غلام نبی آزاد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
غلام نبی آزاد
تفصیل=

اپوزشن لیڈر، راجیہ سبھا (اعوان بالیٰ)|
آغاز منصب
8 جون 2014
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ارون جیٹلی
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Minister of Health and Family Welfare
مدت منصب
22 مئی 2009 – 26 مئی 2014
وزیر اعظم من موہن سنگھ
Fleche-defaut-droite-gris-32.png en:Anbumani Ramadoss
ہرش وردھن Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر اعلی، جموں و کشمیر
مدت منصب
2 نومبر 2005 – 11 جولائی 2008
گورنر
Fleche-defaut-droite-gris-32.png مفتی محمد سعید
عمر عبداللہ Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 7 مارچ 1949 (69 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ضلع ڈوڈہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام
جماعت انڈین نیشنل کانگریس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
اولاد صدام
صوفیہ
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ کشمیر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

غلام نبی آزاد : (پیدائش 07 مارچ 1949، جمو کشمیر بھارت) ایک مشہور بھارتی سیاست دان ہیں جو کانگریس پارٹی سے منسلک ہیں۔ انہوں نے کئی شعبوں کے وزارتی عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں۔[1] حال میں ان کا عہدہ راجیہ سبھا میں اپوزیشن لیڈر کا ہے۔[2]

من موہن سنگھ کی دورِ حکومت میں وزیر امور پارلیمان، 27 اکتوبر 2005 تک رہے۔ آندھرا پردیش اور کرناٹک اسمبلی انتخابات میں پارٹی کی ذمہ داری لی اور دونوں ریاستوں میں کانگریس پارٹی کو کامیاب کیا۔ بعدمیں جموں کشمری کے وزیر اعلی بنے۔ جموں اور کشمیر کے انتخابات میں بھی پارٹی کو کامیاب کیا۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے جنرل سیکرٹری کے عہدے پر مسلسل نو مرطبہ فائز رہے اور، کانگریس ورکنگ کمیٹی کے رکن 18 سال رہے۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

غلام نبی آزاد جموں اور کشمیر کے ڈوڈا ضلع میں پیدا ہوئے۔ وہ رحمت اللہ بٹ اور باسا بیگم کے گھر پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم انہوں نے اپنے گاؤں میں حاصل کی۔ اس کے بعد وہ جموں منتقل ہو گئے اور جی جی ایم سائنس کالج سے سائنس میں بیچلر کی ڈگری لی۔ 1972 میں یونیورسٹی آف کشمیر سے انہوں نے زولوجی میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔

سیاسی سفر[ترمیم]

مرکزی وزیر اور کانگریس پارٹی کی سربراہ کی حیثیت سے، آزاد نے کئی مرطبہ نوکانفیڈنس موشنز میں حکومت کو کامیابی دلوائی۔ یہاں تک کہ 1990 میں پی وی نرسمہاراؤ کی مائنوریٹی حکومت کا بھی بیڑا پار انہیں کی حکمت عملی سے ہوا۔

1980 میں، آل انڈیا یوتھ کانگریس کے صدر منتخب ہوئے، جو مائنوریٹی طبقہ سے منتخب ہوئی پہلی شخصیت تھی۔ ساتویں لوک سبھا کے انتخابات میں ریاست مہاراشٹر کے واشم لوک سبھا حلقے سے 1980 میں کامیاب رہے۔ 1982 میں ڈپٹی وزیر برائے قانون اور کمپنی افئرس پر فائز ہوئے۔

1984 کے 8ویں لوک سبھا انتخابات میں بھی کامیاب رہے۔ 1990 میں راجیہ سبھا کے رکن بنے اور حکومت میں پارلیمانی امور اور سیول ایویئشن وزیر بنے۔ اس کے بعد وہ جموں اور کشمیر سے راجیا سبھا کے رکن منتخب ہوئے۔ ان کی مدت 30/11/1996 سے 29/11/2002 اور 30/11/2002 سے 29/11/2008 تھی۔29 اپریل 2006 کو انہوں نے استعفیٰ دے دیا ۔ اس سے پہلے 2 نومبر 2005 کو وہ وزیر اعلیٰ جموں اور کشمیر بن گئے تھے۔

وزیر اعلیٰ جموں اور کشمیر[ترمیم]

جون 2008 میں آزاد کی حکومت نے زمین کی ہندو مندر کو منتقلی کے منصوبے کا اعلان کیا۔ اس فیصلے پر بہت سے مسلمانوں کو غصہ آیا۔ مسلمانوں نے اس فیصلے پر احتجاج کیا۔ اس احتجاج کے نتیجے میں حکومت کو زمین کی منتقلی کا منصوبہ ترک کرنا پڑا۔ منصوبہ ترک کرنے سے ہندوؤں اشتعال میں آگئے اور انہوں نے احتجاج کرنا شروع کر دیا۔ پرتشدد احتجاج کے نتیجے میں 7 افراد مارے گئے۔ جموں اینڈ کشمیر پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی، جس کا انڈین نیشل کانگریس کے ساتھ اتحاد تھا، نے آزاد کی حکومت کی حمایت ترک کر دی۔ آزاد نے اپنی حکومت کو اعتماد کا ووٹ حاصل کر کے بچانے کی بجائے 7 جولائی 2008 کو استعفیٰ دے دیا اور 11 جولائی 2008 کو دفتر چھوڑ دیا۔ [3]

یونین گورنمنٹ[ترمیم]

یونائیٹڈ پروگریسیو الائنس کی دوسری حکومت کی سربراہی ڈاکٹر منموہن سنگھ نے کی۔ آزاد نے اُن کی حکومت میں بھارت کے وزیر صحت کا حلف لیا۔ وہ جموں اور کشمیر سے 30 نومبر 1996 سے 29 نومبر 2002 تک تیسری اور چوتھی مدت کے لیے راجیہ سبھا کے رکن بنے۔[4] انہوں نے قومی دیہی صحت مشن یعنی نیشنل رورل ہیلتھ مشن کو تمام بھارت میں پھیلانے کا منصوبہ بنایا۔ اس کے بعد اُن کی وزارات نے شہروں میں رہنے والے غریب لوگوں کے لیے نیشنل اربن ہیلتھ مشن شروع کیا۔[5][6] انہوں نے تجویز دی کہ آبادی کو قابو کرنے کےلیے شادی کی عمر 25 سے 30 سال کے درمیان ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کی کمی اور گھروں میں ٹی وی کی تفریح نہ ہونے سے لوگ زیادہ بچے پیدا کرتے ہیں۔ [7]

قائد حزب اختلاف[ترمیم]

جون 2014 میں نیشنل ڈیموکریٹک الائنس نے لوک سبھا میں اکثریت حاصل کی اور یونین گورنمنٹ بنائی۔ آزاد کو راجیہ سبھا میں قائد حزب اختلاف بنایا گیا۔ [8] 2015 میں آزاد راجیہ سبھا کے لیے جموں اور کشمیر سے دوبارہ منتخب ہو گئے۔حالانکہ پی ڈی پی - بی جے پی الائنس کے پاس قانون ساز اسمبلی میں زیادہ نشستیں تھیں۔ [9]

نجی زندگی[ترمیم]

آزاد نے 1980 میں، کشمیر کے مشہور گلوکارہ شمیم دیو آزاد سے شادی کی۔ ان کی دو اولاد ہیں، فرزند صدام اور دختر صوفیہ نبی آزاد۔[10][11][12][13]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Council of Ministers - Who's Who - Government: National Portal of India"۔ http://india.gov.in۔ حکومت ہند۔ اخذ کردہ بتاریخ 11 August 2010۔ 
  2. "Ghulam Nabi Azad named Leader of Congress in Rajya Sabha"۔ IANS۔ news.biharprabha.com۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 June 2014۔ 
  3. "Kashmir chief's surprise resignation", CNN, 7 July 2008.
  4. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ RS-list نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  5. Staff Reporter۔ "Azad’s pat for NRHM schemes"۔ The Hindu (en زبان میں)۔ اخذ کردہ بتاریخ 2017-03-25۔ 
  6. Special Correspondent۔ "NUHM launched to cover urban areas with over 50,000 population"۔ The Hindu (en زبان میں)۔ اخذ کردہ بتاریخ 2017-03-25۔ 
  7. "Azad says watch TV to check baby boom"۔ اخذ کردہ بتاریخ 2017-03-25۔ 
  8. Ghulam Nabi Azad Made Leader of Congress in Rajya Sabha, Set to Become Leader of Opposition, NDTV News, 8 June 2014.
  9. Kashmir surprise: Congress leader Ghulam Nabi Azad relected to Rajya Sabha, The Indian Express, 8 February 2015.
  10. Power girl
  11. Ghulam Nabi Azad’s Son To Wed DLF Supremo’s Grand-daughter – Fashion Scandal
  12. Sofiya Azad loves talking | Hindi Movie News - Times of India
  13. The Hindu : National : My dad will do well, says Azad's daughter

بیرونی روابط[ترمیم]

سیاسی عہدے
ماقبل 
مفتی محمد سعید
Chief Minister of Jammu and Kashmir
2005–2008
مابعد 
عمر عبداللہ
ماقبل 
امبومنی راماداس
Minister of Health and Family Welfare
2009–2014
مابعد 
ہرش وردھن
ماقبل 
en:Arun Jaitley
Leader of the Opposition in the Rajya Sabha
2014–present
موجودہ