اندریاس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
رسول اندریاس
Artus Wolffort - St Andrew - WGA25857.jpg
مقدس رسول اندریاس آرٹس ولفورٹ کی مصوری
رسول، اولین مشنری
پیدائش ابتدائی پہلی صدی
گلیل، رومی سلطنت
وفات وسط-سابقہ پہلی صدی
پاتراس، اخیہ، رومیوں سلطنت
احترام در تمام مسیحیت
قداست قرون رسول بذریعہ قبل کانگریگیشن
اہم روضہ دومو کیتھیڈرل امالفی، اطالیہ، سینٹ اندریاس کیتھیڈرل، پاتراس،یونان؛ سینٹ میری کیتھیڈرل، ایڈنبرا، اسکاٹ لینڈ؛ کلیسا سینٹ اندریاس اور سینٹ البرڈ، وارسا، پولینڈ۔
تہوار 30 نومبر
منسوب خصوصیات بوڑھا آدمی ہمراہ بڑے سفید بال اور داڑھی، طومار یا کتاب انجیل تھامے ہوئے، بعض اوقات صلیب اندریاس پر جھکاؤ، دام (مچھلی پکڑنے کا جال)۔
سرپرستی اسکاٹ لینڈ، بارباڈوس، جارجیا، یوکرین، روس، صقلیہ، یونان، قبرص، رومانیہ، پاتراس، امالفی، لوآ (مالٹا) اور پروشیا؛ ماہی گیر، ماہی فروش (مچھوا) اور رسن ساز، درزی ، گلوکار، کان کن، حاملہ خواتین، قصاب وغیرہ۔

اندریاس (انگریزی: Andrew ،یونانی: Ἀνδρέας، Andreas مطلب ”جوان مرد“ اور ”بہادر“) یسوع مسیح کا ایک رسول جو گلیل کی جھیل کے ساحلی شہر ”بیت صیدا“ کے یوحنا کا بیٹا اور پطرس کا بھائی تھا۔[1] وہ اپنے بھائی کی طرح ماہی گیر تھا اور کفر نحوم میں رہتا تھا۔[2] وہ پہلے یوحنا بپتسمہ دینے والے کا شاگرد تھا۔ ایک مرتبہ یسوع مسیح کو آتے دیکھ کر یوحنا نے گواہی دی کہ یسوع خدا کا برہ ہے جو دنیا کا گناہ اٹھا لے جاتا ہے۔[3] دوسرے دن یوحنا بپستمہ دینے والے نے اندریاس کو یسوع کی طرف بھیجا۔[4] جب اندریاس قائل ہوگیا کہ یسوع واقعی المسیح ہیں تو وہ اپنے سگے بھائی کو ان کے پاس لایا۔[5] یسوع مسیح نے دونوں کو بھائیوں کو ماہی گیری چھوڑنے اور آدم گیری یعنی شاگرد بنانے کے کام کے لیے مستقل طور پر بلایا۔[6] بعد ازاں انہوں نے انہیں رسول مقرر کیا۔[7][8][9][10] رسولوں کی فہرست میں اکثر فلپس اور اندریاس کا نام ساتھ آتا ہے۔ فلپس اس کا ہم وطن تھا اور کئی کاموں میں وہ ایک دوسرے کے ساتھی تھے مثلاً پانچ ہزار افراد کو کھانا کھلانے کے معجزے میں[11]، یونانی لوگوں کا مسیح سے تعارف کرانے میں[12] وغیرہ۔

کلیسیا میں اندریاس کو اولین مشنری (مبلغ) کا خطاب دیتی ہے کیونکہ وہ لوگوں کو مسیح کے پاس لانے میں بہت کامیاب تھا۔ مثلاً وہ اپنے سگے بھائی کو[5]، مچھلی والے لڑکے کو[13] اور یونانیوں کو مسیح کے پاس لایا[12]

ایک روایت کے مطابق اسے اخیہ میں منادی کرنے کے جرم میں X قسم کی صلیب پر مصلوب کیا گیا، اسی وجہ سے ایسی صلیب کو سینٹ انڈریوز کراس کہتے ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. یوحنا باب 1 آیت 44
  2. مرقس باب 1 آیت 29
  3. یوحنا باب 1 آیت 29
  4. یوحنا باب 1 آیت 35-37
  5. ^ 5.0 5.1 یوحنا باب 1 آیت 41-42
  6. متی باب 4 آیت 18-19
  7. متی باب 10 آیت 2
  8. مرقس باب 3 آیت 18
  9. لوقا باب 6 آیت 14
  10. اعمال باب 1 آیت 13
  11. یوحنا باب 6 آیت 6-9
  12. ^ 12.0 12.1 یوحنا باب 12 آیت 22
  13. یوحنا باب 6 آیت 8-9