مندرجات کا رخ کریں

نوکنڈی-ماشخیل-پنجگور روڈ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
نوکنڈی-ماشخیل-پنجگور روڈ
Route information
Length103 کلومیٹر (64 میل)
Existed2021–present
Major junctions
شمال endنوکنڈی
Major intersections
  • N-40 at Nokundi
  • N-85 at Panjgur
  • M-8 at Panjgur
جنوبی endماشخیل
Location
Countryپاکستان
Provincesبلوچستان
Major citiesنوکنڈی، ماشخیل، پنجگور
Highway system

نوکنڈی-ماشخیل-پنجگور روڈ چین پاکستان اقتصادی راہداری (CPEC) کے تحت بنیادی ڈھانچے کا ایک اہم منصوبہ ہے۔ اس سڑک کو خطے میں خاص طور پر پاکستان اور ایران کے درمیان رابطوں کو بہتر بنانے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

تخمینہ لاگت 7 ارب روپے ہے۔ مالی سال 2023-24 کے لیے پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام (PSDP) میں اس منصوبے کے لیے 2.5 بلین روپے کی اضافی رقم مختص کی گئی ہے۔ [1]

جائزہ[ترمیم]

نوکنڈی-ماشخیل-پنجگور روڈ منصوبے میں نوکنڈی سے ماش خیل کو ملانے والی 103 کلومیٹر طویل سڑک کی تعمیر شامل ہے اور ماشخیل سے پنجگور تک 200 کلومیٹر سڑک کے تفصیلی ڈیزائن پر کام جاری ہے۔ اس منصوبے کا مقصد N-40 ، N-85 اور M-8 (CPEC کے مغربی روٹ) کے درمیان رابطہ قائم کرنا ہے، جس سے چاغی-نوکنڈی سیکٹر اور گوادر کے درمیان رابطہ قائم کرنا ہے۔ یہ بلوچستان کے پورے الگ تھلگ علاقے تک رسائی فراہم کرے گا۔ [2] [3] [4]

سابق وزیر اعظم عمران خان نے 20 مئی 2021 کو منصوبے کا افتتاح کیا۔ تعمیراتی کام کے لیے ٹینڈرنگ کا عمل مکمل ہو چکا ہے اور ٹھیکیدار اب فعال طور پر مصروف ہے۔ [5] جنوری 2022 تک، CPEC مغربی روٹ کے ساتھ ساتھ کئی سڑکوں کے منصوبوں پر نمایاں پیشرفت ظاہر ہوئی، بشمول نوکنڈی-ماشخیل-پنجگور روڈ۔ منصوبے اگلے تین سالوں میں مکمل ہونے کے راستے پر ہیں۔ [6] [7]

اثرات[ترمیم]

نوکنڈی – ماشخیل – پنجگور روڈ کی ترقی سے علاقائی رابطوں میں خاطر خواہ اضافہ متوقع ہے۔ یہ سڑک منصوبہ نہ صرف ایران کے ساتھ روابط بڑھانے بلکہ گوادر میں اقتصادی کوششوں کو بھی تقویت دینے کے لیے تیار ہے، جو CPEC کے پرجوش منصوبے میں ایک اہم مرکز کے طور پر تیار ہو رہا ہے۔ [8] [9] [10] گوادر اور شمالی علاقہ جات کے درمیان رابطے کو مضبوط بنانے کے لیے جنوبی بلوچستان میں سڑکوں کے بنیادی ڈھانچے کو بڑھانا حکومت کے لیے ایک اہم ہدف ہے۔ [11] [12]

مزید دیکھیے[ترمیم]

ڈیرہ اسماعیل خان ژوب موٹروے

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://cpec.gov.pk/project-details/126
  2. https://cpec.gov.pk/project-details/126
  3. "103km Nokundi-Mashkhel road 'to improve access to Iran'"۔ May 23, 2021۔ 29 اکتوبر 2023 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 نومبر 2023 
  4. "New CPEC road to improve access to Iran: Asim Bajwa"۔ The Express Tribune۔ May 23, 2021 
  5. https://cpec.gov.pk/project-details/126
  6. "Work on various road projects of CPEC Western route in full swing"۔ The Nation۔ January 25, 2022 
  7. Najam ul Hassan (December 22, 2021)۔ "Work on CPEC Western Route in full swing" 
  8. https://cpec.gov.pk/project-details/126
  9. "103km Nokundi-Mashkhel road 'to improve access to Iran'"۔ May 23, 2021۔ 29 اکتوبر 2023 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 نومبر 2023 
  10. "New CPEC road to improve access to Iran: Asim Bajwa"۔ The Express Tribune۔ May 23, 2021 
  11. "Work on various road projects of CPEC Western route in full swing"۔ The Nation۔ January 25, 2022 
  12. Najam ul Hassan (December 22, 2021)۔ "Work on CPEC Western Route in full swing"