شجرۂ نسب ابوبکر صدیق

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

شجرۂ نسب[ترمیم]

اسماء بنت بارقیہمرہ بن کعبہند بنت سرير ابن طحالبہ
يقظہ بن مرہتیم بن مرہکلاب بن مرہ
صائد ن تيم
کعب ابن سعد
عمر ابن کعب
عامر بن عمروساخر ابن عمر
ہند بنت نقيض'عثمان ابن قحافہ ابن'عامرسلمی ام الخیر
ام فروہ
قریباابوبکر صدیق Rashidun Caliph Abu Bakr as-Șiddīq (Abdullah ibn Abi Quhafa) - أبو بكر الصديق عبد الله بن عثمان التيمي القرشي أول الخلفاء الراشدين.svgمعتقمايطيق[1]قحافہ
ام عمير

خاندان[ترمیم]

ازواج بچے پوتے پوتیاں
نواسے نواسیاں
مزید آگے نسل
قتيلہ بنت عبد العزى ابن عبد ابن اسعد (طلاق) اسماء بنت ابی بکر عبد اللہ ابن زبیر (مقتول، قاتل حجاج بن یوسف)
عروہ بن زبیر
یحیی ابن عابدین عبد اللہ
ہشام بن عروہ
عبد اللہ بن ابی بکر Abdulllah married to 'Atika bint Zayd, but had no issue
ام رومان (یہ بنی قینقاع سے تھیں) عبد الرحمن بن ابی بکر ابو عتیق محمد عبد الرحمان کئی صدیقی نسلوں کے جد ہیں، العتیق نسل آج کل: کویت، سعودی عرب، یمن، عراق میں جبکہ صدیقی اور قریشی نسل جنوبی،وسطی ایشیامیں ہیں۔ قرن افریقہ میں یہ سب شيخال یا فقیہ عمر نسل کے طور پر جانے جاتے ہیں یہ صومالیہ، ایتھوپیا اور کینیا میں ہیں۔
عائشہ بنت ابی بکر عائشہ کی شادی نبی محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم سے ہوئی۔
اسماء بنت عمیس ابن معد ابن تیم (سابقہ بیوی جعفر ابن ابی طالب، بعد میں علی ابن ابی طالب سے شادی کی بعد وفات ابو بکر صدیق۔) محمد بن ابی بکر قاسم بن محمد بن ابی بکر ام فروہ بنت قاسم
جعفر الصادق بیٹے ام فروہ)
ابن جوزی (قاسم بن محمد بن ابی بکر کی اولاد سے )
ابوبکر صدیق (قبیلہ بنو خزرج) ام کلثوم بنت ابی بکر[2] By طلحہ بن عبید اللہ، زکریا، یوسف (جو بچپن میں انتقال کر گئے) اور عائشہ [3]
By Abdulrahman ibn Abdullah al-Makhzumi, Ibrahim al-Ahwal, Musa, Umm Humayd and Umm Uthman.[3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Tarikh ar-Rusul wa al-Muluk 3/ 425
  2. Tartib wa Tahthib Kitab al-Bidayah wan-Nihayah by ابن کثیر, published by Dar al-Wathan publications, Riyadh مملکت سعودی عرب، 1422 Anno hegiræ (2002) تکمیل شدہ از۔ محمد بن شامل السلمی، صفحہ 16، ISBN 9960-28-117-5.
  3. ^ ا ب Muhammad ابن سعد البغدادی, Tabaqat al-Kubra, vol. 8. Translation by Bewley, A. (1995). The Women of Medina, p. 298. London: Ta-Ha Publishers.