چارلس اول شاہ انگلستان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
چارلس اول
Charles I
King Charles I after original by van Dyck.jpg
چارلس اول شاہ انگلستان، 1636ء
شاہ انگلستان اور آئرلینڈ (مزید...)
معیاد عہدہ 27 مارچ 1625 – 30 جنوری 1649
پیشرو جیمز اول
جانشین چارلس دوم (ازروئے قانون)
ریاستی کونسل (درحقیقت)
فہرست اسکاٹش شاہی حکمرانان (مزید...)
فرماں روائی 27 مارچ 1625 – 30 جنوری 1649
تاجپوشی 18 جون 1633
پیشرو جیمز اول
جانشین چارلس دوم
شریک حیات فرانس کی ہنریٹا ماریہ
نسل
تفصیل
خاندان خاندان اسٹورٹ
والد جیمز اول
والدہ ڈنمارک کی عینی
پیدائش 19 نومبر 1600ڈنفئرلین، سکاٹ لینڈ
وفات 30 جنوری 1649 (عمر 48)وائٹ ہال محل، لندن
تدفین 9 فروری 1649سینٹ جارج چیپل، ونڈسر قلعہ، انگلستان
مذہب انگلیکانیت

چارلس اول (Charles I) تین مملکتوں انگلستان، سکاٹ لینڈ اور آئرلینڈ کا 27 مارچ 1625ء سے 1649ء میں اپنی سزائے موت تک بادشاہ تھا۔ انگریزی خانہ جنگی کے عروج پر چارلس اول کو سزائے موت دی گئی اور اولیور کرامویل دولت مشترکہ ریپبلکن کے قیام تحت پہلا لارڈ محافظ بنا۔ روم کے ساتھ شہنشاہوں ، انگلستان کے اسٹورٹ خاندان کے دو بادشاہوں اور فرانس کے دس بادشاہوں کا نام ۔ ان بادشاہوں میں قابل ذکر دو ہیں۔ روم کا چارلس اول جو تاریخ میں شارلیمان کے نام سے موسوم ہے۔ اور انگلستان کا چارلس اول جو جیمز اول کا بیٹا تھا۔ اور 1625ء میں انگلستان کا بادشاہ بنا۔ پہلے چار سال کے اندر اس نے تین پارلیمنٹ بلائیں اور تینوں کو منسوخ کیا۔ کیونکہ انھوں نے اس کے غلط مطالبات ماننے سے انکار کر دیا تھا۔ 1629ء تک اس نے پارلیمنٹ کے بغیر حکمرانی کی۔ بالآخر اولیور کرموئل نے اس کے خلاف بغاوت کا اعلان کیا اور اس کی فوجوں کو پے درپے شکست دی۔ چارلس 1649ء میں گرفتار ہوا۔ اس پر کھلی عدالت میں مقدمہ چلا غدار قرار دے کر پھانسی پر لٹکایا گیا۔

موجودہ پرنس آف ویلز ولی عہد انگلستان کا نام بھی چارلس ہے۔

بیرونی روابط[ترمیم]