ابو اللیث صدیقی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابو اللیث صدیقی
معلومات شخصیت
پیدائش 15 جون 1916  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آگرہ، برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 7 ستمبر 1994 (78 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کراچی، پاکستان  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن جامعہ کراچی  ویکی ڈیٹا پر مقام دفن (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ علی گڑھ
اسکول آف اورینٹل اینڈ افریقن اسٹڈیز، یونیورسٹی آف لندن
کولمبیا یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈاکٹری مشیر رشید احمد صدیقی  ویکی ڈیٹا پر ڈاکٹورل مشیر (P184) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈاکٹری طلبہ ابوالخیر کشفی، فرمان فتح پوری، معین الدین عقیل  ویکی ڈیٹا پر ڈاکٹورل شاگرد (P185) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ماہرِ لسانیات، صحافی، ادبی تنقید نگار، پروفیسر  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل لسانيات، اردو ادب، ادبی تنقید، صرف و نحو  ویکی ڈیٹا پر شعبۂ عمل (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت اورینٹل کالج لاہور، جامعہ کراچی، اردو لغت بورڈ، جامعہ علی گڑھ، کولمبیا یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر نوکری (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P literature.svg باب ادب

پروفیسر ڈاکٹر ابواللیث صدیقی (پیدائش: 15 جون، 1916ء - وفات: 7 ستمبر، 1994ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے ماہرِ لسانیات، محقق، ماہرِ تعلیم، نقاد، جامعہ کراچی کے شعبہ اردو کے سربراہ اور کولمبیا یونیورسٹی کے وزٹنگ پروفیسر تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

ابواللیث صدیقی 15 جون، 1916ء کو آگرہ ،برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے۔[1]۔ انہوں نے آگرہ ، بدایوں اور علی گڑھ سے تعلیم حاصل کی۔ وہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے اردو ادب میں پی ایچ ڈی کرنے والے پہلے اسکالر تھے۔ انہوں نے 1943ء میں دبستان لکھنو پر مقالہ لکھ کر ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی، ابواللیث صدیقی ابتدا میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے وابستہ رہے[2]۔ 1948ء میں لندن اسکول آف ایشین اینڈ افریقن اسٹڈیز چلے گئے اور شمالی ہندوستان میں ہند-آریا زبانوں پر تحقیق کی[1]۔ تقسیم ہند کے بعد پاکستان چلے آئے۔ پہلے لاہور اور پھر کراچی میں سکونت اختیار کی۔[2]

ملازمت[ترمیم]

ابو اللیث صدیقی اورینٹل کالج لاہور اور جامعہ کراچی کے شعبہ اردو سے وابستہ ہوئے اور اردو شعبہ کے سربراہ رہے۔ اسی دوران انہوں نے کچھ عرصے اردو لغت بورڈ کراچی کے مدیر اعلیٰ کی خدمات بھی سر انجام دیں [2]۔ اس کے علاوہ کولمبیا یونیورسٹی کے وزٹنگ پروفیسر بھی رہے۔[1]

تصانیف[ترمیم]

  1. لکھنؤ کا دبستان شاعری
  2. کلیات مصحفی
  3. غزل اور متغزلین(1968)
  4. آج کا اردو ادب(1975)
  5. تاریخ زبان ادبیات اردو
  6. تاریخ اصول تنقید
  7. جدید اردو ادبیات
  8. جامع القوائد (حصہ صرف)1971
  9. رفت و بود (خودنوشت)
  10. اردو میں سائنسی ادب کا اشاریہ (1981)
  11. تجربے اور روایت(اکتوبر 1959ء)
  12. مصحفی اور ان کا کلام
  13. جرات اس کا عہد اور شاعری,
  14. نظیر اکبر آبادی اس کا عہد اور شاعری,
  15. تاریخ زبان و ادب اردو,
  16. بیسویں صدی کا اردو ادب.

وفات[ترمیم]

ڈاکٹر ابواللیث صدیقی 7 ستمبر، 1994ء کو کراچی، پاکستان میں وفات پاگئے اور جامعہ کراچی کے قبرستان میں سپردِ خاک ہوئے۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت اردو ماہر ین لسانیات اور ابو اللیث صدیقی ، ڈان نیوز، 7 ستمبر 2009ء
  2. ^ ا ب پ ت پاکستان کرونیکل، عقیل عباس جعفری، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء، ص 748