاب عطا کر دیا۔ [[1995ء]] میں بیگم ساجدہ کے انتقال پر، خطاب ان کی سب سے بڑی بیٹی نوابزادی صالحہ سلطان بیگم کوعطا کر دیا گیا۔<ref>{{cite web | url = http://members.iinet.net.au/~royalty/ips/b/bhopal.html | title = Bhopal (Princely State) | accessdate = 2012-12-05 | publisher = World of Royalty | author = Henry Soszynski | date = 8 March 2012 | archiveurl = https://web.archive.org/web/20181225134617/http://members.iinet.net.au/~royalty/ips/b/bhopal.html%20 | archivedate = 2018-12-25 | url-status = livedead }}</ref>
 
== تصاویر ==

فہرست رہنمائی