ابوالحسن شاذلی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

شیخ ابوالحسن شاذلی جن کا پورا نام ابوالحسن علی بن عبد الله بن عبد الجبار بن يوسف ابن ہرمز المغربی الشاذلی الشريف الحسنی ہے، قطب اول سلسلہ شاذلیہ کے بانی، بہت بڑے شیخ ،اولیاء کے امام اور امت مسلمہ کے بڑے بزرگ ہیں۔

ولادت[ترمیم]

غمارہ جو سبتہ کے قریب شمال مراکش میں واقع ہے۔ سنہ 591ھ بمطابق 1195ء میں ایک کسان کے گھر پیدا ہوئے۔

لقب و کنیت[ترمیم]

ان کا لقب شاذلی اور کنیت ابو الحسن ہے۔

طريقت[ترمیم]

سلسلہ شاذليہ کے بانی ہیں جبکہ طریقت اپنے شيخ عبد السلام بن مشيش جو خلیفہ تھے عباس ابو المرسی کے۔

تصنیفات[ترمیم]

  • حزب الشاذلی
  • حزب الكبير
  • حزب البحر
  • الجواہر المصونہ واللآلی المكنونہ

وفات[ترمیم]

656ھ بمطابق 1258ء میں خميثرجو بحیرہ احمر کے ساحل پر قنا اور قصیر کے درمیان واقع ہے میں وفات ہوئی۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. موسوعہ الكسنزان ،مؤلف: شيخ عبد الكريم الكسنزان
  2. اعلام التصوف الاسلامی،احمد ابو كف، ص34-54