شاہ عالم ثانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
شاہ عالم ثانی
Shah Alam II
شاہ عالم ثانی
شاہ عالم ثانی

دور حکومت 10 دسمبر 1759ء10 اکتوبر 1760ء

31 جولائی 1788ء16 اکتوبر 1788ء

16 اکتوبر 1788ء19 نومبر 1806ء

تاج پوشی 24 دسمبر 1759
معلومات شخصیت
اصل نام عبداللہ جلال الدین ابو مظفر ہام الدین محمد علی گوہر شاہ عالم ثانی
پیدائش 25 جون 1728(1728-06-25)
شاہجہان آباد، دہلی، مغلیہ سلطنت
وفات 19 نومبر 1806(1806-11-19) (عمر  78 سال)
شاہجہان آباد، دہلی، مغلیہ سلطنت
مدفن لال قلعہ، دہلی

باپ کانام :عالم گیر ثانی ۔

ماں کانام: نواب زینت محل صاحبہ

تاریخ پیدائش:25 جون 1728ء

تاریخ وفات:19 نومبر1806ء

لقب:عبداللہ جلال الدین ابو مظفرالدین محمد علی گوہر شاہ عالم ثانی ۔

اپنے باپ شہنشاہ عالمگیر ثانی کے قتل کے وقت شہزادہ محمد علی گوہر بنگال میں موجود تھا اس نے باپ کے قتل کی خبر سن کر فوراََ دہلی کا سفر اختیار کیا مگر انگریزوں نے اسے بنگال میں روک لیا یہ طویل عرصہ تک انگریزوں کا قیدی بادشاہ رہا ۔ اس نے انگریزوں سے رہائی پانے کے لئے میر قاسم نواب بنگال اور نواب اودھ شجاع الدولہ کو ساتھ ملایا تا کہ فوجی طاقت کے ذریعے انگریزوں کی طاقت کو توڑا جائے مگر ان تین فوجوں کو انگریز کی مختصر فوج نے شکست دی ہندوستانی بزدلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بھاگ کھڑے ہوئے جس سے نہ صرف بنگال پر انگریز کی حکومت قائم ہوگئی بلکہ شنہشاہ ہند بھی ان کے ماتحت ہوگیا

اس دوران

مذہب اسلام
زوجہ پیاری بیگم
تاج محل بیگم
جمیل النسا بیگم
قدسیہ بیگم مبارک محل
مراد بخت بیگم
اولاد اکبر شاہ ثانی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اولاد (P40) ویکی ڈیٹا پر
والد عالمگیر ثانی
والدہ نواب زینت محل صاحبہ
خاندان تیموری سلطنت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں خاندان (P53) ویکی ڈیٹا پر
نسل 16 بیٹے اور 2 بیٹیاں
خاندان تیموری

شاہ عالم ثانی (Shah Alam II) مغل شہنشاہ تھا جو عالمگیر ثانی کا بیٹا تھا۔ ن لال قلعہ، دہلی باپ کانام :عالم گیر ثانی ۔ ماں کانام: نواب زینت محل صاحبہ تاریخ پیدائش:25 جون 1728ء تاریخ وفات:19 نومبر1806ء لقب:عبداللہ جلال الدین ابو مظفرالدین محمد علی گوہر شاہ عالم ثانی ۔ اپنے باپ شہنشاہ عالمگیر ثانی کے قتل کے وقت شہزادہ محمد علی گوہر بنگال میں موجود تھا اس نے باپ کے قتل کی خبر سن کر فوراََ دہلی کا سفر اختیار کیا مگر انگریزوں نے اسے بنگال میں روک لیا یہ طویل عرصہ تک انگریزوں کا قیدی بادشاہ رہا ۔ اس نے انگریزوں سے رہائی پانے کے لئے میر قاسم نواب بنگال اور نواب اودھ شجاع الدولہ کو ساتھ ملایا تا کہ فوجی طاقت کے ذریعے انگریزوں کی طاقت کو توڑا جائے مگر ان تین فوجوں کو انگریز کی مختصر فوج نے شکست دی ہندوستانی بزدلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بھاگ کھڑے ہوئے جس سے نہ صرف بنگال پر انگریز کی حکومت قائم ہوگئی بلکہ شنہشاہ ہند بھی ان کے ماتحت ہوگیا

شاہ عالم ثانی
پیدائش: 1728 وفات: 1806
شاہی القاب
پیشرو 
عالمگیر ثانی
مغل شہنشاہ
10 دسمبر 1759ء10 اکتوبر 1760ء

31 جولائی 1788ء16 اکتوبر 1788ء

16 اکتوبر 1788ء19 نومبر 1806ء

جانشین 
اکبر شاہ ثانی