گھیبی لہجہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پنجابی کے لہجے

پنجابی زبان کی ایک شاخ یا لہجہ، یہ لہجہ کافی حد تک پوٹھوہاری سے ملتا جلتا ہے لیکناس کے جملے زیادہ سلیل ہوتے ہیں۔ مثال کہ طور پر ماضی فقرے کے آخِر میں اہے+سابقہ بولا جاتا ہے مثلاً میں اہے یاں مطلب میں تھا اس کے علاوہ یہ لفظ وِنجنا جانا یا گچنا کی جگہ استعمال کرتا ہے۔ یہ لہجہ زیادہ تر تحصیل فتح جنگ اور تحصیل پنڈی گھیب میں بولا جاتا ہے۔میانوالی میں بولا جانے والا لہجہ آوانکاری بھی گھیبی سے کافی حدتک مماثلت رکھتا ہے۔

وجہ تسمیہ[ترمیم]

گھیبہ قوم جو ان علاقوں پر حکومت کرتی رہی ہے۔ اسی نسبت سے پنڈی گھیب شہر کا بھی نام پڑا، اسی نسبت سے اس کو گھیبی لہجہ کا نام دیا گيا ہے۔ اس علاقے کے لوگ خود اسے پوٹھوہاری لہجہ ہی بولتے ہیں۔ لیکن اس میں اور گھیبی لہجے میں واضح فرق پائے جاتے ہیں۔

==سردار قدیر عباس ولد سردار باز خان ولد مہمد اشرف خان خان بہادولد سردار شیر خان ==

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]