جنگ صفین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
جنگ صفین
حصہ First Fitna
Balami - Tarikhnama - Battle of Siffin (cropped).jpg
تاریخ جولائی 26 سے جولائی 28، 657 عیسوی تک
مقام صفین، شام
نتیجہ غیر فیصلہ کن
دوسری بڑی اسلامی خانہ جنگی
شریک جنگ
Black flag.svg خلافت راشدہ بنو امیہ
سپہ سالار و رہنما
Black flag.svg علی ابن ابی طالب
Black flag.svg حسن ابن علی
Black flag.svg Malik al-Ashtar
Black flag.svg عبداللہ بن عباس
Black flag.svg عمار بن یاسر
Black flag.svg خزیمہ بن ثابت
Black flag.svg Hashim ibn Utbah
معاویہ بن ابو سفیان
مروان بن حکم
عمرو ابن العاص
Walid ibn Uqba
طاقت
130,000 135,000
نقصانات
25,000 45,000

جنگ صفین37 ہجری جولائی 657 عیسوی میں خلیفہ چہارم علی بن ابی طالب اور شام کے گورنر امیر معاویہ بن ابی سفیان کے درمیان ہوئی۔ یہ جنگ دریائے فرات کے کنارے اس علاقے میں ہوئی جو اب ملک شام میں شامل ہے اور الرقہ (اردو میں رقہ) کہلاتا ہے۔ اس جنگ میں شامی افوج کے 45000 اور خلیفہ کی افواج کے 25000 افراد مارے گئے[حوالہ درکار]۔ جن میں سے بیشتر اصحاب رسول تھے۔ اس جنگ کی پیشینگوئی محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے کی تھی اور عمار بن یاسر کو بتایا تھا کہ اے عمار تجھ کو ایک باغی گروہ شہید کرے گا۔ [1]خزیمہ بن ثابت انصاری بھی اسی جنگ میں شہید ہوئے۔ یہ دونوں اصحاب علی کی فوج میں شامل تھے۔ اسی جنگ میں اویس قرنی بھی علی کرم اللہ وجہہ کی حمایت میں لڑتے ہوئے شہید ہوئے۔ علی کی فوج کے امیر مالک اشتر اور دوسری طرف عمرو ابن العاص تھے۔

حوالہ جات

  1. ^ صحيح بخاری، کتاب الجھاد والسير، حدیث ؟، جلد نمبر ؟