ہلاخاہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مضامین بسلسلہ
یہودیت
Star of David.svg
Lukhot Habrit.svg  Menora.svg

باب یہودیت

ہلاخاہ جسے ہلاخا، ہالاخاہ، ہالوخو یا ہلوخو بھی کہا جاتا ہے، تحریری اور زبانی توریت پر مشتمل یہودی قوانین کا مجموعہ ہے۔ یہ احکامات یا بابلی قوانین، تلمود اور ربی قوانین پر مبنی ہے اور اس سے متعلق رسوم اور روایات کو بہت سی کتب کی شکل میں جمع کیا گیا ہے۔ ان میں سے مشہور ترین کتاب شولخان عاروخ ہے۔

ہلاخاہ کا اکثر ترجمہ یہودی قوانین کے طور پر کیا جاتا ہےتاہم اس کا بہتر ترجمہ ‘چلنے کا طریقہ‘ یا ‘کیسا رویہ اختیار کرنا چاہیے‘ ہے۔ اس کی بنیاد جڑ سے نکلی ہے جس کا مطلب کیسا رویہ ہونا چاہیے بنتا ہے۔ ان قوانین کو محض مذہبی نہ سمجھا جائے بلکہ وہ روز مرہ کے معلومات سے بھی متعلق ہوتے ہیں۔

تاریخی اعتبار سے یہودی اقوام کے بہت سے فرقوں میں ہلاخاہ نے نہ صرف مذہب بلکہ قانون کی شکل بھی اختیار کر لی تھی کیونکہ روایتی یہودیت میں یہ دونوں الگ الگ نہیں۔ یہودی روشن خیالی (حثکالا) اور یہودی آزادی میں ہلاخاہ کو روزمرہ زندگی سے زیادہ متعلق نہیں سمجھا گیا تھا کہ یہ ربیوں کی طرف سے تشریح پر مبنی تھا نہ کہ خالص اور تحریری عبرانی بائبل پر۔

موجودہ اسرائیلی قوانین کے تحت عائلی اور ذاتی حیثیت کے قوانین کے مخصوص حصے ربی کی عدالت میں طے کیے جاتے ہیں اور انہیں ہلاخاہ کے مطابق طے کرتے ہیں۔ تاہم ہلاخاہ میں کچھ فرقوں میں کسی حد تک اختلاف پایا جاتا ہے۔ ان فرقوں میں اشکنازی، مزراحی، سفاردی وغیرہ ہیں۔ تاہم یہ ایسے فرقے ہیں جو معاشرے سے الگ تھلگ رہنے کے عادی ہیں جیسا کہ ایتھوپیا۔

حوالہ جات[ترمیم]