ریاست جونا گڑھ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(ریاست جوناگڑھ سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
જુનાગઢ રિયાસત
ریاست جونا گڑھ
نوابی ریاستیں برطانوی ہند

1807–1948
پرچم نشان
پرچم نشان
Location of جونا گڑھ
سوراشٹرا میں جونا گڑھ ریاست مقام،
تمام نوابی ریاستوں کے درمیان گلابی رنگ میں
تاریخ
 -  قیام 1807
 -  جونا گڑھ کا بھارت میں انضمام 1948
رقبہ
 -  1921 8,643 کلومیٹر2 (3,337 مربع میٹر)
آبادی
 -  1921 465,493 
کثافت 53.9 /کلومیٹر2  (139.5 /مربع میٹر)
آج کا حصہ گجرات، بھارت
PD-icon.svg اس مضمون میں ایسے نسخے سے مواد شامل کیا گیا ہے جو اب دائرہ عام میں ہے: ہیو چشولم (ویکی نویس.)۔ "Junagadh-India"۔ دائرۃ المعارف بریطانیکا (اشاعت 11ویں۔)۔ کیمبرج یونیورسٹی پریس۔

1748ء میں ریاست جونا گڑھ (Junagadh State) کا قیام عمل میں آیا۔ 1807ء میں یہ برطانوی زیر حمایت ریاست بن گئی۔ 1818ء میں برطانوی ایسٹ انڈیا کمپنی نے اس کا کنٹرول سنبھال لیا لیکن سوراشرا کا علاقہ برطانوی راج کے انتظامیہ کے براہ راست تحت کبھی نہیں آیا۔ اس کی بجائے برطانیہ نے اسے ایک سو سے زیادہ نوابی ریاستوں میں تقسیم کر دیا، جو 1947ء تک قائم رہیں۔ موجودہ پرانا شہر جو انیسویں اور بیسویں صدی کے دوران ترقی پایا سابقہ نوابی ریاستوں میں سے ایک ہے۔ اس کے ریاست کے نواب کو 13 توپوں کی سلامی دی جاتی تھی ۔ تقسیم ہند،(15 اگست 1947ء)، کے وقت اس ریاست کے نواب محمد مہابت خان جی سوم نے پاکستان کے ساتھ الحاق کا اعلان کر دیا پاکستانی حکومت کی طرف سے (15 ستمبر، 1947ء) کو اس کی منظوری دے دی گئی۔ نواب کا مؤقف تھا کہ اگرچہ ریاست جوناگڑھ کا خشکی کا کوئی راستہ پاکستان سے نہیں ملتا مگر سمندر کے ذریعے یہ تعلق ممکن ہے کیونکہ اس ریاست کا کراچی سے سمند ری فاصلہ 480 کلومیٹر ہے۔ اس ریاست کے ماتحت دوریاستیں تھیں (1)منگروال (2)بابری آباد۔ ان دوریاستوں نے اپنی خود مختاری کا اعلان کر دیا جس پر نواب جونا گڑھ نے ان دونوں ریاستوں کے خلاف فوجی کارروائی شروع کردی۔ ان دونوں ریاستوں کے حکمرانوں نے حکومت ہندوستان سے مدد کی درخواست کی جو منظور کر لی گئی ہندوستانی فوجوں نے 9 نومبر، 1947ء کو ریاست جوناگڑھ پر حملہ کر دیا۔ اس دوران ایک جلاوطن گروپ نے ایک عارضی حکومت قائم کی جس کا سربراہ سمل داس گاندھی (Samaldas Gandhi) کو مقرر کیا گیا جو مہاتما گاندھی کا بھتیجاتھا۔ حکومت ہندوستان نے اسے مجاہد آزادی کا خطاب دیا موجودہ دور میں لاتعداد اسکول، کالج اور ہسپتال اس کے نام سے منسوب کیے گئے ہیں۔

حکمران[ترمیم]

  • 1735ء - 1758ء:. محمد بہادر خان جی اول
  • 1758ء - 1775ء: محمد مہابت خان جی اول
  • 1775ء - 1811ء: محمد حامد خان جی اول
  • 1811ء- 1840ء: محمد بہادر خان جی دوم
  • 1840ء - 1851ء: محمد حامد خان جی دوم
  • 1851ء - 1882ء: محمد مہابت خان جی دوم
  • 1882ء - 1892ء: محمد بہادر خان جی سوم
  • 1892ء - 1911ء: محمد رسول خان جی
  • 1911ء - 1948ء: محمد مہابت خان جی سوم
  • 1959 ء- 1989ء : محمد دلدار خان جی
  • 1990ء - محمد جہانگیر خان جی