بحیرہ مردار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
بحیرہ مردار
Dead Sea
بحیرہ مردارDead Sea -
متناسق 31°30′N 35°30′E / 31.5°N 35.5°E / 31.5; 35.5متناسقات: 31°30′N 35°30′E / 31.5°N 35.5°E / 31.5; 35.5
داخلی بہاؤ اولٰی دریائے اردن
خارجی بہاو اولٰی کوئی نہیں
طاس رقبہ 41,650 km2 (16,080 sq mi)
چلمچی ملک اردن
اسرائیل
شام
لبنان
مصر
لمبائیِ کبیر 55 km (34 mi)[1]
چوڑائیِ کبیر 18 km (11 mi)[1]
رقبہِ سطح 810 km2 (310 sq mi)
شمالی طاس
اوسط گہرائی 118 m (387 ft)[2]
گہرائیِ کبیر 377 m (1,237 ft)
پانی کا حجم 147 km3 (35 cu mi)[2]
ساحل کی لمبائی1 135 km (84 mi)
سطح کی بلندی −427 m (−1,401 ft)[3]
حوالہ جات [2][3]
1 "ساحل کی لمبائی" کی صحیح تعریف موجود نہیں۔
سطح سمندر سے سب سے نچلا مقام
بحیرہ مردار

بحیرہ مردار (Dead Sea) (عربی: البحر الميت, عبرانی: יָם הַ‏‏מֶּ‏‏לַ‏ח) دنیاکی سب سے نمکین جھیل جس کے مغرب میں مغربی کنارہ اور اسرائیل اور مشرق میں اردن واقع ہے۔ یہ زمین پر سطح سمندر سے سب سے نچلا مقام ہے جو 420 میٹر (1378 فٹ) نیچے واقع ہے۔ علاوہ ازیں یہ دنیا کی سب سے گہری نمکین پانی کی جھیل بھی ہے، جس کی گہرائی 330 میٹر (1083 فٹ) ہے۔ یہ جبوتی کی جھیل اسال کے بعد دنیا کا نمکین ترین ذخیرۂ آب ہے۔ 30 فیصد شوریدگی کے ساتھ یہ سمندر سے 8 اعشاریہ 6 گنا زیادہ نمکین ہے۔ [4] اسرائیلی ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ بحیرہ روم سے 9 گنا زیادہ نمکین ہے جس کی شوریدگی 3 اعشاریہ 5 فیصد ہے جبکہ مذکورہ ماہرین بحیرہ مردار کی شوریدگی کو 31 اعشاریہ 5 فیصد قرار دیتے ہیں۔ بحیرہ مردار 67 کلومیٹر (42 میل) طویل اور زیادہ سے زیادہ 18 کلومیٹر (11 میل) عریض ہے۔

بحیرہ مردار ہزاروں سالوں سے بحیرہ روم کے گرد بسنے والے سیاحوں کے لیے انتہائی پرکشش مقام ہے۔ بہت زیادہ شوریدگی کے باعث اس میں کوئی آبی حیوانات اور پودے نہیں پائے جاتے جبکہ اس میں کوئی انسان ڈوب بھی نہیں سکتا۔ اسے بحیرہ نمک بھی کہا جاتا ہے کیونکہ اس کا پانی نمکین ہے۔

بحیرہ مردار, اردن

آب و ہوا[ترمیم]

بحیرہ مردار کا موسم
مہینہ جنوری فروری مارچ اپریل مئی جون جولائی اگست ستمبر اکتوبر نومبر دسمبر سال
بلند ترین سینٹی گریڈ (فارنہائیٹ) 26.4
(79.5)
30.4
(86.7)
33.8
(92.8)
42.5
(108.5)
45.0
(113)
46.4
(115.5)
47.0
(116.6)
44.5
(112.1)
43.6
(110.5)
40.0
(104)
35.0
(95)
28.5
(83.3)
47.0
(116.6)
اوسطاً بلند سینٹی گریڈ (فارنہائیٹ) 20.5
(68.9)
21.7
(71.1)
24.8
(76.6)
29.9
(85.8)
34.1
(93.4)
37.6
(99.7)
39.7
(103.5)
39.0
(102.2)
36.5
(97.7)
32.4
(90.3)
26.9
(80.4)
21.7
(71.1)
30.4
(86.7)
اوسطاً کم سینٹی گریڈ (فارنہائیٹ) 12.7
(54.9)
13.7
(56.7)
16.7
(62.1)
20.9
(69.6)
24.7
(76.5)
27.6
(81.7)
29.6
(85.3)
29.9
(85.8)
28.3
(82.9)
24.7
(76.5)
19.3
(66.7)
14.1
(57.4)
21.9
(71.4)
کم ترین سینٹی گریڈ (فارنہائیٹ) 5.4
(41.7)
6.0
(42.8)
8.0
(46.4)
11.5
(52.7)
19.0
(66.2)
23.0
(73.4)
26.0
(78.8)
26.8
(80.2)
24.2
(75.6)
17.0
(62.6)
9.8
(49.6)
6.0
(42.8)
5.4
(41.7)
عمل ترسیب م م (انچ) 7.8
(0.307)
9.0
(0.354)
7.6
(0.299)
4.3
(0.169)
0.2
(0.008)
0.0
(0)
0.0
(0)
0.0
(0)
0.0
(0)
1.2
(0.047)
3.5
(0.138)
8.3
(0.327)
41.9
(1.65)
نمی 41 38 33 27 24 23 24 27 31 33 36 41 31.5
اوسطاً یومیہ ترسیب 3.3 3.5 2.5 1.3 0.2 0.0 0.0 0.0 0.0 0.4 1.6 2.8 15.6
ماخذ: Israel Meteorological Service[5]

قدرتی تاریخ[ترمیم]

بحیرہ مردار کے کم ارتفاع کے بارے میں دو مخالفانہ مفروضے ہیں۔ پرانا مفروضہ یہ ہے کہ یہ ایک حقیقی دراڑ منطقہ میں واقع ہے جو کہ درحقیقت بحیرہ احمر یا عظیم وادئ شق کا حصہ تھا۔ ایک نسبتا نیا مفروضہ یہ ہے کہ بحیرہ مردار کا طاس بحیرہ مردار کے کنارے "مرحلہ-زائد" کے انفصال کا نتیجہ ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ 1.0 1.1 "Virtual Israel Experience: The Dead Sea". Jewish Virtual Library. http://www.jewishvirtuallibrary.org/jsource/vie/Deadsea.html۔ اخذ کردہ بتاریخ 21 January 2013. 
  2. ^ 2.0 2.1 2.2 Dead Sea Data Summary 2012. Water Authority of Israel.
  3. ^ خطا در حوالہ: غلط <ref> ٹیگ؛ حوالہ بنام ISRAMAR کے لیے کوئی متن فراہم نہیں کیا گیا
  4. ^ Goetz, P.W. (ed.) The New Encyclopaedia Britannica (15th ed.). Vol. 3, p. 937. Chicago, 1986
  5. ^ "Averages and Records for several places in Israel". Israel Meteorological Service. June 2011. http://ims.gov.il/IMS/CLIMATE/LongTermInfo.