2015ء میں زمبابوے کرکٹ ٹیم پاکستان میں

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
2015 پاکستان بمقابلہ زمبابوے
Pakistan vs Zimbabwe
Flag of Pakistan.svg
پاکستان
Flag of Zimbabwe.svg
زمبابوے
تاریخ 19 مئی 2015 – 31 مئی 2015
کپتان شاہد آفریدی (ٹی-20)
اظہر علی (ODIs)
Elton Chigumbura (ٹی-20 اور پہلا ایک روزہ)
Hamilton Masakadza (دوسرا اور تیسرا ایک روزہ)
ایک روزہ بین الاقوامی سیریز
نتیجہ پاکستان 3 سے یہ دور جیت گيا 2–0
زیادہ دوڑیں اظہر علی (227) Chamu Chibhabha (138)
زیادہ ووکٹیں وہاب ریاض (5) سکندر رضا بٹ & Graeme Cremer (3)
بہترین کھلاڑی اظہر علی (پاک)
ٹی-20 بین الاقوامی سیریز
نتیجہ پاکستان 2 مقابلوں کا دور 2–0 سے جیت گيا
زیادہ دوڑیں مختار احمد (145) Hamilton Masakadza (82)
زیادہ ووکٹیں محمد سمیع (4) سین ولیم (3)
سیریز بہترین کھلاڑی مختار احمد (پاک)

زمبابوے قومی کرکٹ ٹیم نے 19 سے 31 مئی 2015ء تک پاکستان کا دورہ کیا[1] اس دورے کے دوران میں 3 ایک روزہ میچ اور 2 ٹوئنٹی/20 ہوئے، تمام مقابلے لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں منعقد ہوئے۔ 2009ء میں سری لنکن کرکٹ ٹیم پر حملہ کے بعد یہ کسی ٹیسٹ کرکٹ کھیلنے کی اہلیت رکھنے والی قومی ٹیم کا پہلا دورہ پاکستان تھا۔[1] اس میں دونوں ٹی-20 اور پہلے دونوں ایک روزہ پاکستان نے جیت کر دورہ اپنے نام کیا، تیسرے ایک روزہ میں بارش ہوئی، جس وجہ سے وہ بلا نتیجہ رہا۔

کھلاڑی[ترمیم]

ایک روزہ ٹی-20
 پاکستان[2]  زمبابوے[3]  پاکستان[4]  زمبابوے[3]

ٹی-20 سلسلہ[ترمیم]

پہلا ٹی-20[ترمیم]

22 مئی 2015
19:00 (د/ر)
اسکور کارڈ
زمبابوے 
172/6 (20 اوور)
بمقابلہ
 پاکستان
173/5 (19.3 اوور)
Elton Chigumbura 54 (35)
محمد سمیع 3/36 (4 اوور)
مختار احمد 83 (45)
Graeme Cremer 2/28 (4 اوور)
پاکستان 5 ووکٹوں سے جیت گيا
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: احسن رضا (پاکستان) اور Shozab Raza (پاکستان)
مرد میدان: مختار احمد (پاکستان)
  • زمبابوے نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کی
  • Richmond Mutumbami (زمبابوے) made his T20I debut.

ٹاس جیت کر زمبابوے کی ٹیم نے پہلے بلے بازی کی اور6 ووکٹوں کے نقصان پر 20 اوور میں 172 کا ہدف پاکستانی ٹیم کو دیا، زمبابوے کی طرف سے مازا کادسا اور سبانڈا نے اچھی شراکت داری قائم کی، ماڑا کادسا نے 27 گیندوں پر 43 اور کپتان چگمبورا نے 35 گیندوں پر 54 دوڑیں بنائیں۔ پاکستانی کھلاڑیوں نے پہلے تو خوب مقابلہ کیا مختار احمد اور احمد شہزاد نے ابتدا کی اور 142 تک چلے گئے، اس کے بعد محمد حفیظ، عمر اکمل، شعیب ملک آؤٹ ہوئے۔ یہ پاکستان اور زمبابوے کے درمیان میں اب تک کا چھٹا ٹی-20 مقابلہ تھا، پاکستان اب تک کوئی مقابلہ زمبابوے سے نہیں ہارا۔ مرد میدان کا اعزاز مختار احمد کو ملا جنہوں نے صرف 45 گیندوں پر 83 دوڑیں بنائیں اور جیت میں کلیدی کردار ادا کیا۔[5]

دوسرا ٹی-20[ترمیم]

24 مئی 2015
19:00 (د/ر)
اسکور کارڈ
پاکستان 
175/3 (20 اوورs)
بمقابلہ
 زمبابوے
176/8 (19.4 اوور)
سین ویلیم 58* (32)
شعیب ملک 1/23 (4 اوور)
مختار احمد 62 (40)
Christopher Mpofu 2/25 (4 اوور)
پاکستان 2 ووکٹوں سے جیت گيا
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: Ahmed Shahab (پاکستان) اور احسن رضا (پاکستان)
  • زمبابوے نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کی

ٹاس جیت کر زمبابوے کی ٹیم نے پہلے بلے بازی کی اور3 ووکٹوں کے نقصان پر 20 اوور میں 175 کا ہدف پاکستانی ٹیم کو دیا۔ پہلے میچ کی طرح اس میں بھی زمبابوے نے تیز رفتاری سے دوڑیں بنائیں اور اچھی بلے بازی کی، پاکستان نے یہ ہدف 8 ووکٹوں کے نقصان پر 19.4 اوور میں مکمل کر لیا۔ اور دوسرا ٹی-20 جیت کر ٹی-20 دور کو اپنے نام کر لیا، ٹرافی دینے کے لیے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا آئے ہوئے تھے۔ پاکستان کی صرف سے مختار احمد نے سب سے زیادہ 63 دوڑین بنائیں۔ جنہوں نے پہلے مقابلے میں بھی 83 دوڑیں بنائیں تھیں۔[6]

ایک روزہ سلسلہ[ترمیم]

پہلا ایک روزہ[ترمیم]

26 مئی 2015
14:00 (د/ر)
اسکور کارڈ
پاکستان 
375/3 (50 اوور)
بمقابلہ
 زمبابوے
334/5 (50 اوور)
شعیب ملک 112 (76)
Prosper Utseya 2/63 (10 اوور)
Elton Chigumbura 117 (95)
وہاب ریاض 3/47 (10 اوور)
پاکستان 41 دوڑوں سے جیت گيا
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور Russell Tiffin (زمبابوے)
  • پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کی
  • Elton Chigumbura (زمبابوے) نے پہلی ایک روزہ سینچری بنائی۔[7]

دوسرا ایک روزہ[ترمیم]

29 مئی 2015
14:00 (د/ر)
اسکور کارڈ
پاکستان 
268/7 (50 overs)
بمقابلہ
 زمبابوے
269/4 (47.2 اوور)
سکندر رضا بٹ 100* (84)
یاسر شاہ 2/40 (10 اوور)
اظہر علی 102 (104)
Graeme Cremer 2/52 (10 اوور)
پاکستان 6 ووکٹوں سے جیت گیا
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: Shozab Raza (پاک) اور Russell Tiffin (زمب)
مرد میدان: اظہر علی (پاک)
  • پاکستان نے ٹاس جیت کر۔ زمبابوے کو بلے بازی کی دعوت دی۔

تیسرا ایک روزہ[ترمیم]

31 مئی 2015
14:00 (د/ر)
اسکور کارڈ
پاکستان 
296/9 (50 اوور)
بمقابلہ
 زمبابوے
68/0 (9 اوور)
محمد حفیظ 80 (80)
سکندر رضا بٹ 3/59 (10 اوور)
بلا نتیجہ
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: احسن رضا (پاک) اور Russell Tiffin (زم)
  • پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کی
  • زمبابوے کے 8 اوور کھیلنے کے بعد تیز آندھی کی وجہ سے بتیاں گل ہو گئیں۔ دوبارہ کھیل شروع کرنے سے 4 اوور کم کیے گئے تھے۔ مگر ایک اوور بعد بارش ہونے لگی، جس سے مقابلہ بلا نتیجہ ختم ہو گیا۔[8]
  • بابر اعظم (پاک) اور Roy Kaia (زم) made their ODI debuts۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "زمبابوے کرکٹ ٹیم پاکستان میں"۔ ESPNCricinfo۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 اپریل 2015۔
  2. "Malik, Sami return to Pakistan ODI squad"۔ ESPNcricinfo۔ 25 مئی 2015۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مئی 2015۔
  3. ^ ا ب "Uncapped Roy Kaia in Zimbabwe squad"۔ ESPNcricinfo۔ 12 مئی 2015۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مئی 2015۔
  4. "Sami, Malik in Pakistan's revamped T20 squad"۔ ESPNcricinfo۔ 19 مئی 2015۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 19 مئی 2015۔
  5. http://www.bbc.com/urdu/sport/2015/05/150522_pak_zimbabwe_ist_t20_analysis_zs بی بی سی اردو؛23 مئی 2015ء، ایک آسان جیت جو مشکل بن گئی
  6. http://www.bbc.com/urdu/sport/2015/05/150524_pak_zim_t20_second_fz بی سی سی اردو، 25 مئی 2015
  7. "Malik ton, Riaz aggression give Pakistan big win"۔ ESPNCricinfo۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 مئی 2015۔
  8. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ ThirdODI نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔

بیرونی روابط[ترمیم]

سانچہ:ابتدائی ترتیب:2015ء میں زمبابوے کرکٹ ٹیم پاکستان میں