مراۃ العروس (ٹی وی سیریز)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فائل:Aaina Dulhan Ka logo-image (Mirat-ul-Uroos).jpg
Mirat-ul-Uroos's intertitle on زندگی (ٹی وی چینل) as Aina Dulhan Ka featuring آمنہ شیخ (right) and مہوش حیات.
نوعیترومانوی فلم
فیملی ڈرامہ
بنیادمراۃ العروس by ڈپٹی نذیر احمد
تحریرعمیرہ احمد
ہدایاتانجم شہزاد
نمایاں اداکار (پوری کاسٹ کے لیے نیچے کاسٹ پر سیکشن دیکھیں)
تھیم موسیقی
  • موسیقار
  • شانی حیدر
  • گیت نگار
  • نصیر ترابی
افتتاحی تھیم
نشرپاکستان
زباناردو
تعدادِ دور1
اقساط30
تیاری
دورانیہتقریبا. 40-45 Minutes
پروڈکشن ادارہسیونتھ اسکائی اینٹرٹینمنٹ
نشریات
چینلجیو انٹرٹینمینٹ
4 دسمبر 2012ء (2012ء-12-04) – 6 جون 2013 (2013-06-06)
بیرونی روابط
ویب سائٹ
پروڈکشن ویب سائٹ


مراۃُ العروس ( اردو : دلہن کا آئینہ) ایک پاکستانی ٹیلی ناول ہے جو نذیر احمد دہلوی کے اسی نام کے ناول سے متاثر ہے۔ اسے انجم شہزاد نے ڈائریکٹ کیا تھا جبکہ اسے عمیرہ احمد نے لکھا تھا۔ یہ پاکستان میں جیو انٹرٹینمنٹ پر 4 دسمبر 2012 سے 6 جون 2013 تک نشر ہوا۔ سیریل کی کہانی اکبری کی پوتیوں کے گرد گھومتی ہے، جس کا کردار آمنہ شیخ اور مہوش حیات نے ادا کیا تھا، اور اصغری کے پوتوں کا کردار میکال ذوالفقار اور احسن خان نے ادا کیا جنہوں نے بعد میں شادی کی۔ [1] [2]

پلاٹ کا خلاصہ[ترمیم]

میرات العروس اکبری اور اصغری کے نواسوں کی زندگیوں سے متصادم ہے۔ اکبری کی پہلی پوتی عائزہ مغرور، فضول خرچی اور بہت پیار سے پرورش پائی ہے، جب کہ اس کی دوسری پوتی آئمہ عائزہ کے بالکل برعکس ہے۔ جب کہ اصغری کے پوتے حماد اور ہاشم ہیں، جو آخرکار عائزہ اور آئمہ سے شادی کرتے ہیں۔ عائزہ اپنے سسرال میں اپنے اصلی رنگ دکھاتی ہے۔ حماد ایک غیر ازدواجی تعلقات میں ملوث ہے اور عائزہ اسے چھوڑ دیتی ہے، لیکن وہ بالآخر دوبارہ مل جاتے ہیں۔

کاسٹ[ترمیم]

پس منظر[ترمیم]

ناول میرات العروس پہلی بار 1869 میں شائع ہوا تھا اور اسے نذیر احمد دہلوی نے لکھا تھا۔ اسے اردو ادب کا پہلا ناول مانا جاتا ہے۔ [5] ناول کی بنیاد مسلم اور ہندوستانی معاشرے میں خواتین کی تعلیم کی وجہ کو فروغ دینا ہے۔

یہ نذیر کے ناول کی تیسری ٹی وی موافقت تھی۔ سیریل کے پروڈیوسر عبداللہ کادوانی کا کہنا تھا کہ یہ سیریل مرات العروس کی موافقت نہیں ہے بلکہ یہ ناول سے متاثر ہے اور سیریل کی کہانی وہیں سے شروع ہوتی ہے جہاں سے ناول کی کہانی ختم ہوتی ہے۔ [3] اسکرپٹ کو مشہور پاکستانی مصنفہ اور اسکرین رائٹر عمیرہ احمد نے لکھا تھا جنہوں نے اس سے قبل پروڈکشن ہاؤس کے ساتھ ہٹ سیریلز جیسے کہ دوراہا (2008) اور میری ذات زرہ بے نشان (2010) میں کام کیا تھا۔ [6]

اردو زبان
اردو زبان

یہ مضمون اردو زبان پر مضامین کا تسلسل ہے
اصناف ادب

بین الاقوامی نشریات[ترمیم]

مرات العروس کو ہندوستان میں بھی زندگی چینل کے ذریعے نشر کیا گیا، جس کا عنوان آئینہ دلہن کا ہے، 10 نومبر 2014 کو پریمیئر ہوا اور 13 دسمبر 2014 کو اس کا اختتام ہوا۔ ہندوستان میں اپنی مقبولیت کی وجہ سے، یہ 8 مئی 2015 سے شام 6 بجے دوبارہ چلنا شروع ہوا۔ [7]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Pakistan's quiet gender revolution". ڈان (اخبار). اخذ شدہ بتاریخ 30 جنوری 2021. 
  2. "Mirat-ul-Uroos". www.tv.com.pk. اخذ شدہ بتاریخ 30 جنوری 2021. 
  3. ^ ا ب "'مراة العروس' مہوش حیات کی خوبصورت اداکاری سے سجا ڈرامہ". Urdu VOA. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2021. 
  4. "I have not followed any Indian serial: Pakistani actor Mikaal Zulfiqar". tellychakkar. 29 November 2014. اخذ شدہ بتاریخ 30 جنوری 2021. 
  5. "'اردو ادب کے وہ 10 بہترین ناول جنہوں نے بہت متاثر کیا'". ڈان نیوز. اخذ شدہ بتاریخ 25 جنوری 2021. 
  6. "Meri Zaat Zarra-E-Benishan Is Going To Complete 10 Years And It Will Always Be Better Than Any Drama". phupo. اخذ شدہ بتاریخ 30 جنوری 2021. 

بیرونی روابط[ترمیم]

سانچہ:Programmes broadcast by Zindagi