ابی احمد علی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابی احمد علی
تفصیل= Abiy Ahmed at an inauguration event in Addis Ababa

15th Prime Minister of Ethiopia
آغاز منصب
2 اپریل 2018
صدر Mulatu Teshome
سہالے ورک زیوڈے
نائب Demeke Mekonnen
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ہائلے ماریام دیسالین
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
3rd Chairman of the Ethiopian People's Revolutionary Democratic Front
آغاز منصب
27 مارچ 2018
نائب Demeke Mekonnen
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ہائلے ماریام دیسالین
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Leader of the
Oromo Democratic Party
آغاز منصب
22 فروری 2018
نائب Lemma Megersa
Fleche-defaut-droite-gris-32.png Lemma Megersa
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Minister of Science and Technology
مدت منصب
6 اکتوبر 2015 – 1 نومبر 2016
وزیر اعظم ہائلے ماریام دیسالین
Fleche-defaut-droite-gris-32.png Demitu Hambisa
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Director of the Information Network Security Agency
Acting
مدت منصب
2008 – 2015
Fleche-defaut-droite-gris-32.png Teklebirhan Woldearegay
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 15 اگست 1976 (43 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Ethiopia.svg ایتھوپیا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
اولاد 3 daughters and 1 adopted son
عملی زندگی
تعليم Microlink Information Technology College (BA)
یونیورسٹی آف گرینچ (MA)
ایشلنڈ یونیورسٹی (MBA)
Addis Ababa University (علامۂِ فلسفہ)
مادر علمی جامعہ ادیس ابابا
یونیورسٹی آف گرینچ
ایشلنڈ یونیورسٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان،  فوجی افسر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
عسکری خدمات
وفاداری Flag of Ethiopia.svg ایتھوپیا
شاخ Ethiopian Army
یونٹ Army Signals Corps
کمانڈر Information Network Security Agency
لڑائیاں اور جنگیں Ethiopian Civil War
United Nations Assistance Mission for Rwanda
Eritrean–Ethiopian War

ابی احمد علی ( جعزی: ዐቢይ አህመድ አሊ، سانچہ:Lang-om، پیدائش: 15 اگست 1976ء) ایتھیوپیا کے موجودہ وزیر اعظم اور سابق لیفٹننٹ کرنل 46 سالہ ابی احمد علی جو کمپیوٹر سائنسز میں گریجوایشن کے بعد گرین وچ یونیورسٹی لندن سے "ٹرانسفورمیشنل لیڈر شپ" میں ماسٹرز ڈگری کے حامل ہیں اور 2017 میں Social Capital and its Role in Traditional Conflict Resolution in Ethiopia: The Case of Inter-Religious Conflict In Jimma Zone State کے موضوع پر مقالہ مکمل کر کے پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کر چکے ہیں۔ انہوں نے گزشتہ برس سیاسی جماعت "اورومو ڈیموکریٹک پارٹی" کی سربراہی سنبھالی تھی اور گزشتہ برس ہی 2 اپریل کو وہ چار جماعتی اتحاد کی مخلوط حکومت میں وزیر اعظم منتخب ہوئے تھے۔ ابی احمد نے ملک میں انقلابی اصلاحات کے ذریعے نہ صرف آئینی مسائل کے حل کی بنیاد رکھی ہے بلکہ قحط اور خانہ جنگی سے تباہ حال ملک میں بے مثال معاشی اصلاحات کے ذریعے اس کی جی ڈی پی کو بھی 280 ارب ڈالر تک پہنچایا ہے۔

ذاتی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

ابی احمد کی ولادت 15 اگست 1976ء کو ایتھیوپیا کے موجودہ اورومیا علاقہ میں پیدا ہوئے۔[1][2] اس وقت یہ علاقہ کافا صوبہ میں آتا تھا۔ ان کی جائے پیدائش بشاشہ[3] نامی قصبہ ہے۔ ان کے والد احمد علی مسلمان تھے[4] جن کی چار بیویاں تھیں۔[5] ان کی والدہ حبشی راسخ الاعتقاد توحیدی کلیسیا[6]) سے تعلق رکھنے والی مسیحی تھیں۔[7][8][9]

ابی اپنے کثیر الزواج والد کی 13ویں اولاد ہیں اور ماں جائی بھائی بہنوں میں چھٹے اور سب سے چھوٹے ہیں۔[3][8]

تعلیم[ترمیم]

ابی نے 2001ء میں مائیکرولنک انفارمیشن ٹیکنالوجی کالج، اڈس ابابا سے کمپیوٹر انجینرنگ میں بیچلر کی ڈگری حاصل کی۔[10] 2011ء میں یونیورسٹی آف گرینچ، لندن سے ٹرانسفارمیشنل لیڈرشپ میں ماسٹر کی حاصل کی اور 2013ء میں لیڈسٹار کالج آف مینیجمینٹ (الحاق: ایشلنڈ یونیورسٹی) سے ماسٹر آف بزنس اڈمنسٹریشن کی ڈگری لی۔ علامہ فلسفہ کرنے کے بعد 2017ء میں پی ایچ ڈی کا مقالہ لکھ کر ڈاکٹری کی ڈگری سے سرفراز ہوئے۔[11]

ذاتی زندگی[ترمیم]

ان کی اہلیہ کا نام زینش ہے اور وہ امارہ خاتون ہیں اور غوندر سے تعلق رکھتی ہیں۔[3][8] اس وقت دونوں ہی ایتھیوپیا ڈیفینس میں ملازمت کر رہے تھے۔[12] ان کی تین بیٹیاں ہیں اور حال ہی میں انہوں نے ایک بیٹے کو گود لیا ہے۔[12] ابی کثیر اللسان ہیں اور انگریزی زبانکے علاوہ اورومو زبان، امہری زبان اور تیگرینیا زبان جانتے ہیں۔[13]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Abiy Ahmed Ali"۔ DW.com (سواحلی زبان میں)۔ 28 مارچ 2018۔ Abiy Ahmed alizaliwa اگست 15, 1976 nchini Ethiopia (Abiy Ahmed was born on اگست 15, 1976 in Ethiopia)
  2. Zelalem Girma (31 مارچ 2015)۔ "Ethiopia in democratic, transformational leadership"۔ Ethiopian Herald۔
  3. ^ ا ب پ Dawit Endeshaw (2018-03-31)۔ "The rise of Abiy 'Abiyot' Ahmed"۔ The Reporter۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-03-31۔
  4. Somini Sengupta (2018-09-17)۔ "Can Ethiopia's New Leader, a Political Insider, Change It From the Inside Out?"۔ نیو یارک ٹائمز۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-09-18۔
  5. Dawit Endeshaw (31 مارچ 2018)۔ "The rise of Abiy "Abiyot" Ahmed"۔ The Reporter۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019۔ Coming from a very a well-known and extended family, Abiy is the 13th child for his father, who had four wives. He is the son of Ahmed Ali a.k.a Aba Dabes, Aba Fita. Ahmed, a respected elder in his small town, has contributed to the community by giving his own plot of land so that services giving centers such as clinics and telecom offices would be built. "Aba Dabes, Aba Fita has done a lot for this town," Berhanu, who said that he has known the octogenarian Ahmed for the past half century, told The Reporter.
  6. Dawit Endeshaw (13 مارچ 2018)۔ "The rise of Abiy "Abiyot" Ahmed"۔ The Reporter۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 اپریل 2019۔ Abiy's mother, Tezeta Wolde, a converted Christian from Burayu, Finfine Special Zone, Oromia Regional State, was the fourth wife for Ahmed. Together they have six children with Abiy being the youngest.
  7. Hermann Boko (30 جولائی 2018)۔ "Abiy Ahmed: Ethiopia's first Oromo PM spreads hope of reform"۔ FRANCE 24 (English and translated from the original French زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 اپریل 2019۔ ۔۔۔and an Amhara Christian Orthodox mother, he was 15 when the guerilla group the Tigrayan People’s Liberation Front led by Meles Zenawi toppled dictator Mengistu Haile Mariam. Abiy was educated in the US and Great Britain, and joined the army at 15.۔۔
  8. ^ ا ب پ "Dr. Abiy Ahmed's diversity portfolio"۔ Satenaw News۔ 2018-04-01۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-03-29۔
  9. "The Guardian view on Ethiopia: change is welcome, but must be secured"۔ دی گارڈین۔ 2019-01-07۔ ISSN 0261-3077۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-03-29۔
  10. FanaBC (امہاری زبان میں) http://www.fanabc.com/index.php/component/k2/item/19618.html۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-02-18۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  11. Ahmed، Abiy (2017-08-01). "Countering Violent Extremism through Social Capital: Anecdote from Jimma, Ethiopia". Horn of Africa Bulletin 29 (4): 12–17. آئی ایس ایس این 2002-1666. https://www.africaportal.org/publications/horn-africa-bulletin-جولائی-اگست-2017-vol-29-no-4/. 
  12. ^ ا ب نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ :0 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  13. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ prelude نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔