ابن طفیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
مسلم عالم
أبو بكر محمد بن عبد الملك بن محمد بن طفيل القيسي الأندلسي
معروفیت ابن طفیل
پیدائش 1105
غرناطہ, اندلوسيا
وفات 1185 (عمر 79–80)
مراکش
علاقہ اندلس
مذہب فقہ مالکی, اہل سنت
شعبۂ عمل ابتدائی اسلامی فلسفہ , ادب, علم الكلام, طب اسلامی
افکار و نظریات پہلا فلسفیانہ ناول لکھا
کارہائے نمایاں حی بن یقظان
(Philosophus Autodidactus)
مؤثر شخصیات افلاطون, ارسطو, فارابی, ابن سینا, امام غزالی, اشعری, تصوف, ابن تومرت, ابن باجہ, ابو يعقوب يوسف‎, محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم
متاثر شخصیات

ابن رشد, ابو اسحق البطروجی, ابن النفیس, ایڈورڈ پوکوک, رابرٹ بوائل, تھامس ہوبس,

جان لوک, ولیم مولینیو, ڈیوڈ ہیوم, کاٹن ماتھر, جارج برکلے, سپینوزا, گوٹفریڈ ویلہم لائبنیز, سائمن اوکلے, دانیل دفو, جان والیس, کریستیان هویگنس, جارج کیتھ, رابرٹ برکلے, دوست مذہبی جمعیت,سیموئیل ہارٹلیب, آئزک نیوٹن, کانٹ, جین جیکس روسو, والٹیئر, کارل مارکس, رڈیارڈ کپلنگ, ادگار رایس باروز

پیدائش؛1100ء وفات؛1178ء

فلسفی، طبیب، غرناطہ کے نواح میں پیدا ہوا۔ تحصیل علم کے بعد طبابت کا پیشہ اختیار کیا۔ 1163ء طنجہ کے حاکم ابویعقوب بن یوسف بن عبدالمومن کا طبیب خاص مقرر ہوا۔ بعد ازاں قاضی کے عہدے پر فائز ہوا اور اس کے کچھ عرصے بعد وزیر بنا۔ ابن رشد نے اسی کی سفارش پر دربار تک رسائی حاصل کی۔ مراکش میں وفات پائی۔ طبیعیات، مابعدالطبعیات اور فلسفے پر متعدد کتب تصنیف کیں اب وہ ناپید ہیں۔ صرف ایک کتاب اسرار الحکمہ المشرقیہ زمانے کی دست برد سے محفوظ رہی۔ 1671ء میں ایڈورڈپوکوک نے اس کا لاطینی ترجمہ کیا۔ فرانسیسی ، جرمن ، انگریزی ، ہسپانوی ، ولندیزی ، اور اردو میں بھی اس کے تراجم ہو چکے ہیں۔