اسحاق

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اسحاق
پیدائش باب 26 آیت 18 کے مطابق ”اسحاق نے کنوئیں کھودے“۔
پیدائش باب 26 آیت 18 کے مطابق ”اسحاق نے کنوئیں کھودے“۔

معلومات شخصیت
مدفن مسجد ابراہیم  ویکی ڈیٹا پر مقام دفن (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش جرار  ویکی ڈیٹا پر رہائش (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
زوجہ ربقہ  ویکی ڈیٹا پر شریک حیات (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد یعقوب[1]، عیسو[2]  ویکی ڈیٹا پر اولاد (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد ابراہیم[3]  ویکی ڈیٹا پر والد (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ سارہ[3]  ویکی ڈیٹا پر والدہ (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی

اضحاق یا اسحاق (عبرانی: יצחק مطلب: ہنسی، خوشی) ابراہیم اور سارہ کا اکلوتا بیٹا تھا جو ان کے ہاں تب پیدا ہوا جب اُس کے ماں باپ عمر رسیدہ تھے۔ خدا نے اس کا وعدہ ابراہیم[4] اور سارہ[5] سے کیا تھا۔ یہ بیر سبع میں پیدا ہوا اور اس کی پرورش بھی وہیں ہوئی۔[6] یہ ابھی لڑکا ہی تھا کہ ابراہیم خدا کے حکم کے مطابق اُسے موریاہ کے پہاڑ پر قربانی دینے کے لیے لے گیا لیکن عین وقت پر خدا نے ایک مینڈھا مہیا کر دیا۔[7]

اسحاق نے چالیس برس کی عمر میں اپنی رشتہ دار ربقہ سے شادی کی۔ اُس کے دو بیٹے عیسو اور یعقوب تھے۔[8] اسحاق ایک زبردست کسان اور چوپان تھا۔[9] اپنی آخری عمر میں وہ نابینا ہو گیا۔ وہ عیسو کو برکت دینا چاہتا تھا مگر ربقہ کے کہنے پر یعقوب نے اس سے دھوکے سے برکت حاصل کرلی۔[10]

اسحاق 180 سال کی عمر میں اس دنیا سے رخصت ہوئے اور قریت اربع (حبرون) میں دفن ہوئے۔[11]

اسحاق کا اِسرائیل کے بزرگوں میں شمار ہوتا ہے۔ اُس کا نام ابراہیم اور یعقوب کے ساتھ آتا ہے۔[12]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. فصل: 25 — باب: 26
  2. فصل: 25 — باب: 25
  3. ^ ا ب فصل: 21 — باب: 3
  4. پیدائش باب 15 آیت 4 / باب 17 15–21
  5. پیدائش باب 18 آیت 10–12
  6. پیدائش باب 22 آیت 19
  7. پیدائش باب 22 آیت 1–19 ؛ عبرانیوں باب 11 آیت 17–19
  8. پیدائش باب 25 آیت 1–67 / باب 25 آیت 19–26
  9. پیدائش باب 26 آیات 20–22، 12–14
  10. پیدائش باب 27 آیت 1–29
  11. پیدائش باب 35 آیت 28–29 / باب 49 آیت 31
  12. 1 سلاطین باب 18 آیت36 ؛ یرمیاہ باب 33 آیت 26 ؛ متی باب 22 آیت 32