ابوالحسن الطبری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابن جریر طبری سے مغالطہ نہ کھائیں۔
دیگر استعمال کے لیے، طبری (نام) ملاحظہ فرمائیں۔
ابوالحسن الطبری
معلومات شخصیت
پیدائش صدی 10  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آمل  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات سنہ 985 (34–35 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ طبیب، سائنس دان  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابوالحسن احمد ابن محمد الطبری (وفات: 970ء) دسویں صدی کے فارس میں آمل شہر میں پیدا ہوئے،[2] ابو الحسن طبرستان کے ایک طبیب تھے۔ جو آل بویہ کے حکمران رکن الدولہ کے ذاتی معالج رہے۔ ابو الحسن نے دس کتابوں میں بقراط کی کتاب المعالجہ البقراطیہ کا خلاصہ لکھا جو مرض سے شفایابی کے لیے علاج معالجے یا عمل جراحی سے کام لینے کی تدبیر پر ہے۔ یہ صرف عربی زبان میں موجود ہے

ابو الحسن طبری دنیا کا پہلا طبیب ہے جس نے خارش کے کیڑوں (itchـmite) کو دریافت کیا تھا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://referenceworks.brillonline.com/entries/encyclopaedia-islamica/*-COM_0078
  2. Ali، Mowlavi, Muhammad؛ Rahim، Gholami,۔ "Abū al-Ḥasan al-Ṭabarī" (in انگریزی)۔ Encyclopaedia Islamica۔ doi:10.1163/1875-9831_isla_com_0078۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 فروری 2017۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)CS1 maint: extra punctuation (link)

مزید دیکھیے[ترمیم]