محمد میاں سومرو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
محمد میاں سومرو


در منصب
18 اگست 2008ء – 9 ستمبر 2008ء
وزیرِ اعظم یوسف رضا گیلانی
پیشرو پرویز مشرف
جانشین آصف علی زرداری

در منصب
16 نومبر 2007ء – 25 مارچ 2008ء
صدر پرویز مشرف
پیشرو شوکت عزیز
جانشین یوسف رضا گیلانی

در منصب
23 مارچ 2003ء – 11 مارچ 2009ء
پیشرو وسیم سجاد
جانشین فاروق نائیک

پیدائش 19 اگست 1950 (1950-08-19) ‏(64)
کراچی, پاکستان
سیاسی جماعت پاکستان مسلم لیگ قائد
مادر علمی فارمین کرسچین کالج
مذہب اسلام

میاں محمد سومرو نے 16 نومبر 2007ء کو پاکستان کے نگران وزیراعظم کا حلف اٹھایا۔ اس سے پہلے آپ چیئرمین سینیٹ پاکستان تھے۔ پیشے کے اعتبار سے بینکار رہے ہیں۔ بینکاری ہی کے دوران بعض اخبارات کے مطابق ان پر فراڈ کا الزام بھی لگا تھا۔

جناب کے پہلے اقدامات میں بلٹ پروف گاڑیوں کی ملک میں درآمد پر محصول کی چھوٹ کا اعلان ہے۔ اس سے قبل جب وہ قائم مقام صدر بنے تھے تو انہوں نے سینیٹ کے چیئرمین اور ان کے پورے خاندان کے لیے خصوصی مراعات منظور کی تھیں۔ جس میں تاحیات پروٹوکول اور ڈپلومیٹ پاسپورٹ شامل تھے۔

میاں محمد سومرونے 18 اگست 2008ء کو پاکستان کی قائم مقام صدر کا عہدہ سنبھال لیا۔

مزید[ترمیم]


سیاسی دفاتر
پیشرو
عظیم داؤدپوتا
گورنر سندھ
2000ء  –  2002ء
جانشین
عشرت العباد خان
پیشرو
وسیم سجاد
چیئرمین سینیٹ پاکستان
2003ء  –  2007ء
جانشین
جان محمد جمالی
قائم مقام
پیشرو
شوکت عزیز
وزیراعظم پاکستان
2007ء  –  2008ء
جانشین
یوسف رضا گیلانی
پیشرو
جان محمد جمالی
قائم مقام
چیئرمین سینیٹ پاکستان
2008ء  –  20009ء
جانشین
فاروق نائیک
پیشرو
پرویز مشرف
صدر پاکستان
قائم مقام

2008ء
جانشین
آصف علی زرداری