محمد اظہر الدین کی بین الاقوامی کرکٹ سنچریوں کی فہرست

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search


محمد اظہر الدین سابق بین الاقوامی کرکٹر ہیں جنہوں نے بھارت قومی کرکٹ ٹیم کی نمائندگی کی اور کپتانی کی۔ انہیں بھارتی کرکٹ سے ابھرنے والے عظیم بلے بازوں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے، [1] وہ اپنے "کلائی والے اسٹروک پلے" کے لیے مشہور تھے۔ [2] دائیں ہاتھ کے مڈل آرڈر بلے باز اظہر الدین نے 29 بین الاقوامی سنچریاں بنائیں، جب بھارتی کرکٹ کنٹرول بورڈ نے ان پر 2000 میں میچ فکسنگ کا الزام لگایا جس نے ان کے کرکٹ کیریئر کا اختتام کیا۔ [3] 15 سال پر محیط کیریئر میں انہوں نے 99 ٹیسٹ اور 334 ایک روزہ بین الاقوامی میچ کھیلے جس میں انہوں نے بالترتیب 6،215 اور 9،378 رنز بنائے۔ [4] اظہر الدین ون ڈے کرکٹ میں 9000 رنز بنانے والے پہلے کرکٹر تھے اور اکتوبر 2000ء تک سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی رہے۔ [ا] ویزڈن نے 1991ء میں ان کے پانچ کرکٹرز آف دی ایئر کے طور پر شامل ہونے سے پہلے انہیں "انڈین کرکٹ کرکٹر آف دی ایئر" قرار دیا تھا۔ [7][8]

اظہر الدین نے اپنے ٹیسٹ اور ون ڈے کا ڈیبیو انگلستان قومی کرکٹ ٹیم کے 1984-85ء کے دورہ بھارت کے دوران کیا۔ ٹیسٹ میں انہوں نے ویسٹ انڈیز اور زمبابوے کے علاوہ تمام ممالک کے خلاف سنچریاں بنائیں۔ [ب] اپنے پہلے ٹیسٹ میں اظہر الدین نے 110 رنز بنائے، اس طرح وہ ڈیبیو میں سنچری بنانے والے آٹھویں بھارتی کھلاڑی بن گئے۔ [10] سیریز کے بعد کے میچوں میں 105 اور 122 کے اسکور کے ساتھ وہ اپنے پہلے تین ٹیسٹ میں سے ہر ایک میں سنچری بنانے والے پہلے کھلاڑی بن گئے۔ [1][4] اظہر الدین نے ٹیسٹ کرکٹ میں کسی بھارتی کی تیز ترین سنچری کے لیے کپیل دیو کے ریکارڈ کی برابری کی، جب اس نے 74 گیندوں پر جنوبی افریقا کے خلاف 1996ء میں سنچری بنائی۔ [11] ان کا سب سے زیادہ اسکور 199 سری لنکا کے خلاف کانپور میں 1986ء میں تھا۔ اظہر الدین کی 22 ٹیسٹ سنچریاں پندرہ کرکٹ گراؤنڈز پر بنائی گئیں جن میں سے نو بھارت سے باہر تھیں۔ [12] انہوں نے مارچ 2000ء میں جنوبی افریقا کے خلاف اپنی آخری ٹیسٹ اننگز میں سنچری اسکور کی۔ [13] اکتوبر 2021ء تک وہ ٹیسٹ کرکٹ میں ہمہ وقت سنچری بنانے والوں میں اکتیسواں اور بھارت کے لیے مساوی فہرست میں چھٹے نمبر پر تھے۔ [پ] [15]

اظہرالدین کی پہلی ون ڈے سنچری ڈیبیو کے دو سال بعد آئی جب انہوں نے سری لنکا کے خلاف 108 رنز بنائے۔ 1987ء میں انہوں نے نیوزی لینڈ کے خلاف موتی باغ اسٹیڈیم، وڈودرا میں 62 گیندوں پر سنچری سکور کی، [ت] اس کارکردگی نے بھارت کی جیت کو یقینی بنایا اور انہیں مین آف دی میچ بنایا گیا۔ [17] ان کا سب سے زیادہ اسکور 153 ناٹ آؤٹ زمبابوے کے خلاف ان کے کیریئر کے آخری حصے میں بنا، جس کے دوران وہ اجے جڈیجہ کے ساتھ 275 کی ریکارڈ شراکت میں شامل تھے۔ [ٹ] اظہر الدین نے اپنے ون ڈے کیریئر کے دوران سات مرتبہ 90 اور 99 کے درمیان اسکور بنائے۔ [19]

کلید[ترمیم]

محمد اظہر الدین نے ایڈن گارڈنز میں سنچری بنائی اس کے بعد انہوں نے مزید چار سنچریاں اسی مقام پر سکور کیں
کلید
علامت مطلب
* ناٹ آؤٹ رہے
مین آف دی میچ
کرکٹ ٹیم کی کپتانی کی
گیندیں گیندوں کا سامنا کیا
پوزیشن بیٹنگ آرڈر میں پوزیشن
اننگز میچ کی اننگز
ٹیسٹ اس سیریز میں کھیلے گئے ٹیسٹ میچوں کی تعداد
گ/ب/غ مقام گھر (ملک) تھا، باہر یا غیر جانبدار
تاریخ میچ منعقد ہونے کی تاریخ، یا ٹیسٹ میچوں کے لیے میچ کی تاریخ شروع ہونے کی
ہارا ٹیم نے میچ ہارا
جیتا ملک میں میچ جیتا
ڈرا میچ ڈرا ہوا

ٹیسٹ سنچریاں[ترمیم]

ٹیسٹ سنچریاں[20]
شمار اسکور مخالف پوزیشن اننگ ٹیسٹ مقام گ/ب/غ تاریخ نتیجہ
1 &10000000000001101000000 110  انگلستان 5 1 3/5 ایڈن گارڈنز، کولکاتا[ث] گھر 31 دسمبر 1984 ڈرا[22]
2 &10000000000001050000000 105  انگلستان 5 3 4/5 ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم، چینائی[ج] گھر 13 جنوری 1985 ہارا[24]
3 &10000000000001220000000 122  انگلستان 3 1 5/5 گرین پارک اسٹیڈیم، کانپور گھر 31 جنوری 1985 ڈرا[25]
4 &10000000000001990000000 199  سری لنکا 5 2 1/3 گرین پارک اسٹیڈیم، کانپور گھر 17 دسمبر 1986 ڈرا[26]
5 &10000000000001410000000 141  پاکستان 5 1 2/5 ایڈن گارڈنز، کولکاتا[ث] گھر 11 فروری 1987 ڈرا[27]
6 &10000000000001100000000 110  پاکستان 5 1 3/5 سوائی مان سنگھ اسٹیڈیم، جے پور گھر 21 فروری 1987 ڈرا[28]
7 &10000000000001091000000 109  پاکستان 4 3 2/4 اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد باہر 23 نومبر 1989 ڈرا[29]
8 &10000000000001920000000 192  نیوزی لینڈ 5 2 3/3 ایڈن پارک، آکلینڈ باہر 22 فروری 1990 ڈرا[30]
9 &10000000000001210000000 121  انگلستان 5 2 1/3 لارڈز کرکٹ گراؤنڈ، لندن باہر 26 جولائی 1990 ہارا[31]
10 &10000000000001790000000 179  انگلستان 5 2 2/3 اولڈ ٹریفرڈ کرکٹ گراؤنڈ، مانچسٹر باہر 9 اگست 1990 ڈرا[32]
11 &10000000000001060000000 106  آسٹریلیا 6 4 4/5 ایڈیلیڈ اوول، ایڈیلیڈ باہر 25 جنوری 1992 ہارا[33]
12 &10000000000001820000000 182  انگلستان 5 1 1/3 ایڈن گارڈنز، کولکاتا[ث] گھر 29 جنوری 1993 جیتا[34]
13 &10000000000001080000000 108  سری لنکا 5 1 2/3 ایم چناسوامی اسٹیڈیم، بنگلور گھر 26 جنوری 1994 جیتا[35]
14 &10000000000001520000000 152  سری لنکا 5 2 3/3 سردار پٹیل اسٹیڈیم، احمد آباد (بھارت) گھر 8 فروری 1994 جیتا[36]
15 &10000000000001090000000 109  جنوبی افریقا 5 2 2/3 ایڈن گارڈنز، کولکاتا[ث] گھر 27 نومبر 1996 ہارا[37]
16 &10000000000001631000000 163*  جنوبی افریقا 6 3 3/3 گرین پارک اسٹیڈیم، کانپور گھر 8 دسمبر 1996 جیتا[38]
17 &10000000000001150000000 115  جنوبی افریقا 7 2 2/3 نیولینڈز کرکٹ گراؤنڈ، کیپ ٹاؤن باہر 2 جنوری 1997 ہارا[39]
18 &10000000000001260000000 126  سری لنکا 5 1 1/2 آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو باہر 2 اگست 1997 ڈرا[40]
19 &10000000000001081000000 108*  سری لنکا 5 4 2/2 سنہالی اسپورٹس کلب گراؤنڈ، کولمبو باہر 9 اگست 1997 ڈرا[41]
20 &10000000000001630000000 163*  آسٹریلیا 5 2 2/3 ایڈن گارڈنز، کولکاتا[ث] گھر 18 مارچ 1998 جیتا[42]
21 &10000000000001031000000 103*  نیوزی لینڈ 6 1 2/2 بیسن ریزرو، ویلنگٹن باہر 26 دسمبر 1998 ہارا[43]
22 &10000000000001020000000 102  جنوبی افریقا 5 3 2/2 ایم چناسوامی اسٹیڈیم، بنگلور گھر 2 مارچ 2000 ہارا[44]

ایک روزہ بین الاقوامی سنچریاں[ترمیم]

ایک روزہ بین الاقوامی سنچریاں[45]
شمار اسکور گیند مخالف پوزیشن اننگ S/R مقام گ/ب/غ تاریخ نتیجہ
1 &10000000000001081000000 108* 94  سری لنکا 3 1 114.89 وانکھیڈے اسٹیڈیم، ممبئی[چ] گھر 17 جنوری 1987 جیتا[47]
2 &10000000000001081000000 108* 65  نیوزی لینڈ 6 2 166.15 موتی باغ اسٹیڈیم، وڈودرا گھر 17 دسمبر 1988 جیتا[17]
3 &10000000000001080000000 108 116  سری لنکا 4 1 93.10 شارجہ کرکٹ اسٹیڈیم، شارجہ (شہر) غیر جانبدار 25 اپریل 1990 ہارا[48]
4 &10000000000001111000000 111* 117  سری لنکا 5 2 94.87 آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو باہر 17 اگست 1997 ہارا[49]
5 &10000000000001000000000 100 111  پاکستان 3 1 90.09 شیر بنگلہ نیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، ڈھاکہ غیر جانبدار 11 جنوری 1998 جیتا[50]
6 &10000000000001531000000 153* 150  زمبابوے 4 1 102.00 بارہ بٹی اسٹیڈیم، کٹک گھر 9 اپریل 1998 جیتا[51]
7 &10000000000001010000000 101 111  پاکستان 4 1 90.99 ٹورانٹو کرکٹ، اسکیٹنگ اور کرلنگ کلب، ٹورانٹو غیر جانبدار 20 ستمبر 1998 ہارا[52]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "Azharuddin's laid-back talent". BBC Sport. 5 December 2000. 06 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  2. "India: Player Profiles – Mohammad Azharuddin (captain)". برطانوی نشریاتی ادارہ. 16 April 1999. 26 دسمبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  3. Ravindran، Siddarth (3 July 2010). "A decade's worth of scandal". ای ایس پی این کرک انفو. 02 جولا‎ئی 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 اپریل 2013. 
  4. ^ ا ب Premachandran، Dileep. "India / Players / Mohammad Azharuddin / Profile". ESPNcricinfo. 13 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  5. Basevi، Travis؛ Binoy، George (25 February 2009). "The progression of record holders for most wickets and runs in ODIs". ESPNcricinfo. 08 اگست 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 مارچ 2013. 
  6. "Landmark – Azharuddin setting marks in longevity". سی این این. 29 May 1999. 06 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 مارچ 2013. 
  7. "Indian Cricket Cricketers of The Year". CricketArchive. 23 اگست 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  8. "Wisden Cricketers of The Year". CricketArchive. 28 جون 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  9. "Bangladesh delight at Test status". BBC News. 26 June 2000. 06 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 اپریل 2013. 
  10. "Records / Test matches / Batting records / Hundred on debut". ESPNcricinfo. 23 اپریل 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  11. "Records / Test matches / Batting records / Fastest hundreds". ESPNcricinfo. 17 ستمبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  12. "Statistics / Statsguru / M Azharuddin / Test matches / away". ESPNcricinfo. 09 اپریل 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 مارچ 2013. 
  13. "Ban on India cricketer Azharuddin overturned". BBC News. 8 November 2012. 23 جنوری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2013. 
  14. "Records / Test matches / Batting records / Most hundreds in a career". ESPNcricinfo. 15 دسمبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 مارچ 2013. 
  15. "Records / India / Test matches / Most hundreds". ESPNcricinfo. 11 اگست 2011 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 مارچ 2013. 
  16. "Records / One-Day Internationals / Batting records / Fastest hundreds". ESPNcricinfo. 14 مئی 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 جنوری 2013. 
  17. ^ ا ب "4th ODI: India v New Zealand at Vadodara, Dec 17, 1988 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 03 جولا‎ئی 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  18. "Records / One-Day Internationals / Partnership records / Highest partnerships for any wicket". ESPNcricinfo. 09 نومبر 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 مارچ 2013. 
  19. "Statsguru – Mohammad Azharuddin – ODI nineties". ESPNcricinfo. 22 جنوری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2012. 
  20. "Statistics / Statsguru / M Azharuddin / Test Matches / Hundreds". ESPNcricinfo. 27 ستمبر 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 ستمبر 2017. 
  21. "A Flashback: The Seamless Bonds of Time". Howrah Bridge Official Website. 13 اپریل 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 اپریل 2013. 
  22. "3rd Test: India v England at Kolkata، Dec 31، 1984 – Jan 5، 1985 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 13 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  23. "Madras Light House". Directorate General of Lighthouses and Lightships. 12 مارچ 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 اپریل 2013. 
  24. "4th Test: India v England at Chennai، Jan 13–18، 1985 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 27 اکتوبر 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  25. "5th Test: India v England at Kanpur، Jan 31 – Feb 5، 1985 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 30 جون 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  26. "1st Test: India v Sri Lanka at Kanpur، Dec 17–22، 1986 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 27 جون 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  27. "2nd Test: India v Pakistan at Kolkata، Feb 11–16، 1987 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 7 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  28. "3rd Test: India v Pakistan at Jaipur، Feb 21–26، 1987 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 7 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  29. "2nd Test: Pakistan v India at Faisalabad، Nov 23–28، 1989 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 12 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  30. "3rd Test: New Zealand v India at Auckland، Feb 22–26، 1990 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 9 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  31. "1st Test: England v India at Lord's، Jul 26–31، 1990 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 22 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  32. "2nd Test: England v India at Manchester، Aug 9–14، 1990 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 23 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  33. "4th Test: Australia v India at Adelaide، Jan 25–29، 1992 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 14 فروری 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  34. "1st Test: India v England at Kolkata، Jan 29 – Feb 2، 1993 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 23 فروری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  35. "2nd Test: India v Sri Lanka at Bangalore، Jan 26–30، 1994 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 6 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  36. "3rd Test: India v Sri Lanka at Ahmedabad، Feb 8–12، 1994 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 14 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  37. "2nd Test: India v South Africa at Kolkata، Nov 27 – Dec 1، 1996 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 7 فروری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  38. "3rd Test: India v South Africa at Kanpur، Dec 8–12، 1996 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 8 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  39. "2nd Test: South Africa v India at Cape Town، Jan 2–6، 1997 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 6 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  40. "1st Test: Sri Lanka v India at Colombo (RPS)، Aug 2–6، 1997 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 7 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  41. "2nd Test: Sri Lanka v India at Colombo (SSC)، Aug 9–13، 1997 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 3 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  42. "2nd Test: India v Australia at Kolkata، Mar 18–21، 1998 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 13 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  43. "2nd Test: New Zealand v India at Wellington، Dec 26–30، 1998 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 7 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  44. "2nd Test: India v South Africa at Bangalore، Mar 2–6، 2000 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 13 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  45. "Statistics / Statsguru / M Azharuddin / One-Day Internationals / Hundreds". ESPNcricinfo. 9 اپریل 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 9 مارچ 2013. 
  46. Beam، Christopher. "Mumbai? What About Bombay? - How the city got renamed". Slate. 20 اپریل 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 اپریل 2013. 
  47. "5th ODI: India v Sri Lanka at Mumbai، Jan 17، 1987 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 10 فروری 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  48. "1st Match: India v Sri Lanka at Sharjah، Apr 25، 1990 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 12 جولائی 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  49. "1st ODI: Sri Lanka v India at Colombo (RPS)، Aug 17، 1997 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 7 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  50. "2nd Match: India v Pakistan at Dhaka، Jan 11، 1998 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 5 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  51. "5th Match: India v Zimbabwe at Cutack، Apr 9، 1998 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 6 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 
  52. "5th ODI: India v Pakistan at Toronto، Sep 20، 1998 | Cricket Scorecard". ESPNcricinfo. 5 جنوری 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2012. 

بیرونی روابط[ترمیم]